ریاست میں سیلاب کی تباہی سے نپٹنے امداد کا مطالبہ، کمار سوامی کی قیادت میں ریاستی وفد کی مودی سے ملاقات

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:11 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس اونیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی قیادت میں آج ریاست کے ایک وفد نے وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کی اور ریاست میں بارش اور سیلاب کی تباہی سے نپٹنے کے لئے فوری طور پر 1199 کروڑ روپیوں کی رقم جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس وفد نے جس میں سابق وزیراعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا، نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور، وزیر مالگزاری آر وی دیش پانڈے، وزیر دیہی ترقیات کرشنابائرے گوڈا، وزیر تعمیرات عامہ ایچ ڈی ریونا اور وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار شامل تھے۔

وزیراعظم کوسیلاب کی تباہی کے متعلق تفصیلی معلومات فراہم کیں اور بتایاکہ طوفانی بارش اور سیلاب کی وجہ سے ریاست میں کس حد تک تباہی مچی ہوئی ہے، اور متاثرین کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے اب تک کیا قدم اٹھائے گئے ہیں۔ وزیراعظم کو بتایاگیا کہ ریاست کے 30 میں سے 17 اضلاع میں خشک سالی جیسی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ حالانکہ اس وفد کے ساتھ شامل ہونے کے لئے ریاستی بی جے پی قائدین کو بھی مدعو کیاگیا تھا لیکن ان تمام نے وفد میں شامل نہ ہونے کا فیصلہ کیا۔ وزیراعظم سے ملاقات کے بعد وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بتایاکہ ریاست کے ساحلی اور ملناڈ علاقوں پر مشتمل سات اضلاع میں طوفانی بارش اور سیلاب کے ساتھ زمین کھسکنے کے واقعات کی وجہ سے بھاری جانی ومالی نقصان ہوا ہے، ہزاروں کی تعداد میں لوگ بے گھر ہوئے ہیں اور ہزاروں ایکڑ زمین پر کھڑی فصلیں تباہ ہوچکی ہیں۔ ان اضلاع کا بنیادی ڈھانچہ سیلاب کی وجہ سے تقریباً ختم ہوچکا ہے۔ان تمام کی بحالی کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے جدوجہد کی جارہی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ سیلاب اور زمین کھسکنے کے واقعات کی وجہ سے ریاست کو مجموعی طور پر 3705 کروڑ روپیوں کا نقصان ہوا ہے۔

انہوں نے کہاکہ حکومت کی طرف سے ہنگامی طور پر ریاستی آفات رسپانس فنڈ سے 49کروڑ روپیوں کے ساتھ ریاست کے ریلیف فنڈ سے دو سو کروڑ روپے متاثرہ اضلاع کو فراہم کئے گئے ہیں۔ اس سے پہلے وزیراعلیٰ نے حال ہی میں وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ سے ملاقات کرکے ریاست میں سیلاب اور طوفانی بارشوں سے مچی تباہی کے بارے میں معلومات فراہم کی تھیں اور مرکزی ٹیم روانہ کرنے کی بھی گزارش کی تھی۔ وزیر اعلیٰ نے بتایا کہ ریاست کے جن اضلاع میں سیلاب سے تباہی مچی وہاں راحت کاری کے لئے قدم اٹھائے جارہے ہیں تو بقیہ 17 اضلاع میں خشک سالی جیسی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ اس موقع پر موجود وزیر مالگزاری آر وی دیش پانڈے نے بتایاکہ شمالی اور اندرونی کرناٹک کے حصوں میں آنے والے 17 اضلاع خشک سالی سے متاثر ہوچکے ہیں ان علاقوں میں پانی اور چارے کی قلت سے نپٹنے کے لئے ضروری قدم اٹھائے گئے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ان اضلاع میں آنے والے تمام تعلقہ جات کو خشک سالی سے متاثرہ قرار دینے کے سلسلے میں جلد فیصلہ لیا جائے گا۔ کل اس سلسلے میں ریاستی کابینہ کی ذیلی کمیٹی میٹنگ ہوگی، جس میں حالات کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد خشک سالی سے نپٹنے کے لئے مرکزی حکومت سے امداد کی مانگ کے لئے میمورنڈم تیار کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ خشک سالی سے متاثرہ اضلاع میں 8؍ ہزار کروڑ روپیوں کی فصلوں کا نقصان ہوا ہے۔ انہوں نے بتایاکہ ریاست میں جملہ 74.69 لاکھ ہیکٹر زمین پر خریف بوئی گئی تھی اس میں سے 62.88 لاکھ ہیکٹر زمین پر کاشتکاری بارش کی کمی کے سبب نہ ہوسکی۔

