کاروار:ودھان سبھا انتخابات کی تیاری ؛ضلع کے ودھان سبھا حلقوں کو ووٹنگ مشینوں کی تقسیم :ضلع میں کل 1484پولنگ بوتھ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 16th April 2018, 6:28 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:16/اپریل (ایس او نیوز)اترکنڑا ڈپٹی کمشنر دفتر کے انتخابی سکیورٹی کمرے میں موجود ووٹنگ مشینوں کو بروز اتوار ودھان سبھا حلقوں میں تقسیم کئے گئےتاکہ انتخابات کے فرائض انجام دینے کے لئے نامزد عملے کو تربیت دینے کے پیش نظر پیشگی طورپر ووٹنگ مشینوں(ای وی ایم ) اورووٹ تصدیق مشین (وی وی پیاٹ)متعلقہ ودھان سبھا حلقوں کے الیکشن کمشنروں کو سونپے کئے گئے۔

1790ای وی ایم ، 1872وی وی پیاٹ اور 1760کنٹرول یونٹس کو ضلع کے کل 6ودھان سبھا حلقوں میں تقسیم کرنے کے لئے 200 سے زائد عملہ شام تک مصروف تھا۔ قریب 10لاریوں کے ذریعے انہیں متعلقہ مقامات پر پہنچا کر سکیورٹی روم میں بحفاظت رکھا گیا ۔

ضلع میں کل 1484پولنگ بوتھ ہیں، ہر ایک حلقہ کے لئے 25فی صد زائد مشینیں سپلائی کی گئی ہیں۔ 22اپریل سے انتخابات کے لئے نامزد افسران کی تربیت شروع ہوجائے گی۔ جس کے لئے 5فی صد مشینیں مختص کئے جانے کی جانکاری اضافی ڈی سی ڈاکٹر سریش اٹنال نے دی۔

ایک نظر اس پر بھی

یلاپور میں برقی تار چھونے سے دو کسانوں کی موت

ضلع اُترکنڑا کے یلاپور تعلقہ کے  ڈونڈیان کوپّا میں  دوکسان اُس وقت ہلاک ہوگئے جب وہ  منگل شام کو کھیتوں میں کام کاج نپٹا کر واپس گھر جارہے تھے کہ اچانک راستے پر پڑی برقی تار  پر ان کے قدم پڑ گئے۔

کاسر گوڈ میں پانچ سالہ بچے نے دکھایا حاضر دماغی اور بہادری کامظاہرہ؛ دو ساتھیوں کو ڈوبنے سے بچانے میں ہوا کامیاب

ایک پانچ سالہ بچے نے بے مثال حاضر دماغی اور بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے 20فٹ گہری جھیل میں گرنے والے دو ساتھیوں کو ڈوب کر ہلاک ہونے سے بچالیاجس کی ستائش پورے علاقے میں ہورہی ہے۔

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے لئے کل بدھ کو ہوگا صدارتی انتخاب؛ سید آدم ہوں گے تنظیم کے حمایت یافتہ اُمیدوار

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی صدارت سے عبدالرحیم کے مستعفی ہونے کے بعد اُس جگہ کو پُر کرنے کل بدھ کو  صدارتی انتخاب ہوگا جس کے لئے مجلس اصلاح و تنظیم  نے سید  آدم  پنمبور  کو میدان میں اُتارنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اترکنڑا میں 7081مردہ لوگ سرکاری  چاول کھاتے ہوئے پائے گئے؛ ڈپٹی کمشنر کے حکم پر خصوصی مہم کےذریعے ہوا حیرت انگیز انکشاف

 2,427 لوگ مرنے کے بعد بھی سرکاری ریکارڈ میں زندہ رہتے ہوئے ماہانہ وظیفہ لیتے ہوئے پائے گئے ہیں ، اتنا ہی نہیں بلکہ 7081مردہ لوگ ہر مہینہ  سات سات  کلو   راشن  چاول مفت میں لے کر کھانے کا بھی حیرت انگیز انکشاف ہوا ہے، جس کے نتیجے میں سرکاری خزانے کو خطیر رقم کا نقصان ہورہاتھا ۔