اترکنڑا ضلع میں بندوق برداروں کی تعداد صرف ایک فی صد: لائسنس کی تجدید کو لے کر اکثر بے فکر

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th October 2017, 8:54 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

کاروار:8/ اکتوبر (ایس اؤنیوز)اترکنڑا ضلع جغرافیائی وسعت اور جنگلات سے گھراہواہے اس کی آبادی میں بھی خاصی اضافہ ہواہے لیکن ضلع میں صرف ایک فی صد لوگ ہی بندوق رکھتے ہیں،ضلع میں فصل کی حفاظت کے لئے 8163اور خود کی حفاظت کے لئے 930سمیت جملہ  9093لوگ ہی لائسنس والی بندوقیں رکھتے ہیں۔

اترکنڑا ضلع میں چند ہی کسان اپنی فصل کی نگرانی اور حفاظت کے لئے مجبوری میں لائسنس والی بندوق رکھتے ہیں بقیہ کسانوں کو لائسنس کے متعلق کچھ زیادہ جانکاری نہیں ہے۔ اور نئی بندوق لائسنس کے لئے درخواست دینے والوں کی تعداد نہیں کے برابر ہے ۔ فصل کی حفاظت کے لئے 79اور خود کی حفاظت کے لئے 8سمیت صرف 87لوگ ہی لائسنس کے انتظارمیں ہیں۔ امکان ہے کہ ضلع میں ایسے بہت سارے لوگ ہوں گے جو لائسنس کے بغیر بندوق رکھتے ہیں لیکن پتہ چلا ہے کہ ضلعی عوام کو بندوق کے متعلق زیادہ  معلومات نہیں ہے۔

ویسے اترکنڑا ضلع ریاست میں گن داروں کی فہرست میں دوسرے نمبر پرہے ، ضلع کے جغرافیائی وسعت اور آبادی کی شرح کے مطابق بندوق دھاریوں کی تعداد اپنےحساب سے ہے، لیکن جو لوگ لائسنس رکھتےہیں قانون کے تحت اس کی تجدید کو لے کر کہا جاسکتاہے کہ اس سلسلے میں عوام زیادہ بیدار نہیں ہیں۔ اس کا سبب یہی ہےکہ ضلع کے 9093لائسنس والی بندوق رکھنے والوں میں 3910لوگوں نے  اپنے بندوق کے لائسنس کی تجدید نہیں کرائی ہے۔فصل کی نگرانی کے 3522بندوق بردار اور 388خود کی حفاظت کے لئے بندوق رکھنے والے لائسنس تجدید کے متعلق کچھ زیادہ فکر مند نظر نہیں آتے۔ جس میں یلا پور تعلقہ میں تحفظِ فصل کی 937اور خود حفاظتی کے 22سمیت کل 959اور سرسی تعلقہ میں تحفظ فصل 864اور خود حفاظتی کے 94جملہ 958لوگوں نے  اپنے لائسنس کی تجدید نہیں کی ہے۔ بقیہ تعلقہ جات میں بندوق لائسنس کی تجدید نہ  کرانے والوں کی تعداد اتنی زیادہ تو نہیں ہے لیکن لائسنس والی بندوق خریدنے کے بعد لائسنس کی تجدید کی طرف دھیان نہیں دینےکا پتہ چلاہے۔

ضلع کے دیگر تعلقہ جات کے بالمقابل بھٹکل تعلقہ میں بندوق برداروں کی تعداد کم ہے، بھٹکل تعلقہ میں فصل کی حفاظت کے لئے صرف 467 لوگ بندوق رکھتے ہیں تو خود کی حفاظت کے لئے 153 سمیت صرف 620 لوگوں کے پاس ہی لائسنس کی بندوق  ہیں۔ بھٹکل کے بالمقابل سرسی اور یلاپور تعلقہ جات میں سب سے زیادہ لائسنس والے بندوق بردار ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی علاقوں میں زبردست بارش جاری؛ یلاپور میں چٹان کھسک گئی؛ چار گھنٹوں تک نیشنل ہائی وے بند؛ بس پر گرتے گرتے بچی چٹان

ساحلی علاقوں میں بھاری بارش کا سلسلہ جاری ہے اور پوری رات ان علاقوں میں زبردست بارش ہوئی ہے۔ آج صبح ویسے کچھ دیر کے لئے بارش رُکتے رُکتے گررہی ہے، مگر اسمان مکمل طور پر ابرآلود ہے۔

پرتیبھا کارنجی میں بھٹکل انجمن گرلس انگلش میڈیم ہائی اسکول نوائط کالونی کی طالبات کا شاندار پرفارمینس

