کانگریس امیدواروں کی فہرست پر ابھی اتفاق نہیں ہوسکا لیڈروں کے جھگڑے: مسلمانوں کو ٹکٹ کم کردئے جانے کا خدشہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th April 2018, 11:20 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی/بنگلورو۔13 اپریل(ایس او نیوز) ریاست کرناٹک میں آئندہ 12 مئی کو ہونے والے اسمبلی انتخابات کے لئے کانگریس امیدواروں کی پہلی فہرست پر آج بھی حتمی فیصلہ نہیں ہوسکا۔ امیدواروں کی فہرست کو حتمی شکل دینے سے متعلق آج نئی دہلی میں منعقدہ کانگریس مرکزی انتخابی کمیٹی کے اجلاس میں چند امیدواروں کے انتخاب پر کمیٹی کے اراکین کے درمیان کافی نوک جھونک ہوئی۔ یہ اجلاس کل بھی جاری رہے گا۔ چند امیدواروں کے ناموں پر لیڈروں میں اب بھی نااتفاقی ہے۔ کہا جارہا ہے کہ سی ای سی اجلاس میں پہلی بار چند امیدواروں کے ناموں سے متعلق اتنی طویل بحث ہورہی ہے ۔ بالخصوص بنگلور کے پلکیشی نگر اسمبلی حلقہ کو لے کر لیڈروں کے درمیان کافی توتو میں میں ہوئی۔ سینئر کانگریس لیڈر ولوک سبھا میں اپوزیشن کانگریس لیڈر ملیکارجن کھرگے اس حلقہ سے پارٹی ٹکٹ پرسنا کمار کو دلانے کے حق میں ہیں جبکہ وزیراعلیٰ سدارامیا وعدہ کے تحت جے ڈی ایس چھوڑکر کانگریس میں شامل ہوئے اکھنڈ سرینواس مورتی کے حق میں ہیں ۔ خدشہ پیدا ہوگیا ہے کہ ان لیڈروں کے جھگڑے میں کہیں مسلم امیدواروں کو ٹکٹ کم نہ کردئے جائیں ۔ پچھلے انتخابات میں کانگریس نے 19مسلم امیدواروں کو ٹکٹ دئے تھے ۔یہ بھی اطلاع ملی ہے کہ امیدواروں کی فہرست کو قطعیت دینے کے دوران رونما ہورہے ان حالات کے بعد کانگریس ہائی کمان وزیراعلیٰ سدارامیا ہی کو فوقیت دے گا۔

شانتی نگر حلقہ:ذرائع سے اطلاع ملی ہے کہ بنگلور کے شانتی نگر اسمبلی حلقہ سے ٹکٹ دئے جانے پر بھی ابھی فیصلہ نہیں ہوپایا ہے۔ موجودہ رکن اسمبلی این اے حارث کو اس مرتبہ ٹکٹ دیا جانا مشکوک ہے۔ محض ایک چھوٹے سے جھگڑے کو جس میں حارث کے فرزند ملوث تھے، بہانہ بناکر اگر حارث کو ٹکٹ سے محروم کردیا گیا تو یہ مسلمانوں کے ساتھ زیادتی اورناانصافی ہوگی۔ پچھلے 10سال کے دوران حارث نے اس حلقہ کی مجموعی ترقی میں نمایاں رول ادا کیا ہے ۔ سیاسی مبصرین کا خیال ہے کہ اس حلقہ سے کانگریس نے حارث کو ٹکٹ نہیں دیا۔ کسی دوسرے امیدوار کو میدان میں اتارا تو یہ حلقہ کانگریس کے ہاتھ سے نکل جانے میں کوئی شک ہی نہیں۔ کل کے اجلاس میں اگر پہلی فہرست کو قطعیت دے دی گئی تو 14 اپریل کی شام تک پہلی فہرست کے جاری ہونے کا امکان ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

سائبر سیکورٹی کے نظام کو مستحکم کرنا ضروری 

دہشت گرداانہ حملوں اور سماج دشمن سرگرمیوں پر نظر رکھنے کے لئے جدید ترین ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے سائبر سیکورٹی قائم کی جارہی ہے جو کہ اس شعبے میں ہندوستان کی ایک اہم پیش رفت ہے۔

کیا شیرورمٹھ کے سوامی کی موت کثرت شراب نوشی اور ناجائز تعلقات کے نتیجے میں ہوئی ؟معاملہ کی تحقیقات اور جانچ کیلئے 7ٹیمیں تشکیل 

اُڈپی شرورمٹھ کے سوامی لکشمی ورتیرتھ سوامی جی کی مشتبہ حالات میں ہوئی موت پر انہیں قتل کیے جانے کاشبہ ظاہر کیاگیاتھا جس کے نتیجہ میں اڈپی ضلع ایس پی نے اس معاملہ کی ہر زاویہ سے جانچ کے لیے پولیس کی 7ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ شرور علاقہ میں یہ افواہیں بھی اڑائی جارہی ہیں کہ سوامی ...

