ریاستی پولیس میں خواتین کی تعداد 20فیصد تک بڑھانے پر غور: پرمیشور

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th September 2018, 10:03 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍ستمبر(ایس او نیوز) نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے کہا ہے کہ ریاستی پولیس میں خواتین کی تعداد کو 20فیصد تک بڑھانے پر غور کیا جارہاہے۔ٹمکور میں 120 ویمنس پولیس ٹرینس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ میں حصہ لیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حالیہ چند برسوں میں محکمۂ پولیس میں خواتین کی بھرتیوں کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں برسر خدمت 250آئی پی ایس افسروں میں 20خواتین ہیں۔ پولیس کانسٹبلوں کی مجموعی تعداد میں6 فیصد خواتین ہیں۔ ریاستی حکومت کا منصوبہ ہے کہ اس اوسط کو بڑھاکر 20فیصد تک لے جایا جائے۔

انہوں نے کہاکہ تعلیم یافتہ نوجوانوں کے محکمۂ پولیس کی طرف رغبت کا رجحان خوش آئند ہے، اگر تعلیم یافتہ نوجوان اس محکمے میں شامل ہونے پر توجہ دیں گے تو اس سے پولیس فورس کے معیار کو بھی بلند کرنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہاکہ آج پاس ہونے والی 121ٹرینس میں 16 پوسٹ گریجویٹ ہیں اور 96 گریجویٹ ، محکمے کے لئے اس سے خوش آئند بات اور کیا ہوسکتی ہے۔ وزیر داخلہ نے بتایاکہ پولیس جوانوں کے لئے رہائش کی بہتر سہولت مہیاکرانے پر محکمہ پابندی سے کام کررہا ہے۔ ریاست کے مختلف تعلقہ جات میں 250 کوارٹروں پر مشتمل رہائشی کامپلکس کی تعمیر یقینی بنائی جائے گی۔

ریاستی پولیس فورس میں شامل جوانوں کی تنخواہ میں اضافے کے مطالبے پر وزیر داخلہ نے کہاکہ اس سلسلے میں ایک تجویز چھٹویں پے کمیشن کو روانہ کردی گئی ہے۔ اس تجویز کو منظور کئے جانے کے ساتھ ہی تنخواہوں میں اضافہ از خود لاگو کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ تنخواہوں میں اضافے کے ساتھ چھٹویں پے کمیشن کی طرف سے وضع کردہ تمام سہولتیں بھی پولیس جوانوں اور افسروں کو مہیا کرانے کے لئے ضروری قدم اٹھائے جائیں گے۔ ریاستی حکومت کی طرف سے دیگر سرکاری شعبوں کے ملازمین کو چھٹویں پے کمیشن کے تحت جو بھی سہولت مہیا کرائی جارہی ہے وہ تمام پولیس فورس کے لئے بھی روبہ عمل لائے جائیں گے۔

ریاست بھر میں آئے دن سڑک حادثوں اور دن بدن ان کی تعداد میں اضافے کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ حکومت ایسے علاقوں کی نشاندہی کرے گی جو حادثوں کا مرکز رہے ہیں۔ ان علاقوں میں گاڑیوں کی رفتار کو 35 کلومیٹر تک محدود کیا جائے گا۔ان سڑ کوں پر ہائی وے پیٹرولنگ بڑھادی جائے گی تاکہ شاہراہوں پر تیز رفتار گاڑی چلانے والوں کو پکڑ کر ان کے خلاف کارروائی کی جاسکے۔انہوں نے کہاکہ ریاست بھر میں بھڑتے ہوئے سڑک حادثوں پر روک لگانے کے مقصد سے شاہراہوں پر پولیس گشت میں اضافہ کیا جائے گا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ہائی کمان کہے تو وزارت چھوڑ نے کیلئے بھی تیار : ڈی کے شیو کمار

ریاست میں سیاسی گہما گہمی کا فی تیز ہونے لگی ہے ۔ ایک طرف جہاں کانگریس اور جنتادل( سکیولر) اپنی مخلوط حکومت کو بچانے میں لگے ہیں وہیں بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) نے آپریشن کنول کے ذریعہ دیگر پارٹیوں کے اراکین اسمبلی کو خریدکر برسر اقتدار آنے کے حربے جاری رکھے ہیں۔

ریسارٹ میں اراکین اسمبلی کی تگڑم بازی پر سدارامیا کی برہمی جھگڑے نے ریاست کے 224ایم ایل ایز کوشرمندہ کردیا ہے :یڈیورپا

کانگریس کے اراکین اسمبلی آنند سنگھ ،گنیش اور بھیمانائک کے درمیان ہوئے جھگڑے کے دوران آنند سنگھ زخمی ہوکر شہر کے شیشادری پورم میں واقع اپولو اسپتال میں زیرعلاج ہیں۔

ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار اسوامی کا مرکزی حکومت سے تقاضہ

شیموگہ، شرنگیری، منگلورو جیسے علاقوں سے گزرنے والی ملیناڈو کراولی ریلوے لائن منصوبے پر جلد عمل درآمد کے لئے ریاستی وزیر اعلیٰ کمار ا سوامی نے مرکزی حکومت سے تقاضہ کیا ہے۔

کرناٹک میں ناٹک جاری: یڈی یورپانے بی جے پی ممبران کو بلایا واپس

کرناٹک کے سیاسی ڈرامہ میں ایک نیا موڑآگیا ہے۔ریاست میں سیاسی بحران کے درمیان بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس یدی یرپپا نے بی جے پی پارٹی کے تمام ایم ایل اے کو واپس بلایا۔کرناٹک میں ممبران اسمبلی کی خریدو فروخت کی خبروں کے درمیان ان بی جے پی ممبران اسمبلی کو قومی دارالحکومت سے ...