کرناٹک انتخابات میں کیجریوال نہیں کھول پائے اپنا کھاتا ، تمام امیدواروں کی ضمانت ضبط

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th May 2018, 12:07 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی،16؍مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )کرناٹک اسمبلی انتخابات میں دہلی سی ایم اروند کیجریوال کو بڑجھٹکا لگا ہے۔ عام آدمی پارٹی کے تمام 29 امیدواروں کی ضمانت ضبط ہو گئی ہے۔ اس کے ساتھ ان کا دہلی اور پنجاب سے باہر پیر جمانیکاخواب ٹوٹ گیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ عام آدمی پارٹی نے کرناٹک انتخابات میں 29 امیدواروں کو میدان میں اتارا تھا۔ ان میں سب سے زیادہ 18 امیدواروں نے بنگلور سے انتخابات لڑا تھا۔سروگننگر اسمبلی سیٹ سے کانگریس کے ماہرین جے جارج کے خلاف میدان میں اترے آپ کے امیدوار پرتھوی ریڈی کو 1861ووٹ ملے اور انہوں نے چوتھا مقام حاصل کیا۔

دوسری جانب مذکورہ انتخابات میں یوگیندر یادو کی قیادت والی سواراج انڈیا بھی ریاست میں 11 سیٹوں پر میدان میں تھی ۔ اس کے امیدوار پوتنیاہ کو میلوکوٹے سیٹ پر 73779 ووٹ ملے اور اوہ دوسرا مقام پر رہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