چامراج نگر زہریلے پرسادسے ہلاکتوں کا معاملہ: گروہی مفاد پرستی نے لی 15بے قصوروں کی جان۔ مندر کے پجاری نے دی تھی سپاری !

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th December 2018, 7:43 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بنگلورو19؍دسمبر (ایس او نیوز) چامراج نگر کے سولواڈی گاؤں میں مندر کا زہریلا پرساد کھانے کے بعد ہونے والی15بھکتوں کی ہلاکتوں کے پیچھے اسی مندر کے چیف پجاری کی سازش کا خلاصہ سامنے آیا ہے۔

پولیس کے بیان کے مطابق اس معاملے گرفتار کیے گئے ایک چھوٹے مندر کے پجاری ڈوڈیّا نے پوری سازش پر سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ مندر کے انتظامات کو لے کر چل رہی گروہی جنگ کی وجہ سے اپنے مخالف گروہ کو بدنام کرنے کے لئے مندر کے چیف پجاری ہیمّاڈی مہا دیوا سوامی نے اسے رقم کے بدلے پرساد میں زہر ملانے کا کام سونپا تھا۔

مندر کی آمدنی میں خرد برد: اس سازش کے تار دراصل مندر میں بڑھتی ہوئی آمدنی سے جاملتے ہیں جس پرسولواڈی کُچو مارمّا مندر کے ٹرسٹ میں آپسی رسّہ کشی شروع ہوگئی تھی اور چیف پجاری کے حامیوں اور اس کی مخالفت کرنے والوں کے دو گروہ بن گئے تھے اور دونوں مندر کے مالیات سمیت تمام انتظامی معاملات میں اپنے گروہ کو حاوی دیکھنا چاہتے تھے۔ مخالف گروہ کا الزام تھا کہ سالور مٹھ کے ہیماڈی مہادیوا سوامی چامراج نگر کے اس مندر ٹرسٹ کے ذمہ دار کی حیثیت سے مندر کی آمدنی میں خرد برد کرنے لگے ہیں اور مندر کو عطیہ میں ملنے والے سونے کے زیورات وغیرہ خود اٹھاکر لے جارہے ہیں۔ اس پر ٹرسٹ کے دیگر اراکین نے اعتراض کیا اور حساب وکتاب کو باقاعدہ ریکارڈ میں رکھنے کا مشورہ دیا۔ اس وجہ سے مہادیوا سوامی کا ایک گروہ بناجس میں ان کے خاص ساتھی وی مہادیّااور مندر منیجر مادیش شامل تھے۔ جبکہ دوسرا گروپ مندر کے خزانچی نیل کنٹا شیواچاریہ، اسسٹنٹ منیجر گروملّپا ،سیکریٹری ششی بیمبا، ٹرسٹ کے اراکین چینپی ، پی شیونّا، ایچ لوکیش اور کیشو مورتھی پر مشتمل تھا۔چینپّی نے مندر کے حساب وکتاب کی جانچ پڑتال شروع کی تو ہیماڈی مہادیو ا سوامی کو یہ بات ہضم نہیں ہوئی۔

گنبد کی تعمیر کا ٹھیکہ : امسال اکتوبر میں مہادیوا سوامی نے اپنے قریبی شخص کو مندر کے لئے ایک نیا گنبد بنانے کا ٹھیکہ دیا جس کی لاگت 1.5کروڑ روپے تھی۔جب یہ بات ٹرسٹ کے دیگر اراکین کو معلوم ہوئی تو انہوں نے اس سے اختلاف کیا ۔ کیونکہ مندر کے پاس صرف34لاکھ روپے تھے اور 1.5کروڑ روپے خرچ کرنے کا منصوبہ بنایا گیا تھا۔ چینپی اور اس کے گروہ کے ٹرسٹیوں نے دسمبر میں اسی کام کے لئے کم لاگت والا ٹھیکہ دوسرے شخص کو دے دیا اور گنبد کی تعمیر کا آغاز کرتے وقت مندر میں بھکتوں کے لئے خصوصی پروگرام کا انعقاد کیا جس میں کھا ناپیش کیاجانے والا تھا۔

مخالف گروہ سے بدلہ لینے کی سازش : مخالف گروہ کے اس اقدام سے ناراض مہادیوا سوامی نے اپنے ساتھی مادیش اور اس کی بیوی امبیکا (جو کہ سوامی جی کی رشتے دار ہے)کے ساتھ مل کر انتقام لینے کی سازش رچی ۔پڑوسی گاؤں ناگر کوئیل کے ایک پجاری ڈوڈیا کو پروگرام کے دن فراہم کیے جانے والے کھانے میں کیڑے مار دوائی (insecticide) ملانے کی ذمہ داری سونپی گئی۔اس کے پیچھے ان کامقصد یہ تھا کہ پرساد کھانے کے بعد لوگ قئے کرنے لگیں گے  اور بیمار ہوکراسپتالوں میں داخل ہوجائیں گے۔ اس سے مخالف گروہ پر الزامات لگیں گے اور عوام اس گروہ سے بدظن ہوجائیں گے ۔ اور پھر اس کے بعد مندر کے ٹرسٹ پر مہادیوا سوامی کامکمل کنٹرول قائم رکھنا آسان ہوجائے گا۔

