غیرملکی درانداز کشمیر میں تباہی پھیلا رہے ہیں، گورنر راج ہی واحد حل : بھیم سنگھ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st September 2017, 11:16 PM | ملکی خبریں |

جموں، 21 ؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی پروفیسر بھیم سنگھ نے صدر جمہوریہ رامناتھ کووند پر زور دیا ہے کہ وہ جموں وکشمیر آئین کے سیکشن92 اور ہندستانی آئین کی دفعہ 370کے تحت کارروائی کریں جس سے جموں وکشمیر میں رہنے والے ہندستانی شہریوں کو دراندازوں کی وجہ سے ہورہی مزید تباہی اور اموات سے بچایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کا واحد حل گورنر راج ہے جسے جموں وکشمیر کے گورنر صدر کی اجازت سے لگانے کے مجاز ہیں۔

پروفیسر بھیم سنگھ نے کہاکہ پارلیمنٹ یا ہندستانی حکومت کا کوئی بڑا کردار نہیں رہ گیا ہے بس انہیں چاہئے کہ صدر جمہوریہ کوسیکورٹی، تحفظ اورجموں وکشمیر کے لوگوں کو، جو گزشتہ تین برسوں سے ظلم و ستم کے شکار ہیں، مفاد میں کام کرنے کی اجازت دے دینی چاہئے ۔ریاست میں گورنر راج ہی واحد حل ہے۔

پنتھرس سربراہ نے ہندستان کے صدر سے کہا کہ وہ جموں وکشمیر کے آئین کے سیکشن92کے تحت گورنر کو گورنر راج نافذ کرنے کا مشورہ دیں اور گورنر کو مشورہ دینے کے لئے ایک ایمرجنسی کونسل قائم کی جائے۔انہوں نے گورنر پر بھی زور دیا کہ سماج کے جمہوریت پسند، قانون کی حکمرانی اور جموں وکشمیر میں امن کی بحالی کے خواہش مند حقیقی نمائندوں سے مذاکرات شروع کئے جائیں۔انہوں نے کہاکہ حریت کانفرنس سمیت تمام سیاسی جماعتوں کے نمائندوں کو بات چیت کی دعوت دی جانی چاہئے جس سے ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخابات کے لئے مناسب ماحول قائم ہوسکے۔پنتھرس سپریمو نے تمام سیاسی جماتوں کے کارکنوں اور نا م نہاد پتھر پھینکنے والوں کو فوری طورپر رہا کئے جانے کا بھی مطالبہ کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر 2002 کا گجرات بن سکتا ہے

آخر کشمیر میں گونر راج نافذ ہو ہی گیا۔ کشمیر کے لئے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔ وہاں اب ساتویں بار گونر راج نافذ ہوا ہے ، ویسے بھی کشمیر کے حالات نا گفتہ بہہ ہیں۔ وادی کشمیر پر جب سے بی جے پی کا سایہ پڑا ہے تب ہی سے وہاں قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے ۔ پہلے تو مفتی سعید اور محبوبہ مفتی نے ...

راجستھان میں ’لو جہاد‘ کے نام پر ماحول خراب کرنے کی کوشش 

راجستھان کے ہنڈون میں لو جہاد کے نام پر بجرنگ دل پر ماحول بگاڑنے کا الزام لگا یا ہے، ہنڈون کے جس کانگریس کونسلر نفیس احمد پر بجرنگ دل نے لو جہاد کا الزام لگایا ہے، ان کا دعویٰ ہے کہ یہ مکمل طور پر ایک من گھڑت کہانی ہے۔

چھتیس گڑھ میں مضبوط طاقت ہے کانگریس، اتحاد کی ضرورت نہیں :پی ایل پنیا

آل انڈیا کانگریس کمیٹی جنرل سیکریٹری اور چھتیس گڑھ کے پارٹی معاملات کے انچارج پی ایل پنیا کا کہنا ہے کہ کانگریس ریاست میں مضبوط قوت ہے اور اس کے اندر کسی اتحاد کے بغیر اسمبلی انتخابات جیتنے کی طاقت ہے۔

ایمرجنسی نے جمہوریت کوقانونی تاناشاہی میں بدل دیا: ارون جیٹلی

مرکزی وزیر اور سینئر بی جے پی لیڈر ارون جیٹلی نے آج یاد کیا کہ کس طرح تقریبا چار دہائی قبل وزیر اعظم اندرا گاندھی کی زیر قیادت حکومت کی طرف سے ایمرجنسی لگائی گئی تھی اور جمہوریت کو آئینی آمریت میں تبدیل کر دیا گیا۔

گنگامیں جمع گندگی کولے کرنتیش کمارکا مرکزی حکومت پرسخت حملہ

بہار کے وزیر اعلی نتیش کماران دنوں ہر روز اپنی بات کوبے باکی سے رکھ رہے ہیں۔ گزشتہ اتوار کو ہوئی نیتی آیوگ کی میٹنگ میں انہوں نے پی ایم نریندر مودی کے سامنے ریاست کے مسائل رکھنے کے بعد انہوں نے مرکزی وزیر ماحولیات ہرش وردھن کو مشورہ دیا کہ دہلی واپس جاکر مرکزی سطح وزیر ...