کرناٹک اسمبلی انتخابات: اُتر کنڑا میں تقریبا 77 فیصد پولنگ؛ تین بوتھوں میں مشینوں میں خرابی سے کچھ دیر کے لئے لوگوں کو کرنا پڑا انتظار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th May 2018, 9:56 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 12/ مئی (ایس او نیوز) آج سنیچر کو ریاست کرناٹک میں پرامن طور پرانتخابات منعقد ہوئے جس میں ایک اندازے کے مطابق 70 فیصد پولنگ  ریکارڈ کی گئی ہے۔ 

ضلع اُترکنڑا میں 76.30  فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی ہے جس میں سب سے زیادہ پولنگ کمٹہ میں ہوئی ہے۔ جہاں کی پولنگ کا تناسب 80.34  فیصد درج کیا گیاہے۔ اس بار سب سے کم پولنگ ہلیال  اسمبلی حلقہ میں درج کی گئی ہے جہاں 71.65 فیصد پولنگ ہوئی ہے۔ بھٹکل میں بھی اس بار ووٹروں نے پورے جوش وخروش کے ساتھ انتخابات میں حصہ لیتے ہوئے  اپنی حق رائے دہی کا بھرپور استعمال کیا ہے۔یہاں 73.20  فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی ہے۔

اس بار سرسی میں 80.30 فیصد،یلاپور میں 79.80  فیصد اور  کاروار میں 72.76 فیصدپولنگ ریکارڈ کی گئی ہے۔

ضلع اُترکنڑا کے تقریبا تمام پولنگ بوتھوں میں صبح سات بجے سے ہی ووٹرس قطاروں میں لگنے شروع ہوگئے تھے، شام چھ بجے سے پہلے پہلے لوگوں کی تعداد میں بتدریج کمی واقع ہوتی چلی گئی اور وقت ختم ہونے تک لوگ بھی پولنگ بوتھوں پر نظر آنا بند ہوگئے ،  اس طرح شام چھ بجے تک لوگوں نے پورے آرام و سکون کے ساتھ پولنگ میں حصہ لیا۔

اس بار بھٹکل کے مسلم اکثریتی  علاقوں میں گذشتہ انتخابات کے مقابلے میں کچھ زیادہ ہی جوش و خروش نظر آیا اور پولنگ بوتھوں میں لوگوں کی تعداد بھی کافی زیادہ نظر آئی۔ بھٹکل میں حزب مخالف جماعت کی جانب سے کانگریس کو جس طرح نشانہ بنایا گیا تھا اور سوشیل میڈیا میں  مسلمانوں کو دہشت گردوں سے جوڑنے کی جس طرح کی  کوششیں ہورہی تھی، اور کانگریس  اُمیدوار کو شکست دینے کے لئے جس طرح کے مسیجس عام کرکے غیر مسلم ووٹرں کو بی جے پی کے حق میں یکطرفہ پولنگ کرنے  اُکسایا جارہا تھا،  غالبا ً اُس کا اثر یہ ہوا کہ  مسلم پولنگ بوتھوں پر ووٹروں کی تعداد کافی زیادہ نظر آئی اور لوگوں نے انتخابات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ جن پولنگ بوتھوں میں گذشتہ انتخابات میں 35 اور 40 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی  تھی، اس بار وہاں 70 اور 80 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی۔ اس بار بالجملہ  مسلم پولنگ بوتھوں پر کم ازکم  70 فیصد  پولنگ درج کی گئی ہے۔

کانگریس اُمیدوار منکال وئیدیا نے تقریبا ساڑھے آٹھ بجے مرڈیشور حلقہ میں پہنچ کرعوام کے ساتھ قطار میں لگ کر   اپنی حق رائے دہی کا استعمال کیا تو  بی جے پی امیدوار سنیل نائک نے  شرالی حلقہ  پہنچ کر اپنے ووٹ کا استعمال کیا۔

