کرناٹک کو مرکزی ٹیم روانہ کرنے مودی کی یقین دہانی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:19 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس اونیوز) کورگ اور ملناڈ علاقوں میں سیلاب اور بارش کی وجہ سے مچی تباہی کا جائزہ لینے کے لئے عنقریب ایک مرکزی ٹیم روانہ کی جائے گی۔ وزیراعظم نریندر مودی نے آج وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی کی ان سے ملاقات کے دوران یہ یقین دہانی کرائی۔

وزیر اعلیٰ کی قیادت میں وفد نے وزیراعظم کو ریاست میں مچی تباہی کے بارے میں تفصیلات فراہم کیں ، ان تمام کو سننے کے بعد وزیراعظم نے کہاکہ ریاست میں سیلاب کی وجہ سے جو تباہی مچی ہے اس کا جائزہ لے کر مرکزی حکومت کو رپورٹ پیش کرنے اعلیٰ افسروں کی ٹیم عنقریب بنگلور بھیجی جائے گی۔

وزیراعظم سے کرناٹک کے لئے دو ہزار کروڑ روپیوں کا پیکیج منظور کرنے کے مطالبے پر انہوں نے کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا، اس کے علاوہ ریاست کے 17اضلاع کے خشک سالی کے بارے میں بھی تمام تفصیلات پیش کئے جانے کے باوجود وزیراعظم خاموش رہے۔ البتہ وفد میں شامل اراکین کو دیکھ کر انہوں نے یہ طنز یہ فقرہ ضرور کسا کہ آدھا وفد تو دیوے گوڈا کا خاندان ہی ہے۔ وفد میں شامل سات اراکین میں سے تین کا تعلق دیوے گوڈا خاندان سے تھا، خود دیوے گوڈا اور ان کے دو فرزند وزیراعلیٰ کمار سوامی اور وزیر تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں میں مصروف، جے ڈی ایس سے اتحاد کی صورت میں کانگریس آٹھ حلقے چھوڑنے پر آمادہ

ریاست کی مخلوط حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی کی طرف سے بارہا کئے گئے آپریشن کمل کی ناکامی نے اب کانگریس کو لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں کے لئے راحت کی سانس لینے کا موقع فراہم کیا ہے۔

بنگلورومیں ایر و انڈیا ایر شو ، غیر معمولی حفاظتی انتظامات ،ٹریفک کی نگرانی کے لئے منصوبہ تیار

شہر گلستان بنگلو رمیں 20فروری سے ایرو انڈیا 2019 کاآغاز سخت سکیورٹی کے درمیان ہونے جارہا ہے۔ جموں وکشمیر میں پلوامہ حملے کے بعد ملک بھر میں بڑی ہوئی چوکسی کے درمیان اس شو کی شروعات ہورہی ہے۔

بی بی ایم پی کے بجٹ میں فلاحی اسکیموں اور ترقیاتی منصوبوں کی بھرمار، اثاثہ ٹیکس کے لئے 3500کروڑ کی آمدنی کا نشانہ 

برہت بنگلور مہانگر پالیکے میں آج 2019-20 کا بجٹ پیش کیاگیا۔ جس میں سماج کے کمزور طبقات اور غریبوں پر توجہ دینے کے ساتھ متوسط طبقے اور خواتین کے لئے بھی فلاحی اسکیمیں لاگو کرنے کا اعلان ہوا۔