مسٹر دیش پانڈے نے بتایاکہ ریاست کو اس بار دو الگ الگ قسم کی صورتحال کا سامنا کرنا پڑا ہے، آدھی ریاست پانی کی کثرت سے تباہ ہوئی ہے تو آدھی ریاست پانی کی قلت سے بدحال ہے۔اگست کے دوسرے ہفتے کے دوران ریاست کے جنوبی اور ساحلی علاقوں میں جو بارش ہوئی ہے وہ محکمۂ موسمیات کے ریکارڈ کے مطابق گزشتہ 118 سال کی سب سے بڑی بارش ہے۔ اس وجہ سے ان علاقوں کے آبی ذخائر نہ صرف پر ہوئے بلکہ افزود باہر کی طرف بہانا پڑا۔ ایسی صورتحال اب تک پیدا نہیں ہوئی تھی۔بارش کی کثرت کے سبب ان علاقوں میں زرعی سرگرمیاں متاثر ہوئی ہیں۔خاص طور پر زمین کھسکنے کے واقعات کی وجہ سے ملناڈ علاقہ جو ریاست کا زر خیز علاقہ مانا جاتا ہے پوری طرح تباہ ہوچکا ہے، زمین کھسکنے کی وجہ سے یہاں اب کاشتکاری کے لئے زمین مہیا نہیں ہے۔

کورگ میں کافی کی فصلوں کی تباہی کے سبب ملک میں سب سے زیادہ کافی کی کاشت کرنے والا علاقہ تاراج ہوچکا ہے، کورگ میں اگائی جانے والی کافی کا 90فیصد حصہ ایکسپورٹ ہوتاہے، لیکن اس بار ضلع میں 95 فیصد سے زیادہ کافی کی فصل ختم ہوچکی ہے۔طوفانی بارش اور سیلاب کی وجہ سے تین قومی شاہراہیں 275 ، 75،اور 234 کورگ کی طرف متاثر ہوئی ہیں تو میسور ضلع میں کیرلا کی طرف جانے والی212بھی متاثر ہوئی ہے۔ان شاہراہوں پر آنے والے گھاٹ سیکشن میں زمین کھسکنے کی وجہ سے گھاٹ کی کئی سڑکیں غائب ہوچکی ہیں، ان کو جنگی پیمانے پر بحال کیا جارہاہے۔ حکومت نے مطالبہ کیا ہے کہ اس صورتحال سے نپٹنے کے لئے مرکزی حکومت فوراً مداخلت کرے۔

دوسری طرف ریاست کے 17 اضلاع خشک سالی کی لپیٹ میں آچکے ہیں۔ ریاست کے جملہ 176تعلقہ جات میں سے صرف 23ایسے تعلقہ جات ہیں جہاں پربارش معمول سے زیادہ ہوئی ہے۔64 تعلقہ جات میں بارش معمول کے مطابق ہوئی ہے اور89 تعلقہ جات میں بارش معمول کے مقابل کافی کم ہوئی ہے۔ 2؍ ستمبر کی رپورٹ کے مطابق ریاست کے 104تعلقہ جات میں گزشتہ تین ہفتوں سے بارش نہ ہونے کے سبب خشک سالی کی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ابتدائی اندازے کے مطابق 15لاکھ ہیکٹر زمین پر زراعت اور باغبانی متاثر ہوئی ہے، اس سے ہونے والا خسارہ آٹھ ہزار کروڑ روپیوں سے متجاوز ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہانگل کے ہیرور میں ہوئے تشدد کے واقعات اور غریب مسلمانوں کی گرفتاریوں کے بعد اے پی سی آر ٹیم نے کیا ہانگل دورہ؛ ایس پی سے کی ملاقات

