کاروار: غریب خاندان سرکاری امداد سے محروم : لاچاری و بے بسی میں بھی پڑھائی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 9th November 2018, 6:50 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:9؍نومبر (ایس او نیوز) اس غریب خاندان کو دیکھئے انہیں سرکار کی طرف سے کوئی مدد نہیں دی گئی ہے۔ فاریسٹ زمین کو اتی کرم کرکے ایک کمرہ میں مقیم انہیں ابھی تک بھاگیہ جیوتی سے بجلی سپلائی نہیں دی گئی ہے۔

کاروار تعلقہ ہنکون کے کٹیندر واڑا کے چندرکانت کامبلے خاندان کی لاچاری اور مجبوری کا یہ واقعہ ہے۔ یہ صرف غریب ہی نہیں بلکہ گھر کا مالک چندرکانت اندھا ہے، گھر میں بجلی نہیں ہے، بڑا بیٹا سنیل پی یو دوم میں زیر تعلیم ہے ۔  جدید ترقی یافتہ زمانےمیں بھی سنیل اپنی پڑھائی کے لئے رات میں  مٹی کے تیل کے چھوٹے سے چراغ  اور دن میں کھڑکی کی روشنی پر انحصار کرتاہے۔ ماں کی دن بھر کی  مزدور ی پر ہی گھر کا گزارہ ہوتاہے۔ گھر کا سہاراانیل کامبلے کو 6ماہ پہلے ایک انجان سواری ٹکردینےکے نتیجےمیں پیٹھ کی ہڈی ٹوٹ کر اسپتال میں زیر علاج  بیٹے کی  نگرانی نابینا  باپ چندرکانت کررہاہے تو سمجھ لیجئے کس کمپرسی کے عالم میں وہ جی رہے ہیں۔

متعلقہ خاندان کو حکومت بھاگیہ جیوتی منصوبے کے تحت بجلی کنکشن دے سکتی ہے لیکن نہیں دی ہے۔ ان کے گھر کاروار کے سماجی کارکن راگھو نائک ملاقات کرتے ہوئے حالات کو ہیسکام محکمہ کے سامنے پیش کئے ہیں۔ جہاں ہیسکام کے افسر اڈورکر نے کہاکہ گھروالے صرف عرضی دیں ،رقم وغیرہ وہ خود ادا کرکے بجلی کنکشن دینےکا تیقن دیاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