نوٹ بندی کی مخالفت میں کاروار میں مہیلا کانگریس کا مرکزی حکومت کےخلاف زبردست احتجاج

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 11th January 2017, 12:14 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار:10/جنوری(ایس او نیوز) مرکزی حکومت کی طرف سے کی گئی نوٹ بندی کے خلاف اترکنڑا ضلع مہیلا کانگریس ، یوتھ کانگریس اور این ایس یو آئی کے اشتراک سے ڈی سی دفتر کے سامنےسخت احتجاج کرتے ہوئے ڈی سی دفتر کا گھیراؤ کرنے کی کوشش کی، جبکہ نوٹ بندی سےعوام کو ہورہی تکالیف کی مذمت میں مرکزی حکومت کے خلاف وزیراعظم کے نام ڈپٹی کمشنر کے ذریعےمیمورنڈم پیش کیاگیا۔

شہر کے مترا سماج کے صحن میں جمع ہوئے مہیلاکانگریس کے کارکنان نے مرکزی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی، یوتھ کانگریس اور این ایس یو آئی نے احتجاج کی بھرپور حمایت کرتے ہوئے احتجاج میں شامل ہوئے۔ متراسماج میدان سے نکلی احتجاجی ریلی شہر کے اہم راستوں سے ہوتے ہوئے ڈی سی دفتر پہنچی ، راستے بھر مودی حکومت کے خلاف نعرے بازی کی گونج رہی۔ ڈی سی دفترکے سامنے بھی نوٹ بندی کے بعد ہورہی لاقانونیت سے عوام کو جن دشواریوں کا سامنا کرنا پڑر ہاہے اس کی مذمت کرتے ہوئے مودی حکومت کے خلاف جم کر نعرہ بازی کی گئی ۔

کمٹہ کی رکن اسمبلی اور ساحلی ترقی بورڈ کی صدر شاردا شٹی نے احتجاجیوں سے  خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوٹوں کو چلن سے باہر کردینے کے بعد عوامی زندگی اجیرن بن کر رہ گئی ہے، عوام کو روزمرہ کے اشیاء کی خریداری کے لئے دشواریاں پیش آرہی ہیں، اے ٹی ایم کے سامنے لمبی قطاریں معصوم عوام کی دکھ بھری کہانی سناتی ہیں، قطاروں میں ہونے والی اموات حقائق کو بیان کررہی ہیں، مرکزی حکومت کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگ رہی ہے ، انہوں نے سوال کیا کہ آخر نوٹ بندی کا مقصد کیا تھا ؟

 ضلع مہیلا کانگریس صدر تارا گوڈا نے بھی اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بی جے پیحکومت نے نوٹ بندی کے ذریعے عوام کی معاشی آزادی کو چھین لیا ہے، غریبوں، معصوموں کو اپنے کمائی ، مزدوری کا پیسہ لینے کے لئے بینکوں کے سامنے کئی کئی دنوں تک انتظار کرنا پڑرہاہے، گویا مرکزی حکومت نے عوام کی تکالیف پر کوئی توجہ نہیں دی جس کی وجہ سے اس طرح کے حالات پید اہوئے ہیں۔ ریاستی  مہیلا کانگریس کی نائب صدر ششما ریڈی نے بھی خطاب کرتے ہوئے مرکزی حکومت اور بی جے پی لیڈران پر جم کر تنقید کی۔

ڈی سی دفترکے سامنے احتجاج کررہے مہیلا کانگریس کارکنان نے میمورنڈم حاصل کرنے کےلئے ڈی سی کے حاضری کی مانگ کی۔ کچھ دیر تک ڈی سی نہیں آئے تو احتجاجیوں نے دفتر میں گھسنے کی کوشش کی ، مگرسکیورٹی کے لئے تعینات پولس نے انہیں روک لیا۔ اس کے بعد جب ڈی سی ، ایس ایس نکول میمورنڈم لینے پہنچے تو مہیلا کا رکنان نے ڈی سی کے خلاف بھی نعرے بازی کی۔ اس موقع پر مہیلا کانگریس کے لیڈران گایتری ، کے  پی سی سی ممبر کلاوتی، اے آئی سی سی کے نگراں کار وشنو پرساد ، یوتھ کانگریس کے شری پد ہیگڈے ، سنتوش شٹی، اشرف، این ایس یو آئی کے انمول سرسیکر، کاروار بلاک کانگریس صدر دیپک وینگنکر، سنتوش گرومٹھ سمیت کئی ایک احتجاج میں شامل تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

منکی جماعت المسلمین اور منکی کمیونٹی دبئی کے زیرا نتظام26نومبر کو مفت دانت کیمپ کا انعقاد

جماعت المسلمین منکی اور منکی کمیونٹی دبئی کے زیر انتظام اور ینوپویا ڈنٹل کالج ینوپویا یونیورسٹی منگلورو کے تعاون سے 26نومبر 2017بروز اتوار سرکاری اردو ہائی اسکول منکی میں مفت دانت چک اپ کیمپ کا انعقاد ہوگا۔

