کاروار:معطل پولس عملہ کی طرف سے حملہ اور ہراسانی :ایس پی کو سونپی شکایت

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 18th May 2017, 6:37 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:18/مئی (ایس اؤنیوز)کمٹہ تعلقہ گوکرن کے ہیرے گتی کے مکین شانتارام پربھو نے ضلع ایس پی دفتر میں شکایت سونپتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ’’محکمہ کی طرف سے حملہ کے الزام میں معطل کئے گئے 2پولس والے دوبارہ ہم پر زور زبردستی اورحملہ کی کوشش کررہے ہیں ہمیں اس سلسلے میں تحفظ فراہم کیا جائے ‘‘۔

گوکرن ہیرے گتی کا پولس عملہ وہاں کے ٹول ناکہ پر رات کے اوقات میں سواریوں کو روک دستاویزات کی جانچ کرتے ہیں ، سواریوں کے تمام معاملے کی تفصیل یوں ہے کہ شکایت کردہ شانتا رام پربھو نے 9اپریل کو ٹول ناکہ پر پولس ہراسانی کو لے کر پولس کنٹرول روم 100سے رابطہ کرکے شکایت درج کی تھی کہ ٹول ناکہ پر کاغذات ٹھیک ہونے کے باوجود رقم کے لئے ستایا جاتاہے۔اطلاع پاتے ہی کنٹرول روم عملے نے راست طورپر ٹول ناکہ پر رقم وصول کرنےو الے پولس عملےسے رابطہ کرکے شانتارام پربھوسے فون پر ہوئی بات چیت کی تفصیل بتائی ۔ ٹول ناکہ پولس کو اس کی اطلاع ملتے ہی پولس عملہ موہن گوڈا، نتیا، 108ایمبولنس کے ڈرائیور اور ایک فاریسٹ عملہ نے راتوں رات شانتارام کے گھرپہنچ کر انہیں، ان کے والد ، بیوی پر حملہ کرتے ہیں۔ شانتارام ناممکن کو ممکن میں بدل کراپنی کوششوں سے پولس تھانے میں پولس عملے کے خلاف شکایت درج کرتے ہیں، کیس کے مطابق پولس موہن گوڈا اور نتیا کو معطل کیا جاتاہے۔ واقعہ کے ایک ماہ بعد پھر ایک بار گھر پہنچ کر آپسی رضامندی کی بات کہتے ہوئے کیس واپس لینے کی اپیل کرتے ہیں۔ پولس عملے کی بات سے جب گھر والے انکار کئے تو مشتعل پولس عملہ نے گھر کے بلب وغیرہ توڑ پھوڑکرکے گالی گلوج کرتےہوئے بے عزت کرنے کے متعلق شکایت دی تھی۔ بدھ کو ایس پی دفتر میں دی ہوئی شکایت میں شانتا رام پربھو اور ان کی بیوی نے کہا ہے کہ معطل شدہ پولس عملہ موہن گوڈا اور نتیاسے ہماری جان کو خطرہ ہےہمین روزانہ ان سے خوف محسوس ہورہاہے، اس لئے ان کی فوری گرفتاری ہو اگر انہیں گرفتار نہیں کیا گیا تو ہم خود اپنے آپ کو ہلاک کرلیں گے ۔ اس موقع پر اس جوڑے کا کاروار کے سماجی کارکن مادھو نایک نے ان کا تعاون کیا اور ضلع ایس پی دفتر پہنچ کر ڈی وائی ایس پی، جی ٹی نائک کو شکایت دی۔

جی ٹی نائک انہیں تیقن دیا کہ وہ ان کی شکایت اعلیٰ افسران تک پہنچائیں گے اور سماجی کارکن مادھو نایک نے وہیں سے ایڈیشنل ایس پی اور آئی جی پی کو فون سے رابطہ کرتے ہوئے کارروائی کی اپیل کی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں گونڈا طبقے کی ذات سرٹی فکیٹ کا تنازعہ؛ کیا گونڈا اب پسماندہ ذات میں شامل نہیں ؟

جنگلوں اور پہاڑی علاقوں میں زمانۂ دراز سے بسنے والا ایک طبقہ جسے گونڈا کہا جاتا ہے  ضلع شمالی کینر ا کے بھٹکل اور اطراف میں بڑی تعداد میں آباد ہے، اب یہ طبقہ   ایک نئی سماجی مصیبت کا شکار ہوگیا ہے۔

کیا ذبیحہ کے لئے جانور فروخت کرنے پرمرکزی سرکار کی پابندی کارگر ہوگی؟!

ذبیحہ کے لئے جانوروں کی فراہمی جانوروں کی مارکیٹ اور میلوں سے ہوا کرتی ہے۔ مختلف شہروں میں کسان ایسی مارکیٹوں اور جانوروں کے میلے میں اپنے جانورفروخت کرتے ہیں اور یہاں سے قصائی خانوں کی ضرورت پوری ہوتی ہے۔ 

کالیکٹ کیرالہ میں ویناڈ دارلفلاح کیمپس کی نئی بلڈنگ کا شاندار افتتاح؛ دینی وعصری علوم کا حصول بیحد ضروری :ڈاکٹر ازہری

جامعہ مرکز الثقافۃ السنیہ کے شعبہ ریلیف اینڈ چاری ٹیبل فاؤنڈیشن آف انڈیا کے اشتراکی تعاون سے ویناڈ کال پٹہ دارالفلاح کیمپس کی نئی بلڈنگ برائے فلاح گرین ویلی اسکول ، زھرۃ القرآن ، قرآن اسٹڈی سینٹر کا آج یہاں شاندار افتتاح متحدہ عرب امارت کے ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ کے سلطان حمد سھیل ...

منگلورو:مرکزی حکومت کے 3سالہ کارنامے چرب زبانی سے تشہیر ہورہے ہیں:بی رماناتھ رائی

نریندر مودی کی قیادت والی مرکزی حکومت صرف رنگین وعدوں ارادوں میں ہی لوگوں کو بے وقوف بناکر تین سالہ اپنے دورحکومت کی منہ میاں مٹھو بن رہی ہے جب کہ عملی طورپر میدان سب خالی ہونےکا دکشن کنڑا ضلع نگراں کار وزیر رماناتھ رائی نے خیال ظاہر کیا۔