بجلی کی پیداوار میں کرناٹک خود کفیل بنے گا: شیوکمار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th January 2017, 11:54 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو۔10؍جنوری(ایس او نیوز) ریاستی وزیر توانائی ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ آئندہ سال کے اختتام تک شعبۂ توانائی میں کرناٹک مکمل طور پر خود کفیل ہوجائے گا۔ بجلی کی اضافی پیداوار کیلئے حکومت نے کئی منصوبے اپنائے ہیں۔ جن کو انجام تک پہنچانے کے ساتھ ہی اگلے سال کی شروعات سے ریاست میں بجلی کے مسئلے کو مکمل طور پر قابو میں کرلیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ ریاست میں فی الوقت بجلی کی قلت کو سلجھانے کیلئے عارضی طور پر جندال پاور کمپنی سے 600میگاواٹ بجلی حاصل کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔ چھ ماہ میں جندال کمپنی کی طرف سے ریاست کو اس بجلی کی ترسیل کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ آئندہ سال کوڈلگی میں 1200 میگاواٹ توانائی پیدا کرنے والے ایرمراس پراجکٹ کو تیار کرلیا جائے گا۔ ساتھ ہی بلاری میں700 میگاواٹ کی بجلی دستیاب رہے گی۔ جو بعد میں 1600 میگاواٹ تک بڑھائی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ روایتی بجلی کی پیداوار کے ساتھ دیگر امکانات کا جائزہ بھی لیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو:ہائی پروفائل سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش، ہیڈ کانسٹیبل سمیت 7گرفتار

پولیس نے بنگلور کے کویمپو نگر علاقے میں کرایہ کے ایک مکان میں چل رہے ہائی پروفائل سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش کیا ہے۔اس ریکٹ کو چلانے کے الزام میں ایک ہیڈ کانسٹیبل سمیت 7 افراد کو پولیس نے گرفتار کیا ہے۔پولیس ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے پوچھ گچھ کر رہی ہے،یہ ریکیٹ آن لائن چلایا ...

شہر کی ترقی کیلئے ریاستی حکومت پوری طرح سنجیدہ 8ماہ میں7300کروڑ روپئے خرچ کرنے کا منصوبہ، جارج کی یقین دہائی

بنگلور وترقیاتی وزیر کے جے جارج نے کہا کہ شہر کی مجموعی ترقی کیلئے ریاستی حکومت اپنے بجٹ میں مختص 7300کروڑ روپئے کا استعمال کرتے ہوئے 8ماہ کے اندر شہر کی مجموعی ترقی کیلئے اقدامات کرے گی۔

ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت ملک کے مسلمانوں کو غیر ضروری مسائل میں الجھانے کی سازش ہورہی ہے :پروفیسر ریاض قیصر

اس وقت ملک میں مسلمانوں کے آگے جو سنگین اور اہم مسائل درپیش ہیں ان کی جانب سے ہماری توجہ ہٹانے کیلئے ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت مسلمانوں کو فروعی مسائل میں الجھانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔

ریاستی کابینہ توسیع میں مزید تاخیر کا امکان

ریاستی کابینہ کے خالی عہدوں کی بھرتی اس مہینہ میں کئے جانے کے جو امکانات تھے اب ان میں تاخیر ہوسکتی ہے۔وزیراعلیٰ سدارامیا جو اس سلسلہ میں ہائی کمان سے مشورہ کے لئے دہلی گئے ہوئے تھے ۔