کجریوال نے مودی حکومت پر سادھا نشانہ کہا ،ایک سال میں تاجروں پر تین مار،پہلے نوٹ بندی، پھر جی ایس ٹی اور اب ایف ڈی آئی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th January 2018, 11:50 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 12؍جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)عام آدمی پارٹی(آپ)کے کنوینر اور دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکجریوال نے ایک بار پھر مودی حکومت پر نشانہ لگایاہے۔کجریوال نے مرکزی حکومت کی طرف سے سنگل برانڈ خوردہ میں100فیصد ایف ڈی آئی کے فیصلے کی مخالفت کی ہے۔دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکجریوال نے کہاہے کہ گزشتہ ایک سال میں تاجروں پر تین مار یں پڑی ہیں، جن میں نوٹ بندی پھرجی ایس ٹی اور اب ایف ڈی آئی کا فیصلہ ہے۔دراصل دہلی کے وزیراعلیٰ اروندکجریوال نے جمعہ کی صبح ٹوئٹ کرکے کہاکہ ایک سال میں تاجروں پر تین ماریں پہلے نوٹ بندی، پھرجی ایس ٹی اور اب ایف ڈی آئی چھوٹے اوردرمیانی تاجروں کے لئے توجیسے موت آ چکی ہے۔بتا دیں کہ اس سے پہلے نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کے معاملے پر بھی کجریوال مودی حکومت پرنشانہ لگاتے رہے ہیں۔بتا دیں کہ مرکز کی مودی حکومت نے غیر ملکی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے ایف ڈی آئی پالیسی میں بڑی تبدیلی کا اعلان کیا ہے۔کابینہ نے ایک برانڈ خوردہ ٹریڈنگ میں خودکار روٹ کے تحت 100فی صد ایف ڈی آئی کا فیصلہ کیا ہے۔غورطلب ہے کہ مرکزی حکومت نے واحد برانڈ خوردہ پر 100فیصد ایف ڈی آئی کی اجازت دی ہے۔بڑی صنعتوں نے حکومت کے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے تو چھوٹے تاجروں کی تنظیم کیٹ نے حکومت کے اس قدم کی مخالفت کی ہے،چھوٹے تاجروں کا کہنا ہے کہ اس سے خوردہ علاقے میں بین الاقوامی کمپنیوں کاداخلہ بہت آسان ہوجائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

ایئرٹیل کا منافرت آمیز فرقہ وارانہ’ قدم‘ مسلم نمائندہ سے صارف راضی نہیں تو نوکری سے کردیا فارغ 

ملک میں فرقہ ورایت کا زہر آر ایس ایس اور دیگر فرقہ پرست ذیلی تنظیموں کی طرف سے پھیلایاگیا اب اس کا صاف اثر زندگی کے تمام شعبوں میں نظر آرہا ہے اسی ذیل میں ائیرٹیل کو اس وقت لوگوں کی بہت زیادہ مخالفت کا سامنا کرنا پڑا جب وہ ایک صارف کی مانگ پر ہندو نمائندہ بھیجنے کو تیار ہو گئی

صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند سے ریاست میں گورنر راج نافذ کرنے ووہرا کی سفارش

کانگریس صدر راہل گاندھی نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے جموں وکشمیر میں اتحادی حکومت سے الگ ہونے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ بی جے پی۔پی ڈی پی کے موقع پرستانہ اتحاد نے ریاست میں آگ لگانے کا کام کیا اور ترقی پسند اتحاد حکومت کی برسوں کی محنت پر پانی پھیر دیا۔

جموں کشمیر میں جلدالیکشن کرائے جائیں،صدرراج طویل نہ ہو، عمرعبداللہ نے گورنرسے ملاقات کی،بی جے پی ،پی ڈی پی بدحالی کی ذمہ داری قبول کریں

نیشنل کانفرنس کے ایگزیکٹو چیئرمین عمر عبداللہ نے جموں و کشمیر میں گورنر راج کی آج حمایت کی اور ریاست میں نئے سرے سے جلد انتخابات کرائے جانے پر زور دیا تاکہ لوگ اپنی حکومت منتخب کر سکیں۔