کرناٹک میں ہندوتوا کا جادو چل گیا؛ بی جے پی کو اقتدار سے دور رکھنے کانگریس نے کماراسوامی کو کی وزیراعلیٰ بننے کی پیش کش؛ شام کو گورنر سے ملاقات کا عندیہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th May 2018, 3:46 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بھٹکل 15/مئی (ایس اونیوز) کرناٹک میں وزیراعلیٰ سدرامیا نے کافی ترقیاتی کام کئے تھے، مگر ہندوتوا کے نام پر بھگوا پارٹی اکثریتی عوام کو تقسیم کرنے اور اُنہیں  اپنے قریب کرتے ہوئے  اُن کے ووٹ حاصل کرنے میں پوری طرح کامیاب ہوگئی ہے۔

ابتدائی رحجانات سے ہی پتہ چل رہا تھاکہ بی جے پی تقریبا سو سےزائد اسمبلی حلقوں میں آگے چل رہی ہے، جس سے لگ رہا تھا کہ وہ سوسے زائد سیٹیں حاصل کرتےہوئے اقتدار تک حاصل کرنے میں کامیاب ہوجائے گی، مگر  بی جے پی بھلے ہی   سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ہو،  اکثریت کو لے کر  اس کی گردن کہیں پھنستی نظر آرہی ہے۔  ایسے میں حکومت کو تشکیل دینے کے لۓ اسے کسی دوسری پارٹی  کا گٹھ بندھن ضروری ہوگیا ہے۔ مگر ان سب کے درمیان  خبریں آرہی ہیں کہ  کانگریس پارٹی نے بی جے پی کو  اقتدار سے دور رکھنے کےلئے جے ڈی ایس کے سربراہ کماراسوامی کو وزیراعلیٰ کے عہدہ کی پیش کش کی ہے اور جے ڈی ایس کی حمایت حاصل کرتے ہوئے بی جے پی کو اقتدار سے باہر کرنے  کی حکمت عملی پر غور کیا جارہاہے.

بی جے پی نے جیسے ہی  سو کے ہندسے کو پار کیا،  بنگلور سے لے کر دہلی تک  پارٹی کارکنان  جشن میں مشغول ہوگئے، جملہ 222 سیٹوں میں کانگریس کو 78 سیٹیں حاصل ہوئی ہیں، بی جے پی کو 104 اور جے ڈی ایس کو 38سیٹوں پر کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ دو دیگر اُمیدار بھی انتخابات میں کامیاب ہوئے ہیں۔

کرناٹک انتخابات کے نتائج نے   کانگریس کے صدر راہول گاندھی کو بھی  بڑا  جھٹکا دیا ہے، ان کی حکمت عملی ایک بار پھر ناکام ہوگئی ہے. حالانکہ بتایا   جارہا ہے  کہ   کانگریس بڑی پارٹی اکثریت حاصل نہ کرپانے کے بائوجود   حکومت تشکیل دینے  نئی حکمت عملی پر کام کر رہی ہے. لیکن اگر ایسا  نہیں ہوتا ہے تو کانگریس پارٹی  صرف   پنجاب، پڈوچیری اور میزورم میں محدود ہو کر رہ جائے گی۔

حیرت کی بات یہ ہے کہ وزیراعلیٰ سدرامیا  بھی خود چامنڈیشوری  سیٹ سے انتخابات  ہار گئے  ہیں. مگر بادامی میں انہیں دو ہزار ووٹوں سے جیت حاصل ہوئی ہے، جس سے انہیں تھوڑی بہت راحت ملی ہے۔ اسی طرح  ان کے بیٹے یتیندرانے ورون  اسمبلی حلقہ  سے جیت حاصل کی ہے.

اب خبریں آرہی ہیں کہ  وزیراعلیٰ   کی رہائش گاہ پر سدارمیا اور کانگریس کے رہنماؤں کے درمیان میٹنگ جاری ہے، کماراسوامی نے وزیراعلیٰ بننے کی پیش کش کو قبول کرلیا ہے ایسے میں ایک دلت لیڈر کو وزیراعلیٰ بنانے کی بات بھی چل رہی ہے۔ شام تک مطلع صاف ہونے کے آثار ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

22نومبر کووزیر اعظم نریندرمودی کے ہاتھوں رکھا جائے گا ’سٹی گیس ‘ کا سنگ بنیاد۔ منصوبے میں منگلورو شہر بھی شامل

مرکزی حکومت کی اسکیم’سٹی گیس‘ کا سنگ بنیاد وزیر اعظم نریندر مودی ہاتھوں22نومبر کو شام 4بجے نئی دہلی کے وگیان بھون میں رکھا جائے گا۔ اس منصوبے کے تحت آئندہ رسوئی گیس سلینڈروں کے بجائے براہ راست پائپ کنکشن کے ذریعے گھر گھر پہنچائی جائے گی۔

