کرناٹک انتخابات:کرناٹک کے مفادات کے لئے کانگریس نے جے ڈی ایس کی حمایت کی:سرجےوالا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th May 2018, 11:18 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،15؍مئی (ایس او نیوز؍ایجنسی) کانگریس نے آج کہا کہ کرناٹک میں عوام کے مفاد میں نئی ​​حکومت کے قیام کے لئے اس نے جنتا دل (ایس) کی حمایت کی ہے اور اسے امید ہے کہ گورنر اس اتحاد کو حکومت بنانے کے مدعو کرے گا۔کانگریس کے میڈیا انچارج رنديپ سنگھ سرجےوالا نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں صحافیوں کو بتایا کہ کرناٹک اسمبلی انتخاب میں کانگریس اور جنتا دل ایس کو ملنے والی واضح اکثریت سے زیادہ سیٹیں ہیں لہذا گورنر کی انہیں حکومت کی تشکیل کے لئے بلانا آئینی ذمہ داری ہے۔ ان کے پاس کوئی اور متبادل نہیں ہے۔

سرجےوالا نے گوا، میگھالیہ اور منی پور میں انتخابات کے بعد کے واقعات کا ذکر کرتے ہوئے تین مواقع پر مرکزی وزیر ارون جیٹلی کے بیانات کا حوالہ دیا جس میں انہوں نے ووٹنگ بعد سب سے بڑے اتحاد کو حکومت بنانے کے لئے مدعو کرنے کو صحیح ٹھہرایا تھا۔

انہوں نے کہا کہ تین ریاستوں میں، سب سے بڑے اتحاد، جو انتخابات کے بعد قائم کیا گیا تھا۔ حکومت بنانے کے لئے مدعو کیا گیا تھا اور اسی کی حکومت بنی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ تمام تین ریاستوں میں بی جے پی نے انتخابات کے بعد دیگر جماعتوں کے ساتھ اتحاد قائم کیا ہے۔ کانگریسی رہنما نے کہا کہ اسی طرح کرناٹک میں کانگریس - جے ڈی ایس کو حکومت بنانے کے لئے مدعو کیا جانا چاہئے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

بی جے پی کے والک آوٹ اور کافی ہنگامہ آرائی کے درمیان کرناٹکا کے وزیراعلیٰ کماراسوامی نے اپنی اکثریت ثابت کرتے ہوئے فلور ٹیسٹ میں پائی کامیابی

کرناٹک ودھان سبھا میں فلورٹیسٹ کے دوران  کافی ہنگامہ آرائی اور بی جے پی اراکین کے والک آوٹ کے درمیان  کرناٹک کے نو منتخب وزیراعلیٰ کماراسوامی نے  فلور ٹیسٹ میں اپنی اکثریت ثابت کردی۔  کانگریس۔جے ڈی ایس گٹھ بندھن کو 117 ووٹ پڑے۔اس کے ساتھ ہی اب کرناٹک میں سیاسی ڈرامے بازی ...

گوا میں اتحادی جز گووا فارورڈ پارٹی کی دھمکی

بی جے پی کی قیادت والی گووا حکومت کا ایک جز گووا فارورڈ پارٹی نے آج کہا ہے کہ اگر ریاست میں جاری موجودہ کان کنی کے بحران کا حل نہیں ہوا تو وہ اگلے لوک سبھا انتخابات میں زعفرانی پارٹی کی حمایت نہیں کرے گی۔

ساحلی کینرا میں کچھ لمحوں کے لئے بادلوں کی گرج کے ساتھ بارش؛ کمٹہ میں بجلی گرنے سے ایک مکان منہدم؛ تین شدید زخمی

کل شام کو کچھ دیر کے لئے ہوئی بادلوں کی گرج کے درمیان زوردار بارش سے ساحلی کینرا میں گرمی کا زور ٹوٹ گیا ہے اور لوگوں نے گرمی سے نجات ملنے پر راحت کی سانس لی ہے، البتہ  کمٹہ تعلقہ کے  برگی دیہات میں بجلی گرنے سے ایک مکان  کو شدید نقصان پہنچا ہے اور دیواریں گرنے سے گھر کے اندر ...

کیرالا میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا

کیرالا کی وزیر صحت کے کے شیلجہ نے آج کہا کہ ریاست میں نیپاہ وائرس پر قابو پالیا گیا ہے، جس نے 10 افراد کی جان لی ہے اور دہشت زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ کوزی کوڈ میڈیکل کالج ہاسپٹل میں 17 افراد زیرعلاج ہیں۔

مینگلوراسپتال میں ایڈمٹ بھٹکل کے ایک مریض کے لئے مالی تعائون کی درخواست

رکشہ چلا کر اپنا اور اپنے خاندان کو سنبھالنے والا ساجد احمد ابن شریف اس وقت مینگلور کے ایک پرائیویٹ اسپتال کے انتہائی نگہداشت والے کمرے میں  ایڈمٹ ہے، جہاں اُس کے جسم کا ایک حصہ ناکارہ ہوگیا ہے۔ ڈاکٹروں کی صلاح پر ایک آپریشن ہوچکا ہے، مزید علاج درکار ہے۔ آپریشن کا خرچ قریب ...