کمٹہ ، ہوناور اور یلاپور میں  مشینوں میں خرابی

ضلع کے کمٹہ اسمبلی حلقہ کے حلدی پور کے ایک پولنگ بوتھ میں صبح  ووٹنگ کے دوران اچانک مشین خراب ہونے کی شکایت موصول ہوئی، جس کو دیکھتے ہوئے  نئی مشین نصب کرنے تک ووٹروں کو  کچھ دیر کے لئے انتظار کرنا پڑا۔  ہوناور تعلقہ کے موڈکنی کے قریب واقع سرکاری اسکول  کے  بوتھ نمبر 26 میں  ای وی ایم مشین  صحیح طور پر کام نہ کرنے کی وجہ سے  یہاں انتخابی عمل   ایک گھنٹہ تاخیر سے شروع کیا گیا۔البتہ بعد میں کسی بھی طرح کی کوئی رکائوٹ پیدا نہیں ہوئی۔ یلاپور اسمبلی حلقہ کے ایک پنک بوتھ (خواتین کے لئے مخصوص بوتھ)  میں بھی  مشین میں خرابی کی شکایت موصول ہوئی ، جس کی وجہ سے  یہاں بھی ایک گھنٹہ تک ووٹروں کو  قطار میں کھڑے رہنا پڑا۔ ایسی چھوٹی موٹی شکایتوں کو چھوڑ کر دیگر کسی بھی پولنگ بوتھ سے دوسری کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی۔

پولنگ بوتھوں میں پولس کے ساتھ ساتھ پیرا ملٹری فورسس کے جوان بھی پہرہ دیتے نظر آئے  اور کہیں سے بھی کسی بھی طرح کی کوئی گڑبڑی یا نا خوشگوار  واقعات کی اطلاع نہیں ملی۔

 

ایک نظر اس پر بھی

 قطر  حلقہ ادب اسلامی کے زیراہتمام ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی کی صدارت میں  نعتیہ اجلاس ومشاعرہ کا انعقاد

بڑی مسرت کی بات ہے کہ حلقہء ادب اسلامی۔قطر نے 8 نومبر 2018م کی شب اپنا سالانہ نعتیہ اجلاس ومشاعرہ  ادار ہ ادب اسلامی ہند کے کل ہند صدر  ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی کی صدارت میں منعقد کیا، موصوف محترم، حلقے کی خصوصی دعوت پر دوحہ قطر تشریف لائے ہوے تھے، اجلاس میں ڈاکٹر رضوان رفیقی فلاحی ...

دوحہ قطر میں ’جدید ادبی تحریکات و نظریات پر ایک نظر‘توسیعی خطبہ کا انعقاد : ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی    کا پرمغز خطاب

جدید ادبی تحریکات و نظریات پر ایک نظر، اس عنوان کے تحت مؤرخہ 10 نومبر 2018م سنیچر کی شام حلقہء ادب اسلامی قطر نے ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی صاحب کی ہندوستان سے آمد کی مناسبت سے استفادہ کرتے ہوئے ایک توسیعی خطبہ کا اہتمام کیا، ڈاکٹر صاحب حلقہ کے سالانہ نعتیہ اجلاس و مشاعرہ کی صدارت کے ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

گوا میں فارمولین کے بہانے بیرونی ریاستوں کی مچھلی پر پابندی : کیا  علاقائی تنگ نظری اور مقامی مفاد اہم وجہ ؟

ریاست گوا کی سرکار پڑوسی و بیرونی ریاستوں سے آنے والی مچھلیوں پر عائد کی گئی پابندی  کے نتیجےمیں گوا کے مچھلی شائقین  اور ہوٹل صنعت کاری بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ فی الحال گوا میں  مطلوبہ مچھلی  سپلائی نہیں ہونےکی وجہ سے مچھلی  کی قیمتیں آسمان کو چھور ہی ہیں ۔اس کے علاوہ گوا کو ...

کاروار: اننت کمار دوستانہ تعلقات کے مالک تھے: مرکزی وزیر کے انتقال پر ضلع نگراں کار وزیر دیش پانڈے کا تعزیتی پیغام

اترکنڑا ضلع نگراں کار وزیر آر وی دیش پانڈے نے مرکزی وزیر برائے کھاد اور پارلیمانی معاملات اننت کمار کے انتقال پر تعزیتی پیغام جاری کرتے ہوئے اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

بھٹکل انجمن اسلامیہ اینگلو اردو ہائی اسکول میں مولانا آزاد کے یوم پیدائش پر ’’یوم ِ تعلیم ‘‘ کا انعقاد  

امام الہند ،بھارت کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کے یوم پیدائش پر طلبا کو ان کی شخصیت سے متعارف کرانے اور وطن عزیز کی آزادی کے لئے ان کی طرف سے پیش کی گئی قربانیوں کو پیش کرنے کی غرض سے اسلامیہ اینگلو اردو ہائی اسکول بھٹکل میں مولانا آزاد لینگویج اینڈ لائبریری کلب کے ...