رائے بریلی میں بھاجپائی لیڈر پر ریپ کا الزام، متاثرہ نے کہا ڈیڑھ ماہ تک آبروریزی کرکے ویڈیو بنائی 

اتر پردیش کے ضلع رائے بریلی میں ایک خاتون نے بی جے پی لیڈر پر آبروریزی کا الزام لگایا ہے۔ خاتون کا یہ بھی الزام ہے کہ بی جے پی لیڈر نے فحش ویڈیوز بنا کر اسے بلیک میل کرتا رہا ۔ متاثرہ کا کہنا ہے کہ اس کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ بھی درج کیا، لیکن ملزم کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی ...

ایوان میں مودی کی تقریر پر اپوزیشن کی رائے: کانگریس نے ڈرامہ بازی قراردیا، چندرا بابو نائیڈو نے پی ایم کو گھمنڈی کہا 

عدم اعتماد کی پیشکش پر بحث کے دوران مودی کی تقریر کو کانگریس نے 'ڈرامے بازی' قرار دیا ہے۔ پارٹی نے کہا کہ پی ایم مودی سے رافیل ڈیل ، نیرو مودی ، سمیت دیگر کئی مسائل پرسوال پوچھے گئے، لیکن انہوں نے کسی بھی سوال کا جواب نہیں دیا ۔ کانگریس لیڈر ملک ارجن کھڑگے نے کہا کہ ان تقریر 'ڈرامے ...

مودی کی مقبولیت کا ردعمل موب لنچنگ ہے : میگھوال 

راجستھان کے الور ضلع میں ایک بار پھر زر خرید ہجو م کے ذریعہ گائے اسمگلنگ کے شبہ میں اکبر نامی ایک مسلم تاجر کو پیٹ پیٹ کر شہید کر دیا گیا۔اس واقعہ پر مرکزی وزیر ارجن رام میگھوال نے کہا ہے کہ وہ اس واقعہ کی مذمت کرتے ہیں لیکن یہ صرف تنہا واقعہ نہیں ہے ہمیں اس کی تاریخ میں جائیں گے. ...

مودی سے راہل کے گلے ملنے پر یشونت سنہا کو ملا طنزکا موقع 

مودی حکومت کے خلاف مسلسل باغیانہ تیور اختیار کرنے والے سابق بی جے پی لیڈر یشونت سنہا نے جمعہ کو پارلیمنٹ میں راہل گاندھی کی طرف سے پی ایم مودی کو گلے لگائے جانے کو لے کر مودی پر طنز کیا ہے۔ وہیں کانگریس صدر راہل گاندھی کو گلے لگنے والے تنازعہ میں یشونت سنہا کا ساتھ ملا ہے۔ اکثر ...

بی جے پی سے ترک تعلق کرنے والے لیڈر نے تھاماترنمول کانگریس کادامن 

بی جے پی کے سابق رہنما اور راجیہ سبھا سے دو بار رکن رہ چکے سینئر صحافی چندن مترا نے آج کولکاتہ میں ایک ریلی کے دوران ترنمول کانگریس کا دامن تھام لیا ہے۔ ممتا بنرجی کی ٹی ایم سی میں آج ایک بڑی ریلی کے دوران ویسے تو بہت سے چہرے شامل ہوئے، مگر چندن مترا سے قدآور لیڈر کوئی نہیں تھی

راہل گاندھی نے بھارتی سیاستدان کی تصویر کو شدید نقصان پہنچایا: جیٹلی

راہل گاندھی پر فرانسیسی صدرکے ساتھ بات چیت کی کہانی گڑھنے کا الزام لگاتے ہوئے مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے آج کہا کہ کانگریس صدر نے دنیا کے سامنے کسی ہندوستانی سیاستداں کی تصویر کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔ مودی حکومت کے خلاف کل لوک سبھا میں عدم اعتماد کی تجویز پر بحث کرتے ہوئے ...