صرف سو روپے میں پورے جسم کا طبی معائنہ کرنے پرچار۔ ہیلتھ ڈپارٹمنٹ کے افسران نے جتایا ڈاکٹروں کے نقلی ہونے کاشک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th August 2018, 8:39 PM | ساحلی خبریں |

کاروار10؍اگست (ایس او نیوز)گرام پنچایت علاقوں میں جاپان سے درآمد کردہ جدید مشین سے صرف ایک سو روپے میں پورے بدن کا طبی معائنہ کرنے کے لئے کیمپ لگانے والے ڈاکٹروں کی ٹولی پر ہیلتھ ڈپارٹمنٹ کے افسران نے نقلی ڈاکٹر ہونے کا شک ظاہر کیا ہے۔

ایسا ایک میڈیکل چیک اپ کیمپ سرسی تعلقہ کے کانگوڈ پنچایت علاقے میں لگائے جانے کا اشتہار ی پمفلیٹ’وی فار یو‘ ادارے کے نام سے بانٹا گیا تھا اور کانگوڈ گرام پنچایت کے اشتراک سے میڈیکل کیمپ منعقد کرنے کی بات کہی گئی تھی۔ پمفلیٹ میں اس سے قبل یلاپور تعلقہ میں اور سرسی تعلقہ کے دیگر دو پنچایت علاقوں میں کیمپ لگاکر عوام کو فائدہ پہنچانے کا دعویٰ کیا گیا تھا۔اشتہار میں عوام سے کہا گیا تھا کہ جس طبی معائنے پر 10ہزار روپے خرچ آتا ہے ، وہ معائنہ اس کیمپ میں صرف ایک سو روپے میں کیا جائے گا۔خون یا کسی اور چیز کا ٹیسٹ کیے بغیر صرف دو سے تین منٹ میں پورے جسم کا طبی معائنہ کرنے کی بات بھی کہی گئی تھی۔پمفلیٹ کے مطابق ہبلی کے سریش پجاری کو اس کیمپ کا آرگنائزر بتایا گیا تھا۔

مبینہ ڈاکٹروں کے اس اشتہار کوپڑھ کر سیکڑوں لوگ مقررہ مقام پر طبی معائنے کے لئے جمع تو ہوگئے ، مگر تعجب خیز طور پر معائنہ کرنے والی ڈاکٹروں کی ٹیم وہاں پہنچی ہی نہیں۔اس لئے لوگوں کو یوں ہی واپس لوٹ جانا پڑا۔اس اشتہار کے پس منظر میں ڈاکٹروں کی اصلیت جاننے کے لئے ہیلتھ ڈپارٹمنٹ کے افسران بھی کیمپ والے مقام پر پہنچے تھے، مگرڈاکٹروں کی ٹولی وہاں نہ پہنچنے کی وجہ سے انہیں بھی خالی ہاتھ لوٹنا پڑا۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق اس سے قبل سرسی اور یلاپور کے چند پنچایت علاقوں میں یہ کیمپ منعقد کیے جاچکے ہیں۔ جہاں صرف مریضوں کے فنگر پرنٹس لینے کے بعد ان کے جسمانی اعضاء سے متعلق پانچ صفحات پر مبنی’ میڈیکل رپورٹ‘انہیں تھمادی جاتی ہے۔ کانگوڈ گرام پنچایت کی صدر جلجاکشی ہیگڈے نے بتایا کہ غریب عوام کو فائدہ پہنچانے کی نیت سے گرام پنچایت نے اس ٹولی کے ساتھ اشتراک کا فیصلہ کیا تھا۔جب موقع پر جمع سیکڑوں افراد نے معائنہ کرنے والی ٹیم مقررہ مقام پر نہ پہنچنے کی وجہ سے مایوس ہوگئے تو گرام پنچایت صدر نے اشتہار میں دئے گئے نمبر پر رابطہ کیا تو پہلے تو ’رانگ نمبر‘ کہہ کر فون کاٹا گیا ۔ پھر بعد میں
’اجازت نہ ملنے ‘ کا بہانہ کیا۔ 