ضلع ہاویری کے ہانگل تعلقہ کے ہیرور میں گنیش تہوار کے دوران ہوئے تشدد کے واقعات کے بعد  کئی غریب مسلمانوں کی گرفتاریوں نیز کئی مسلمانوں کے  تشدد میں زخمی ہونے  کی اطلاعات کے بعد  اے پی سی آر (اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس) کی ایک ٹیم  ہانگل پہنچی اور متاثرہ علاقہ کا ...

کیا یلاپور کے رکن اسمبلی ہیبار کودی جائے گی وزارت ؟ کیا دیش پانڈے کو ملے گا لوک سبھا کاٹکٹ ؟ ضلع کی سیات میں ہورہی ہے زبردست ہلچل

یلاپور کے کانگریس رکن اسمبلی شیورام ہیبار وزارت کے لئے شروع کی گئی کسرت کے نتیجے میں ضلع کی سیاست میں ہلچل پیدا ہوگئی ہے۔ دوسری مرتبہ رکن اسمبلی کے طورپر منتخب ہونے والے شیورام ہیبار ، وزارت کے لئے بضد معلوم ہوتےہیں۔ انہیں مطمئن کرنے کےلئے کانگریس کے سنئیر وزیر دیش پانڈے کو ...

مسلم نمائیندگی کے فروغ کے لئے مسلم پولیٹیکل فورم کے عہدیداران کا کئی علاقوں کا دورہ

 حیدر آباد کرناٹک مسلم پولیٹیکل فورم کے عہدہ داران مسرز اسد علی انصاری، افضال محمود، معراج کلیان والا اور علیم احمد پر مشتمل ایک وفد نے اس پولیٹیکل فورم کی ضلعی شاخوں کی تشکیل کے لئے 14ستمبر تا 16ستمبر علاقہ حید آباد کرناٹک کے تمام اضلاع کا دورہ کیا ۔14ستمبر کو بیدر میں پولیٹیکل ...

فیڈ ریشن آف کر نا ٹکا مسلم آر گنا ئز یشن رجسٹرڈ چنگیری داونگرے وکر نا ٹکا اردو چلڈرنس اکا دمی شکا ری پو ر کر نا ٹک کا مشتر کہ مشا ورتی اجلاس 

بر وز بد ھ بتا ریخ ۱۹ ستمبر ۲۰۱۸ ؁ کو فیڈ ریشن آف کر نا ٹکا مسلم آرگنا ئز یشن چنگیری داونگرے اور کر نا ٹکا اردو چلڈرنس اکا دمی نے مشتر کہ مشا ورتی اجلا س منعقد کیا ۔ اس اجلا س میں اس با ت پر خاص تو جہ دی گئی کہ ادب اطفال کے فر وغ اور اردو زبان کی تعلیم کے استحکام اور اردو اسکولوں میں ...

تحریک ادب اسلامی کے عظیم المرتبت شاعر جناب ڈاکٹر محمد حسین فطرتؔ کا انتقال پرملال تحریر: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

دنیائے اردو ادب میں اسلامی افکار و تصورات کی ترویج و اشاعت کے لئے سرگرم قافلۂ ادب اسلامی کے عظیم المرتبت شاعر و ادیب جناب ڈاکٹر محمد حسین فطرتؔ بھٹکلی نے کچھ عرصے تک ضعف و پیرانہ سالی سے متعلقہ علالت کا شکار رہنے کے بعد 84سال کی عمر میں آج داعئ اجل کو لبیک کہا۔ بعد نماز ظہر جامعہ ...

