کاپ میں دستیاب ہوئی ایک ادھ جلی لاش۔ قتل ہے یاخودکشی؟ بنا ہوا ہے معمہ !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th February 2019, 10:13 PM | ساحلی خبریں |

کاپ 11؍فروری (ایس او نیوز)کاپ پولیس اسٹیشن کے حدود میں ماجور ریلوے پُل کے قریب ایک اجنبی مرد کی ادھ جلی لاش دستیاب ہوئی ہے جس کے بارے میں ابھی کوئی نتیجہ نکل نہیں پایا ہے کہ یہ خودکشی ہے یا قتل کا معاملہ ہے ۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق جو لاش دستیاب ہوئی ہے اس کی عمر کا اندازہ 40تا45سال لگایا گیا ہے۔یہ لاش ایسی جگہ ملی ہے جہاں پر لوگوں کی آمد ورفت آسانی سے نہیں ہوسکتی، اور جنگلی جھاڑیوں کی وجہ سے وہ ایک ویرانہ سا ہے۔یہی وجہ ہے کہ عوام کے دماغ میں اس لاش کے سلسلے میں کئی شکوک و شبہات جنم لے رہے ہیں۔بتایاجاتا ہے قریبی علاقے میں رہنے والی ایک لڑکی نے اتوار کے دن صبح میں ریلوے ٹریک کے اس پار جنگلی جھاڑیوں میں آگ جلتی دیکھی اور اپنے والد کو اس کی خبر کردی۔لڑکی کے والد گنیش نے جب اس جگہ پہنچ کر دیکھاتو ایک لاش جل رہی تھی۔ فوری طور پر دوسرے لوگ بھی جمع ہوگئے اور پولیس کو اطلاع دے دی گئی۔ اس کے بعد پولیس نے موقع پر پہنچ کر آگ بجھادی، اور ادھ جلی لاش کواپنے قبضے میں لیتے ہوئے پوسٹ مارٹم کے لئے منی پال اسپتال میں روانہ کردیا۔

ابتدائی جانچ میں پتہ چلا ہے کہ لاش کے منھ پر ایک توال لپیٹا ہوا تھا۔جبکہ اس کی کمر کے حصے کی طرف پیٹ سے آنتیں باہر نکلی ہوئی تھیں۔اس کی بنیاد پر قتل کرنے کے بعد نذر آتش کیے جانے کے شبہ کو تقویت مل رہی ہے۔لاش کے قریب سے ایک لنگی کا ٹکڑا، ایک گٹکا پاکٹ اور ایک بیڑی کا بنڈل بھی دستیاب ہوا ہے۔ لاش کو جلانے کے لئے کیروسین یا پیٹرول استعمال کیے جانے کی کوئی علامت نہیں پائی گئی ہے۔چونکہ آگ میں جلنے کی وجہ سے لاش کا چہرا بری طرح بگڑ گیا ہے اس لئے اس کی پہچان ممکن نہیں ہوسکی۔

کاپ پولیس اسٹیشن میں کیس درج کرلینے کے بعد اس سمت میں مزید تحقیقات کی جارہی ہے اور کسی نتیجے پر پہنچنے کے لئے پوسٹ مارٹم اور فارنسک جانچ رپورٹ کا انتظار کیا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات؛ اُترکنڑا میں کیا آنند، آننت کو پچھاڑ پائیں گے ؟ نامدھاری، اقلیت، مراٹھا اور پچھڑی ذات کے ووٹ نہایت فیصلہ کن

اُترکنڑا میں لوک سبھا انتخابات  کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں   نامدھاری، مراٹھا، پچھڑی ذات  اور اقلیت ایک دوسرے کے قریب تر آنے کے آثار نظر آرہے ہیں،  اگر ایسا ہوا تو  اس بار کے انتخابات  نہایت فیصلہ کن ثابت ہوسکتےہیں بشرطیکہ اقلیتی ووٹرس  پورے جوش و خروش کے ساتھ  ...

بھٹکل میں بی کے ہری پرساد کا بی جے پی اور مودی پر راست حملہ، کہا؛ پسماندہ طبقات کومزید کمزور کرنے کی سازش رچی جارہی ہے

بی جے پی بھلے ہی اپنے آپ کو اقلیت مخالف پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہو، مگر  دیکھا جائے تو یہ پارٹی حقیقتاً پسماندہ طبقات، دلت اور ادیواسیوں کو  مزید  کمزور کرنے کی سازش میں لگی ہوئی ہے اور صرف ایک طبقہ کو برسراقتدار پر لانے میں کوشاں ہے۔ یہ بات  آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی ...

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