کاروار میں جلد شروع ہوگا اسکوبا ڈائیونگ کا تربیتی مرکز۔ ٹورزم کوملے گا فروغ

نوجوانوں میں دلچسپی کا سبب بننے والی اسکوبا ڈائیونگ کی تربیت کے لئے ضلع انتظامیہ نے کاروار میں ایک مرکز قائم کرنے فیصلہ کیا ہے۔ جس کی وجہ سے یہاں پر سیاحت کو بہت زیادہ فروغ امکانات پیدا ہوگئے ہیں۔

بھٹکل میں پرشورام اسپورٹس کلب کے زیر اہتمام 25اور26نومبر کو بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ کا انعقاد

پرشورام اسپورٹس کلب (ر) موڈ بھٹکل کے زیر اہتمام25اور26نومبر کو شہر کے گرو سدھیندرا کالج میدان میں اترکنڑا، شیموگہ ، اُڈپی اضلاع پر مشتمل بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ منعقد کئے جانے کی منتظمین نے پریس کانفرنس کے ذریعے جانکاری دی ۔

وشوا ہندو پریشد کے دھرم سنسد کی میزبانی۔ اڈپی شہر ہوگیا زعفرانی!

اڈپی شہر میں 24نومبر سے شروع ہونے والے 'دھرم سنسد' اجلاس کی میزبانی کرنے کے لئے جو انتظامات کیے گئے ہیں اس کے تحت پورے شہر کو زعفرانی بنادیا گیاہے۔سڑکوں، نکڑوں ، چوراہوں اور عمارتوں پرجس طرف بھی نظر جاتی ہے زعفرانی جھنڈے، بینرس اور ہورڈنگس دکھائی دیتے ہیں۔

مرڈیشور:اقلیتوں کی ترقی کے لئے منظور1437کروڑ روپیوں میں سے صرف 676کروڑروپیوں کا استعمال

اقلیتی طبقے کے مسلمانوں کے لئے سرکاری سطح کے مختلف منصوبہ جات اور اسکیم کے تحت سہولیات فراہم کی جاتی ہیں، لیکن ان کا صحیح استعمال نہیں ہونے سے وہ امدادی رقم باقی رہ جاتی ہے۔ ان خیالات کااظہار مرڈیشور آر این ایس پالی ٹکنک کے کارگزار پرنسپال اور منصوبہ جات آفیسر کے مری سوامی ...

مرڈیشور جنتاودیالیا کے 2اساتذہ ریاستی سطح کے لئے منتخب

کرناٹکا اساتذہ فلاحی فنڈ اور فلاحی فنڈ برائے اطفال بنگلورو اور محکمہ تعلیمات عامہ نائب ڈائرکٹر دفتر اترکنڑا کے اشتراک سے مارتوما ہوناور میں ہائی اسکول اساتذہ کے لئے ضلعی سطح کےہم نصابی مقابلہ جات کا انعقاد کیا گیا جس میں مرڈیشور جنتا ودیالیاکے 2اساتذہ ضلعی سطح پر بہترین ...

کاروار میں جلد شروع ہوگا اسکوبا ڈائیونگ کا تربیتی مرکز۔ ٹورزم کوملے گا فروغ

نوجوانوں میں دلچسپی کا سبب بننے والی اسکوبا ڈائیونگ کی تربیت کے لئے ضلع انتظامیہ نے کاروار میں ایک مرکز قائم کرنے فیصلہ کیا ہے۔ جس کی وجہ سے یہاں پر سیاحت کو بہت زیادہ فروغ امکانات پیدا ہوگئے ہیں۔

کرناٹکا میں پرائیویٹ ڈاکٹروں اور اسپتالوں سے متعلقہ بِل میں ترمیم۔ جیل کی سزا حذف کردی گئی

پچھلے کچھ دنوں سے حکومت کرناٹکا اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کے درمیان جس بِل کو لے کر تنازعہ کھڑا ہوگیا تھا اس پر حکومت نے پسپائی اختیار کرتے ہوئے KPMEایکٹ کے ترمیم شدہ بل کوذرا نرم کرکے اسمبلی سیشن میں پیش کردیاہے اور مریض کے سلسلے میں ڈاکٹر یا اسپتال کی غلطی کے لئے 6مہینے سے 3سال تک ...

بھٹکل میں پرشورام اسپورٹس کلب کے زیر اہتمام 25اور26نومبر کو بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ کا انعقاد

پرشورام اسپورٹس کلب (ر) موڈ بھٹکل کے زیر اہتمام25اور26نومبر کو شہر کے گرو سدھیندرا کالج میدان میں اترکنڑا، شیموگہ ، اُڈپی اضلاع پر مشتمل بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ منعقد کئے جانے کی منتظمین نے پریس کانفرنس کے ذریعے جانکاری دی ۔

بھٹکل کے کتورچنما رہائشی اسکول میں16 بچوں کے بیمار پڑنے کا معاملہ: افسران نے کیا معائنہ؛ ہوسٹل میں غذا بالکل معیاری

تعلقہ کے پرورگا میں واقع سرکاری کتورچنما رہائشی اسکول کے ہاسٹل میں  16 بچے بیمار ہوکر سرکاری اسپتال میں داخل کئے جانے کی اطلاعات کے بعد  بھٹکل تعلقہ انتظامیہ کے آفسران نے متعلقہ اسکول پہنچ کر معائنہ کیا اور خود بھی بچوں کے ساتھ  دوپہر کے کھانے میں شریک ہوئے۔ بعدمیں ...