ہانگل کے ہیرور میں گنیش تہوار کے دوران مسجدپر پتھرائو کے بعدپولس لاٹھی چارج؛ گھروں میں گھس کر خواتین پرحملہ کئے جانے کا الزام

پڑوسی ضلع  ہاویری کے ہیرور میں گنیش تہوار کے موقع پر پتھراو اور پولس لاٹھی چارج کے بعد پولس پر الزامات لگائے جارہے ہیں کہ پولس نے گھروں میں گھس کر خواتین  کی بری طرح پیٹائی کی  ہے اور ۱۵ لوگوں کو گرفتار بھی کیا  ہے، اس تعلق سے سوشیل میڈیا پر زخمی مسلمانوں کے فوٹوز وائرل ہورہے ...

کئی مہینوں تک 5 ویں کلاس کی طالبہ کی عصمت دری؛ پرنسپل اور ٹیچر کررہے تھے ریپ، حاملہ ہونے پر ہوا انکشاف؛ پولس کے بھی اُڑ گئے ہوش

پٹنہ پولس نے ایک نجی اسکول کے پرنسپل اور ایک ٹیچر کو ایک گیارہ سالہ لڑکی کی کئی مہینوں سے عصمت دری کرنے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے جن کے تعلق سے بتایا گیا ہے کہ پرنسپل اور ٹیچر پانچویں کلاس کی طالبہ کو  بلیک میل کرتے ہوئے بار بار اُس کا ریپ کررہے تھے۔

تین طلاق پر حکومت کی آرڈیننس قابل مذمت مسلمانوں کو محکوم بنانے کی کوشش ۔ ایس ڈی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI)نے مرکزی کابینہ کی جانب سے تین طلاق پر آر ڈیننس کومنظوری دیئے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے ملک کے مسلمانوں کو محکوم بنانے کی ناکام کوشش قرار دیا ہے۔آرڈیننس کے نفاذ سے تین طلاق ایک غیر ضمانتی جرم مانا جائے گا اور کم از کم تین سال کی جیل کی سزا ...

رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر راہول گاندھی نے کیا وزیر دفاع سے استعفیٰ کا مطالبہ

کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر لگا تار جھو ٹ بولنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے جھوٹ کی پول کھلتی جا رہی ہے اس لئے اب وہ اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں۔

جیٹ ایئرویز کے سیفٹی آڈٹ کا حکم، پائلٹ صاحب  ہوا کا دباو کم کرنے والا سوئچ آن کرنا ہی بھول گئے

جیٹ ائیرویز کے طیارہ میں پائلٹ ٹیم کی غلطی کی وجہ سے مسافروں کی طبیعت بگڑنے کے معاملہ میں شہری ہوابازی کی وزارت نے ڈی جی سی اے کو ایئر لائن کا سیفٹی آڈٹ کرنے کا حکم دیا ہے۔ شہری ہوابازی کے وزیر سریش پربھو نے اس معاملہ میں جانچ کی ہدایت بھی دی ہے۔

تین طلاق پر آرڈیننس لانامودی حکومت کی ہٹ دھرمی اورمسلم خواتین کو گمراہ کرنے کی مذموم کوشش:مولانا اسرارالحق قاسمی

معروف عالم دین وممبر پارلیمنٹ مولانا اسرارالحق قاسمی نے تین طلاق پرمودی حکومت کے آرڈیننس لانے کے اقدام کوقطعی نامناسب اور ضدو ہٹ دھرمی پر مبنی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کو موقر ایوان اور دستور کی کوئی پروانہیں ہے اور وہ آئندہ عام انتخابات کے پیش نظر مسلم خواتین کو گمراہ ...