کرناٹک اسمبلی انتخابات: کیا 2019 کے عام انتخابات پر اثر ڈالیں گے کرناٹک کے نتائج

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th May 2018, 11:51 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،15؍مئی(ایس او نیوز؍ایجنسی) کرناٹک اسمبلی انتخابات کے نتائج پرپورے ملک کی نظریں ہیں ۔ اس کی متعدد وجوہات ہیں ۔ کچھ وجوہات تو بہت واضح ہیں ۔ مثلاََ، راہل گاندھی کی سیاسی کارکردگی اور دوسری جانب نریندر مودی کے وجے رتھ کی۔

لوگوں کی نظر اس بات پر ہے کہ کیا کرناٹک کا انتخابات نریندر مودی اور امت شاہ کے انتخابی وجے رتھ کو روک پائے گا۔ جو ایک کے بعد ایک ریاستوں میں اپنی پارٹی کی حکومت قائم کرنے میں کامیاب ہو رہےہیں۔ کیا کرناٹک انتخابات بی جے پی کے لئے جنوبی ہندوستان میں پیر جمانے کا راستہ بنے گااور دوسری جانب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ اگر کانگریس کو شکست ملی تو راہل گاندھی کا کیا ہوگا۔

واضح رہے کہ کرناٹک انتخابات کے بعد مدھیہ پردیش ، راجستھان اور چھتیس گڑھ کے اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں ۔ لیکن یہ کہا جا رہا تھاکہ کرناٹک کافی کچھ طے کرئے گا کہ 2019 میں کیا تصویر ہونے والی ہے ۔ گورکھ پور اور پھولپور کے ضمنی انتخابات میں بی جے پی کو زبردست ہارملنے کے بعد یہ پہلا بڑا انتخابات ہے جس میں سب سے زیادہ ریاستوں میں حکمراں پارٹی کے وقار کی بات ہے۔

کانگریس مسلسل شکست سے دوچار ہی لہذا. بی جےپی سے بڑا دباو اپنے اس حصہ کو بچانے کا ہے ۔ اگرچہ یہ انتخابات ہارتے ہیں رائٹ ونگ راہل گاندھی کو لے کر اور زیادہ جارحانہ ہو جائے گا اور اس سے 2019 تک فائدہ اٹھانےکی کوشش کرئے گا۔ حالانکہ بی جے پی ہارتی ہے تو کانگریس کو ملا کر پورا حزب مخالف یہ ثابت کرنے کی کوشش کرئے گا کہ اب مرکز میں حکمراں پارٹی کی الٹی گنتی شروع ہو چکی ہے ۔

قابل ذکرہے کہ بی جے پی کی انتخابی مہم سب سے زیادہ جار حانہ رہی ہے ۔ شروعات میں طے ہوا تھا کہ نریندر مودی صرف سات ریلیاں کریں گے لیکن انہوں نے ایسا نہ کرتے ہوئے کل 21 ریلیاں کر ڈالیں ۔ دوسری جانب راہل گاندھی نے 20 ریلیاں کی ہیں۔ راہل گاندھی نے 40 روڈ شو بھی کئے ہیں جبکہ۔ بی جے پی صدر امت شاہ کچھ ماہ سے کرناٹک میں ہی رہ رہے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

ساحلی کینرا میں کچھ لمحوں کے لئے بادلوں کی گرج کے ساتھ بارش؛ کمٹہ میں بجلی گرنے سے ایک مکان منہدم؛ تین شدید زخمی

کل شام کو کچھ دیر کے لئے ہوئی بادلوں کی گرج کے درمیان زوردار بارش سے ساحلی کینرا میں گرمی کا زور ٹوٹ گیا ہے اور لوگوں نے گرمی سے نجات ملنے پر راحت کی سانس لی ہے، البتہ  کمٹہ تعلقہ کے  برگی دیہات میں بجلی گرنے سے ایک مکان  کو شدید نقصان پہنچا ہے اور دیواریں گرنے سے گھر کے اندر ...

کیرالا میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا

کیرالا کی وزیر صحت کے کے شیلجہ نے آج کہا کہ ریاست میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا ہے، جس نے 10 افراد کی جان لی ہے اور دہشت زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ کوزی کوڈ میڈیکل کالج ہاسپٹل میں 17 افراد زیرعلاج ہیں۔

مینگلوراسپتال میں ایڈمٹ بھٹکل کے ایک مریض کے لئے مالی تعائون کی درخواست

رکشہ چلا کر اپنا اور اپنے خاندان کو سنبھالنے والا ساجد احمد ابن شریف اس وقت مینگلور کے ایک پرائیویٹ اسپتال کے انتہائی نگہداشت والے کمرے میں  ایڈمٹ ہے، جہاں اُس کے جسم کا ایک حصہ ناکارہ ہوگیا ہے۔ ڈاکٹروں کی صلاح پر ایک آپریشن ہوچکا ہے، مزید علاج درکار ہے۔ آپریشن کا خرچ قریب ...