کاروار میں سڑکوں پر آوارہ مویشیوں کی بھرمار۔ حادثات میں اضافے کا سبب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th August 2018, 10:52 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 7؍اگست (ایس او نیوز) شہر میں سڑک پر یونہی چھوڑے گئے مویشیوں کی تعداد دن بدن بڑھتی جارہی ہے اور اس وجہ سے یہاں ہونے والے سڑک حادثات میں بھی اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔

رات کے وقت شہر کے سویتا سرکل، پھول بازار، گرین اسٹریٹ، ایم جی روڈ، بانڈی شیٹی روڈ، نندن گدا روڈ جیسے علاقوں میں آوارہ مویشیوں کا ہجوم لگ جاتا ہے ۔ یہاں وہاں بیچ سڑک پر سوئے پڑے جانوروں کی وجہ سے موٹر سواریوں کو بہت زیادہ دقت کاسامنا کرناپڑتا ہے۔ اور اکثر آدھی رات کو یا ذرا اندھیرے علاقے میں دور سے یہ جانور نظر نہ آنے کی وجہ سے حادثات واقع ہورہے ہیں۔کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ دودھ کے لئے گائیں پالنے والے لوگ اپنے گھر میں جانوروں کو باندھنے کا انتظام نہ ہونے کی وجہ سے انہیں یونہی آوارہ گرد ی کرنے کے لئے سڑکوں پر چھوڑ دیتے ہیں۔اس کے علاوہ سڑک کنارے پائے جانے والے کچرے کے ڈبوں اور ڈھیر کی وجہ سے بھی بعض جانور اپنے مالکین کے گھر نہیں جاتے بلکہ ادھر ادھر گھوم پھر کر کچرا کھاتے اور پھر سڑک پر ہی رات گزاری کرلیتے ہیں۔اس کا نتیجہ یہ ہوا ہے کہ کاروار شہر کی سڑکیں مویشیوں کا باڑہ بن کر رہ گئی ہیں۔

عوام کا الزام ہے کہ شہر میں آوارہ مویشیوں کی تعداد روزبروز بڑھتی جارہی ہے، لیکن شہر کی میونسپل کاونسل کوئی بھی قدم اٹھائے بغیر اس طرف سے آنکھیں بند کرکے بیٹھی ہوئی ہے۔کچھ لوگوں کو یہ کہتے ہوئے بھی سنا گیا کہ آوارہ کتوں سے نجات دلانے میں ناکام میونسپل کاونسل کے پاس آوارہ مویشیوں کا مسئلہ حل کرنے کی طاقت کہاں سے آئے گی۔کہاجاتا ہے کہ میونسپل کاونسل کی طرف سے ان جانوروں کو اپنے قبضے میں لینے یا پھر انہیں پکڑ کر گؤ شالاؤں میں بھیج دینے کی اسکیم بھی صرف کاغذی منصوبہ بن کر رہ گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے قریب شیرور میں لاری کی ٹکر سے راہ گیر کی موت

پڑوسی علاقہ شیرور میں ہوئے ایک سڑک حادثہ میں ایک راہ گیر کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی جس کی شناخت 85 سالہ تمپا اچار کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ حادثہ سنیچر کو اُس وقت پیش آیا جب عمر رسیدہ شخص تمپا آچار  بارش کی وجہ سے ہاتھ میںؓ چھتری تھامے  نیشنل ہائی وے کو کراس  کررہا تھا کہ ...

جنوری 19 کو ہوں گےانجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے انتخابات؛ اسحاق شاہ بندری الیکشن کمشنر منتخب

قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے عام انتخابات اگلے سال 19 جنوری کو ہوں گے جس کے لئے آج سنیچر کو  ہوئی انتظامیہ میٹنگ میں  الیکشن کمشنر کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔  اس بات کی تصدیق انجمن کے جنرل سکریٹری جناب صدیق اسماعیل نے کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ  آج کی میٹنگ میں ...

پتورکے ویویکا نندا کالج میں گینگ ریپ کی واردات کے بعد طلبہ کے لئے سخت قوانین کا نفاذ۔ کلاسس معطل۔ طلبہ کے اندر اضطراب 

گزشتہ دنوں  اپنی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ  کچھ طلبہ کی جانب سے کیے گئے گینگ ریپ کی وجہ سے سرخیوں میں آنے والے قریبی شہر پتور  کے مشہور ویویکانندا کالج میں طلبہ کے لئے نئے قوانین اور ضابطے وضع کیے گئے ہیں، جن کی پابندی کا عہد کیے بغیر کسی بھی طالب علم کوکلاس میں داخل ہونے کی اجازت ...

بھٹکل تحصیلدار آفس میں بارش کے نقصانات  سے بچنے امدادی سنٹر کی شروعات

بھٹکل تعلقہ بھر میں بہتر بارش ہورہی ہے، اس کےساتھ ساتھ موسلا دھار بارش کے نتیجےمیں اچانک کوئی حادثات بھی پیش آتے ہیں۔ ان حادثاتی مواقع پر عوام کوفوری امداد و راحت پہنچا کر  نقصانات سے بچانے کے لئے بھٹکل تحصیلدار دفتر میں امدادی مرکز (ہیلپ سنٹر) کی شروعات کی گئی ہے۔

بھٹکل میں موسلادھار بارش کاسلسلہ جاری، حنیف آباد کی سڑک تالاب میں تبدیل؛ کئی مکانوں میں پانی داخل ہونے کی شکایتوں کے بعدتحصیلدار کا دورہ

گزشتہ دو دنوں سے برس رہی بارش کے نتیجےمیں تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت حدود کے حنیف آباد کی سڑک تالاب نما کی شکل اختیارکرنےکے علاوہ سڑک کا پانی پاس پڑوس کے گھروں میں پانی گھسنے سے عوام پریشانی میں مبتلا دیکھے گئے۔

اترکنڑا ضلع پنچایت کو 5.97کروڑروپئے کی امداد : آبادی اور جغرافیائی وسعت کے مطابق امداد کی منظوری کا فیصلہ

فورتھ فائنانس کمیشن کی سفارشات کے تحت سال 2019-2020کے لئے ضلع پنچایتوں کی امداد میں اضافہ کیاگیا ہے۔ جس کےمطابق ریاستی حکومت نے بیلگام ضلع کو 8کروڑرو پئے منظور ہوئے ہیں تو اترکنڑا ضلع کے لئے 5.74کروڑ روپئے کی امداد منظور کی ہے۔