کاروار:شہر کے اے ٹی ایم نقد رقم سے خالی خالی :گاہک گھوم گھوم کر پریشان

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 16th April 2018, 7:38 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:16/اپریل (ایس او نیوز)شہر کے سبھی اے ٹی ایم نقد رقم سے خالی خالی ہونے کے نتیجے میں گاہک اِدھر اُدھر گھوم گھوم کر پریشان ہو رہے ہیں۔بینک والے اے ٹی ایم میں نقد رقم جمع کرنے کے کچھ ہی دیر میں خالی ہونے سے عوام میں کئی شکوک و شبہات بھی پیدا ہورہے ہیں، اے ٹی ایم کے سامنے ’’نوکیش‘‘،’’آؤٹ آف سرویس ‘‘ کے بورڈ دیکھ دیکھ کر گاہک بیزار ہوگئے ہیں۔

اسپتال میں علاج کے لئے ، دور دراز مقامات کے سفر کے لئے ، یومیہ اخراجات سمیت کئی کاموں کے لئے نقد رقم کی ضرورت ہوتی ہے ، گاہک اے ٹی ایم سے اے ٹی ایم گھومتے رہنےکے باوجود نقد رقم مل نہیں پارہی ہے۔ جس سے عوام ناراض ہوکر ملامت کرتے دیکھے گئے۔

ایس بی آئی میں نقدرقم کی قلت : شہر میں مختلف بینکوں کے 30سے زائد اے ٹی ایم ہیں، قریب 27بینکوں کی 35سے زائد شاخیں یہاں موجود ہیں، اے ٹی ایم میں نقد رقم جمع کرنےکے لئے کانٹراکٹ دیا گیا ہے، متعلقہ کمپنی کے لوگ اے ٹی ایم میں نقد رقم جمع کرتے رہتے ہیں۔ مگر اس سلسلے میں بینک ملازمین سنگھ کے ضلع جنرل سکریٹری واسودیو شیٹھ نے بتایا کہ اسٹیٹ بینک آف انڈیا کو ریزرو بینک آف انڈیا کی طرف سے ضرورت کے مطابق نقد رقم مہیا نہیں کی جارہی ہے۔ جس کے نتیجے میں جتنی رقم گاہک بینک میں جمع کرتے ہیں اتنی ہی رقم اے ٹی ایم میں جمع کی جارہی ہے۔

جب اس کی وجہ تلاش کرتے ہیں تو پتہ چلتا ہے کہ سال پہلے ہی ریزرو بینک آف انڈیا شہر کو نو کیش سٹی قرار دے کر اعلان کیاہے اور دباؤ ڈالا ہے کہ عوام کو ڈیجیٹل لین دین کی طرف ترغیب دیں۔ انہی وجوہات کی بنا زائد نقد رقم کی سپلائی بند ہوئی ہے۔چونکہ اب انتخابات کا زمانہ ہے خطیر رقومات جمع کرنےو الے بڑے بڑے سرمایہ دار اور صنعت کار پہلے کی طرح نقد رقم بینکوں میں جمع نہ کرتے ہوئے بینک سے رقم لےرہے ہیں، جس کا راست اثر بینک دیگر گاہکوں پر دیکھا جارہاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل رکن اسمبلی کی کار روک کر بی جےپی کارکنان نے کی نعرے بازی

پیر کو جب دوحریف سیاسی پارٹیوں کے امیدوار پرچہ نامزدگی داخل کرنےکے دوران کچھ انہونی واقعات پیش آئے ۔ کانگریس امیدوار منکال وئیدیا اے سی دفتر میں پہلے پہنچ کر اپنا پرچہ داخل کرنےمیں مصروف تھے تو اسی وقت بی جے پی امیدوار سنیل نایک بھی اپنےلیڈران کے ساتھ پرچہ داخل کرنے کے لئے ...

بھٹکل بی جےپی میں عدم اطمینانی کا دور : امیدوار کے پرچہ نامزد گی کے دوران اہم اور سنئیر لیڈران غائب

پیر کو بی جے پی امیدوار سنیل نائک جب پرچہ نامزدگی کے لئے ہزاروں حمایتوں کے ساتھ روڈ شو کرتے ہوئے نکلے تو سابق وزیر اور بی جے پی لیڈران شیوانند نائک، سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک، بھٹکل کے ہندو برانڈ لیڈر ،بی جےپی ضلع نائب صدر گوند نائک کا نظر نہیں آنااورپروگرام کے بالکل آخر میں ...

بھٹکل رکن اسمبلی منکال وئیدیا اور بی جے پی امیدوار سنیل نائک دونوں کروڑوں جائیداد کے مالک

ریاست کے مختلف مقامات پر وزراء اور ارکان اسمبلی کی جائیداد میں دوگنا ، تگنا اضافہ ہواہے تو بھٹکل کے رکن اسمبلی منکا ل وئیدیا اپنی ذاتی سواریوں ، ڈامبر پلانٹ، ٹپر ، ہٹاچی وغیرہ کو فروخت کرتے ہوئے اپنی جائیداد میں 57،85410 روپئے کا اضافہ کر لیا ہے۔

اننت کمارہیگڈے کو فون پر ملی جان سے مارنے کی دھمکی۔سرسی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج

مرکزی وزیر برائے اسکل ڈیولپمنٹ اننت کمار ہیگڈے کو مبینہ طور پرکسی نے انجان نمبر سے فون کرکے جان سے مارنے کی دھمکی دی ، جس کے تعلق سے اننت کمار کے پرسنل اسسٹنٹ سریش شیٹی نے سرسی ٹاؤن پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی ہے۔

بھٹکل میں کانگریس کی طرف سے منکال وئیدیا اوربی جے پی کی طرف سے سنیل نائک نے داخل کیا پرچہ نامزدگی

کرناٹکا ودھان سبھا انتخابات کے لئے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے لئے آخری تاریخ 24/ اپریل ہے اور آج پیر کو دو اہم سیاسی حریف پارٹیوں کے طرف سے پرچہ نامزدگی داخل کی گئی ہے۔ کانگریس کی طرف سے آج منکال وئیدیا نے اپنا پرچہ نامزدگی داخل کیا تو بی جے پی کی طرف سے سُنیل نائک نے  سینکڑوں ...