تعلقہ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر ونائک کنّی کا کہنا ہے کہ دس ہزار روپے خرچ آنے والاکوئی میڈیکل ٹیسٹ محض 100روپے کے اندر کرنا کسی صورت بھی ممکن نہیں ہے۔ اسسٹنٹ کمشنر راجو موگویر نے بتایا کہ یہ نقلی ڈاکٹروں کی طرف سے عوام کو دھوکا دینے کا معاملہ ہوسکتا ہے۔ اس سلسلے میں مناسب قانونی کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے قریب شیرور میں لاری کی ٹکر سے راہ گیر کی موت

پڑوسی علاقہ شیرور میں ہوئے ایک سڑک حادثہ میں ایک راہ گیر کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی جس کی شناخت 85 سالہ تمپا اچار کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ حادثہ سنیچر کو اُس وقت پیش آیا جب عمر رسیدہ شخص تمپا آچار  بارش کی وجہ سے ہاتھ میںؓ چھتری تھامے  نیشنل ہائی وے کو کراس  کررہا تھا کہ ...

جنوری 19 کو ہوں گےانجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے انتخابات؛ اسحاق شاہ بندری الیکشن کمشنر منتخب

قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے عام انتخابات اگلے سال 19 جنوری کو ہوں گے جس کے لئے آج سنیچر کو  ہوئی انتظامیہ میٹنگ میں  الیکشن کمشنر کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔  اس بات کی تصدیق انجمن کے جنرل سکریٹری جناب صدیق اسماعیل نے کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ  آج کی میٹنگ میں ...

پتورکے ویویکا نندا کالج میں گینگ ریپ کی واردات کے بعد طلبہ کے لئے سخت قوانین کا نفاذ۔ کلاسس معطل۔ طلبہ کے اندر اضطراب 

گزشتہ دنوں  اپنی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ  کچھ طلبہ کی جانب سے کیے گئے گینگ ریپ کی وجہ سے سرخیوں میں آنے والے قریبی شہر پتور  کے مشہور ویویکانندا کالج میں طلبہ کے لئے نئے قوانین اور ضابطے وضع کیے گئے ہیں، جن کی پابندی کا عہد کیے بغیر کسی بھی طالب علم کوکلاس میں داخل ہونے کی اجازت ...

بھٹکل تحصیلدار آفس میں بارش کے نقصانات  سے بچنے امدادی سنٹر کی شروعات

بھٹکل تعلقہ بھر میں بہتر بارش ہورہی ہے، اس کےساتھ ساتھ موسلا دھار بارش کے نتیجےمیں اچانک کوئی حادثات بھی پیش آتے ہیں۔ ان حادثاتی مواقع پر عوام کوفوری امداد و راحت پہنچا کر  نقصانات سے بچانے کے لئے بھٹکل تحصیلدار دفتر میں امدادی مرکز (ہیلپ سنٹر) کی شروعات کی گئی ہے۔

بھٹکل میں موسلادھار بارش کاسلسلہ جاری، حنیف آباد کی سڑک تالاب میں تبدیل؛ کئی مکانوں میں پانی داخل ہونے کی شکایتوں کے بعدتحصیلدار کا دورہ

گزشتہ دو دنوں سے برس رہی بارش کے نتیجےمیں تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت حدود کے حنیف آباد کی سڑک تالاب نما کی شکل اختیارکرنےکے علاوہ سڑک کا پانی پاس پڑوس کے گھروں میں پانی گھسنے سے عوام پریشانی میں مبتلا دیکھے گئے۔

اترکنڑا ضلع پنچایت کو 5.97کروڑروپئے کی امداد : آبادی اور جغرافیائی وسعت کے مطابق امداد کی منظوری کا فیصلہ

فورتھ فائنانس کمیشن کی سفارشات کے تحت سال 2019-2020کے لئے ضلع پنچایتوں کی امداد میں اضافہ کیاگیا ہے۔ جس کےمطابق ریاستی حکومت نے بیلگام ضلع کو 8کروڑرو پئے منظور ہوئے ہیں تو اترکنڑا ضلع کے لئے 5.74کروڑ روپئے کی امداد منظور کی ہے۔