موجودہ بیماریوں کا علاج طب یونانی کے ذریعہ ممکن: یونانی ڈاکٹروں کے اجلاس میں یونانی طریقہ علاج پرزور

موجودہ بیماریوں کا علاج طب یونانی کے ذریعہ ممکن ہے۔ یونانی ڈاکٹر، یونانی طریقہ علاج میں ہی پریکٹس کریں اورطب یونانی کے ذریعہ سماج اورمعاشرے کوصحت مند بنائیں۔ ان خیالات کا اظہار یہاں بنگلورو میں یونانی ڈاکٹرس کے اجلاس میں کیا گیا۔ ساتھ ہی یونانی طریقہ علاج پربھی زوردیا گیا۔

ودھان سودھا میں میڈیا کے داخلے پر پابندی سے قریب ایک اور قدم، محکمۂ اطلاعات میں سرکاری میڈیا سنٹر کا قیام

ریاست کے مرکز اقدار ودھان سودھا میں صحافیوں کے داخلے پر پابندی لگانے پر بضد وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے آج ایک بار پھر یہ بات دہرائی کہ شہر کے محکمۂ اطلاعات کے دفتر میں قائم مہاتما گاندھی میڈیا سنٹر کا استعمال صحافی اپنی سرگرمیوں کے لئے کرسکتے ہیں۔

22نومبر کووزیر اعظم نریندرمودی کے ہاتھوں رکھا جائے گا ’سٹی گیس ‘ کا سنگ بنیاد۔ منصوبے میں منگلورو شہر بھی شامل

مرکزی حکومت کی اسکیم’سٹی گیس‘ کا سنگ بنیاد وزیر اعظم نریندر مودی ہاتھوں22نومبر کو شام 4بجے نئی دہلی کے وگیان بھون میں رکھا جائے گا۔ اس منصوبے کے تحت آئندہ رسوئی گیس سلینڈروں کے بجائے براہ راست پائپ کنکشن کے ذریعے گھر گھر پہنچائی جائے گی۔

پورے ملک میں جوش وخروش کے ساتھ منایا جارہا ہے جشن عید میلاد النبیؐ

آج یعنی 21 نومبر کو عید میلاد النبی کا تیوہار منایا جارہا ہے۔ مسلمانوں کے لئے یہ دن بے حد خاص ہوتا ہے۔ مسلمان اسے تیوہارکے طورپرمناتے ہیں۔ عید میلاد النبی پیغمبرحضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی یوم ولادت کے طورپرمنایا جاتا ہے۔ مسلمان آخری نبی حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیم وسلم ...

سکھ فسادات 1984: یشپال سنگھ کوسزائے موت اورنریش کوعمرقید کی سزا

سکھ فسادات 1984 معاملے میں پٹیالہ ہاوس کورٹ نے ایک قصوروارکو عمرقید کی سزا سنائی تودوسرے ملزم کو پھانسی کی سزا سنائی۔ اس معاملے میں قصورواریشپال کوپھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔ عدالت نے دونوں قصورواروں پر35-35 لاکھ کا جرمانہ بھی عائد کیا ہے۔ 1984 کے سکھ فسادات میں سزائے موت سنائے ...

کانگریس کوغرورہے، 2019 میں نہیں ہوگا اتحاد: اکھلیش یادونے دیا کانگریس کوزبردست جھٹکا

 سماجوادی پارٹی کے قومی صدراکھلیش یادو نے 2019 کے عام انتخابات میں کانگریس سے دوری بنانے کا اشارہ دیا ہے۔ انہوں نے اشارہ دیا کہ 2019 میں سماجوادی پارٹی کا کانگریس کے ساتھ کوئی اتحاد نہیں ہونے جارہا ہے۔ مدھیہ پردیش میں نیوز 18 سے بات کرتے ہوئے اکھلیش نے کہا کہ کانگریس کو بڑی پارٹی ...

چھٹیس گڑھ : زبردست سیکورٹی کے درمیان دوسرے اورآخری مرحلے میں 72 فیصد سے زائد ووٹنگ

زبردست سیکورٹی بندوبست کے درمیان چھتیس گڑھ میں دوسرے اور آخری مرحلے کی 72 اسمبلی سیٹوں پر آج پرامن ووٹنگ ہو گئی۔ اب تک موصولہ اطلاع کے مطابق 72 فیصد سے زیادہ ووٹروں نے اپنے ووٹ کے حق استعمال کیا۔

سابق مرکزی وزیرسی پی جوشی کا بڑا بیان، کانگریس کا وزیراعظم ہی تعمیرکرائے گا رام مندر

کانگریس کے سینئر لیڈر اورسابق مرکزی وزیر ڈاکٹرسی پی جوشی نے بی جے پی پررام مندرکے موضوع پرسیاست کرنے کا الزام لگاتے ہوئے بڑا بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کوالیکشن آتے ہی رام یاد آنے لگتے ہیں۔ ابھی اس کے ٹائٹل کا تنازعہ سپریم کورٹ میں زیرغورہے۔