ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحان میں 50.88 فیصد طلبا کامیاب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th July 2017, 3:28 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،13؍ جولائی(ایس او نیوز) امسال جون کے دوران کروائے گئے ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحانات کے نتائج کا آج اعلان کردیاگیا، جس میں50.88 فیصد طلبا کامیاب ہوئے ہیں۔ آج شہر کے سکینڈری ایجوکیشن بورڈ میں وزیر برائے بنیادی وثانوی تعلیمات تنویر سیٹھ نے ان نتائج کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ سال کے سپلیمنٹری امتحانات کے نتائج کا موازنہ کیا جائے تو امسال کافی سدھار آیا ہے، اور اوسطاً یہ اضافہ دوگنا ہے۔ گزشتہ سال محض 26.01فیصد طلبا کامیاب ہوپائے تھے۔ انہوں نے بتایاکہ امسال سپلیمنٹری امتحان لکھنے کیلئے 242951 طلبا حاضر ہوئے جن میں سے 123443 طلبا کامیاب ہوئے ہیں۔ حسب روایت لڑکیاں پیش اپیش ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایس ایس ایل کے سالانہ امتحان اور سپلیمنٹری امتحان کے نتائج کو اگر یکجا کیا جائے تو رواں سال ایس ایس ایل سی امتحان میں کامیابی کا اوسط بڑھ کر82.28 فیصد ہوگیا ہے۔ انہوں نے بتایاکہ امتحان کے نتائج ویب سائٹوں اور موبائل ایپ پر مہیا کرائے جاچکے ہیں۔ وزیر موصوف نے بتایاکہ آج کامیاب ہونے والے طلبا کے پی یو سی میں داخلہ کیلئے مہلت میں توسیع کرتے ہوئے انہیں 31 جولائی تک کا موقع دینے کیلئے احکامات صادر کئے جاچکے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ایس ایس ایل سی کے سالانہ امتحان میں کامیاب ہونے والے طلبا جرمانہ سمیت 31جولائی تک داخلہ لے سکتے ہیں ، لیکن سپلیمنٹری امتحان میں کامیاب ہونے والے طلبا کو جرمانہ سے مستثنیٰ کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس امتحان میں بھی ناکام ہونے والے طلبا کو جوابی پرچوں کی نقل حاصل کرنے کیلئے 24جولائی تک کی مہلت دی گئی ہے۔ سپلیمنٹری امتحان میں 55.88طالبات اور 47.90 لڑکے کامیاب ہوئے ہیں۔ دیہی علاقوں میں کامیابی کا اوسط 54.33 اور شہری علاقوں میں 47.02 فیصد رہا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

چکمنگلور میں پٹرول ٹینکر اُلٹ گئی؛ دو زندہ جل کر ہلاک؛ کئی مکانوں میں آگ؛ سو میٹر تک آگ کے شعلے؛ مرنے والوں کی تعداد زائد ہونے کا خدشہ

ریاست کرناٹک کے ضلع چکمنگلور کے کڈور تعلقہ کے گریا پور میں ہائی وے پر ایک پٹرول ٹینکر اُلٹ جانے کے نتیجے میں سو میٹر سے زائد رقبہ تک آگ پھیلنے کے ساتھ ساتھ  کم ازکم دو لوگوں کے ہلاک ہونے کی اطلاع ملی ہے ۔

کسانوں کا قرضہ معاف کرنے مرکزی حکومت سے تعاون کی اپیل 85لاکھ سے زائد کسان مشکلات کا شکار ہیں ، مصیبت کی گھڑی میں ہاتھ تھامنا مرکزی و ریاستی حکومت کاکام ہے: کمار سوامی

قرض کی دلدل میں پھنسے ہوئے کسانوں کو اوپر لانے کی خاطر کئے جارہے قرضہ معاف اسکیم کو مرکزی حکومت 50فی صد امداد فراہم کرے ، اس خیال کااظہار ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کیا۔

ٹریفک پر قابو پانے کیلئے دو فلائی اوور کی تعمیر عنقریب

سڑکوں کی بدحالی کے سبب شہر میں ٹریفک جام کا مسئلہ پیش آیا ہے جسے دور کرنے کیلئے تارکول کے بجائے کانکریٹ کی سڑکیں بچھائی گئی ہیں ۔ اولڈ مدراس روڈ کو اولڈ ایرپورٹ روڈ سے جوڑنے والے 2.6کلومیٹر طویل سرنجن داس روڈ پر کانکریٹ کی سڑک تعمیر کی گئی ہے ۔

ملک بھر میں لاری مالکان کی ہڑتال شروع اشیائے ضروری کی سربراہی متاثر ہونے کا امکان

ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ، تھرڈ پارٹی انشورنس پریمیم کی فیس میں اضافے کے خلاف کرناٹک سمیت ملک بھر میں لاری مالکان کی غیر معینہ مدت ہڑتال آج سے شروع ہوچکی ہے۔ اس ہڑتال میں کل سے مزید شدت لائی جائے گی۔

گوری لنکیش قتل معاملہ: سری رام سینا نے کیا مہلوک صحافیوں کا 'کتے' سے موازنہ؛ پوچھا، کیا کتے کی مو ت کے لئے بھی وزیراعظم ذمہ دار ہیں؟

شری رام سینا کے صدر پرمود متالک نے کرناٹک اور مہاراشٹر میں سماجی کارکنان اور صحافیوں کے قتل پر متنازعہ بیان دیا ہے۔ گوری لنکیش اور ایم ایم کلبرگی کے قتل کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کانگریس پر سوال کھڑے کرتے ہوئے متنازعہ بیان دیا ۔