ہائی اسکول سطح کے کلسٹر لیول پرتیبھا کارنجی پروگرام میں انجمن گرلس ہائی اسکول نوائط کالونی کی طالبات نے اپنی بہترین صلاحیتوں کا مظاہرہ کرتے ہوئے کئی ایک مقابلوں میں اول اور دوم نمبرات سے کامیاب ہوئی ہیں اور جملہ دس طالبات تعلقہ لیول کے لئے منتخب ہوگئ ہیں۔

بھٹکل میں انسداد بدعنوانی بیورو کے زیر اہتمام عوامی رابطہ میٹنگ : رشوت خوری کے ازالے میں عوامی تعاون لازمی : ایس پی شُرتی کا بیان

ضلع انسداد بدعنوانی بیورو پولس تھانہ اترکنڑا کاروار کے زیر اہتمام پیر کو سرکٹ ہاؤس میں بد عنوانی ،رشوت خوری کے ازالے اور عوامی رابطہ میٹنگ  انسداد بدعنوانی دستہ کی ضلع ایس پی کماری شرتی کی صدارت میں منعقد ہوئی۔

یلاپور میں موسلا دھار بارش کے دوران اسکول پر درخت گر پڑا

ضلع شمالی کینرا میں بھاری برسات کی وجہ سے عام زندگی مفلوج ہونے اور کئی مقامات سے نقصانات کی خبریں مل رہی ہیں۔ یلاپور سے موصولہ رپورٹ کے مطابق شہر کے ہائر پرائمری اسکول پر ایک درخت کی شاخ ٹوٹ کر گرنے سے ایک کمرے کی دیوار اور اسکول کے بیت الخلاء کو نقصان پہنچا ہے۔

مرحوم حضرت مولانا محمد سالم قاسمی کے کمالات و اوصاف ۔۔۔۔۔۔۔۔ بہ قلم: خورشید عالم داؤد قاسمی

دار العلوم، دیوبند کے بانی امام محمد قاسم نانوتویؒ (1832-1880) کے پڑپوتے، ریاست دکن (حیدرآباد) کی عدالتِ عالیہ کے قاضی اور مفتی اعظم مولانا حافظ محمد احمد صاحبؒ (1862-1928) کے پوتے اور بیسویں صدی میں برّ صغیر کےعالم فرید اور ملت اسلامیہ کی آبرو حکیم الاسلام قاری محمد طیب صاحب قاسمیؒ ...

اردو میڈیم اسکولوں میں نصابی  کتب فراہم نہ ہونے  سے طلبا تعلیم سے محروم ؛ کیا یہ اُردو کو ختم کرنے کی کوشش ہے ؟

اسکولوں اور ہائی اسکولوں کی شروعات ہوکر دو مہینے بیت رہے ہیں، ریاست کرناٹک کے 559سرکاری ، امدادی اور غیر امدادی اردو میڈیم اسکولوں اور ہائی اسکولوں کے لئے کتابیں فراہم نہ  ہونے سے پڑھائی نہیں ہوپارہی ہے۔ طلبا ، اساتذہ اور والدین و سرپرستان تعلیمی صورت حال سے پریشان ہیں۔

بھٹکل کڑوین کٹّا ڈیم کی تہہ میں کیچڑ اور کچرے کا ڈھیر۔گھٹتی جارہی ہے پانی ذخیرہ کی گنجائش

امسال ریاست میں کسی بھی مقام پر برسات کم ہونے کی خبرسنائی نہیں دے رہی ہے۔ عوام کے دلوں کو خوش کرنے والی بات یہ ہے کہ بہت برسوں کے بعد ہر جگی ڈیم پانی سے لبالب ہوگئے ہیں۔لیکن اکثریہ دیکھا جاتا ہے کہ جب برسات کم ہوتی ہے اور پانی کا قحط پڑ جاتا ہے تو حیران اور پریشان ہونے والے لوگ ...

سعودی عربیہ سے واپس لوٹنے والوں کو راحت دلانے کا وعدہ ؛ کیا وزیر اعلیٰ کمارا سوامی کو کسانوں کا وعدہ یاد رہا، اقلیتوں کا وعدہ بھول گئے ؟

انتخابات کے بعد سیاسی پارٹیوں کو اقتدار ملنے کی صورت میں کیے گئے وعدوں کو پورا کرنا بہت اہم ہوتا ہے۔ جنتادل (ایس) کے سکریٹری کمارا سوامی نے بھی مخلوط حکومت میں وزیرا علیٰ کا منصب سنبھالتے ہی کسانوں کا قرضہ معاف کرنے کا انتخابی وعدہ پورا کردیااور عوام کی امیدوں پر پورا اترنے کا ...