پرساد میں ملایا گیا زہر: کہا جاتا ہے کہ مادیش اور اس کی بیوی نے ہی کیڑے مار دوائی حاصل کرکے پجاری ڈوڈیا کے حوالے کی تھی۔منصوبہ یہ تھا کہ کھانا پکانے کے پانی میں زہریلی دوا ملادی جائے ۔ لیکن 14دسمبر کی صبح جب ڈوڈیا سولواڈی کے مندر میں پہنچا اور باورچی خانے میں جھانک کردیکھاتو تب تک کھانا تیار ہوچکا تھا۔سب لوگ باہر پروگرام میں مصروف تھے۔ کچن میں کوئی موجود نہیں تھا۔ ڈوڈیا نے اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کھانے میں زہر ملادیا اور چپکے سے باہر نکل گیا۔

چور کی داڑھی میں تنکا: وہ جو کہتے ہیں نا چور کی داڑھی میں تنکا، تو وہ بات ڈوڈیا پر صادق آگئی۔ کیونکہ جیسے ہی کھانے میں زہر ہونے اور کئی افراد کے بیمار اور ہلاک ہونے کی خبریں عام ہوگئیں تو ڈوڈیا بھی پیٹ درد کی شکایت کرتے ہوئے کے آر اسپتال میسورو میں داخل ہوگیا۔ ڈاکٹروں کو اس کے اندر بیماری یا زہر خورانی کی علامات نظر نہیں آئیں۔ مزید تحقیق کے لئے اس کے خون کی جانچ کی گئی تو رپورٹ بالکل نارمل تھی۔ اس پر ڈاکٹروں کو دال میں کچھ کالا ہونے کا شبہ ہوااور انہوں نے اسپتال میں داخل ڈوڈیا کے تعلق سے پولیس کو اطلاع دے دی۔پھر جب پولیس نے اپنی حراست میں لے کر اس سے سختی کے ساتھ پوچھ تاچھ کی تو اس نے پوری سازش کا خلاصہ کردیاجس سے پتہ چلا کہ پانچ لوگوں کی مفادپرستی اور انتقام کی آگ نے پندرہ بے قصوروں کی جان لے لی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں بی جے پی انتخابی مہم ،کانگریس اور جے ڈی ایس کے مخلوط امیدواروں کا اب تک اعلان نہیں

بنگلورو شہر کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں بھارتیہ جنتاپارٹی( بی جے پی) امیدواروں نے اپنی انتخابی مہم شروع کردی ہے۔ لیکن اتحادی جماعتوں کانگریس،جنتادل نے ابھی تک اپنے امیدواروں کا اعلان نہیں کیاہے۔ بنگلور نارتھ سے موجودہ رکن پارلیمان ومرکزی وزیر ڈی اے سدانندگوڈا، سنٹرل حلقہ ...

لوک سبھا انتخابات میں حق رائے دہی استعمال کرنے زنخوں سے ڈپٹی کمشنر کی اپیل

جمہوری نظام میں18سال سے زائد عمر کے تمام افراد کو رائے دہی کا حق دیاگیاہے۔ ووٹنگ کے اس حق کو ہر صورت میں استعمال کریں۔ بلاکسی خوف وخدشہ کے پولنگ بوتھ پہنچیں اور ووٹنگ کریں۔ یہ باتیں ڈپٹی کمشنر والیکشن افسر بی ایم وجئے شندرا نے کہیں۔

مودی کی ’چوکیدار مہم‘ پر پرینکا نے کہاراہل ٹھیک کہتے ہیں ’امیروں کا ہوتا ہے چوکیدار‘

وزیر اعظم نریندر مودی کی ’چوکیدار مہم‘ پر کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے زور دار حملہ کیا ہے۔پی ایم مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے پرینکا گاندھی نے کہا کہ غریب لوگوں کے چوکیدار نہیں ہوتے۔

مرکزی وزیر رام داس اٹھاؤلے کا بی جے پی۔شیوسینا کو انتباہ، کہا دلت ووٹ کو کم نہ گرداناجائے

مہاراشٹر میں بی جے پی، شیو سینا کو 23 نشستیں دے کر اپنے پالے میں رکھنے میں کامیاب ہو گئی ہے لیکن ریاست میں بی جے پی کی اتحادی پارٹی آر پی آئی کے لیڈر اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ رام داس اٹھاولے کا بیان اس کی مشکلیں بڑھا سکتا ہے۔

سشما سوراج نےمالدیپ کے وزیر داخلہ عمران عبداللہ سے ملاقات کی، دو طرفہ تعلقات پر ہوئی بحث

وزیر خارجہ سشما سوراج نے پیر کو مالدیپ کے وزیر داخلہ عمران عبداللہ سے ملاقات کی اور دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات کو مسلسل آگے بڑھانے کی سمت میں اٹھائے جانے والے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا۔

شمالی کینرا پارلیمانی سیٹ کو جے ڈی ایس کے حوالے کرنے پر کانگریسی لیڈران ناراض؛ کیا دیش پانڈے کا دائو اُلٹا پڑ گیا ؟

ایک طرف کانگریس اور جنتا دل ایس کی مخلوط حکومت نے ساجھے داری کے منصوبے پر عمل کرکے سیٹوں کے تقسیم کے فارمولے پر رضامند ہونے کا اعلان کیا ہے تو دوسری طرف کچھ اضلاع سے کانگریس پارٹی کے کارکنان اور مقامی لیڈران میں بے اطمینانی کی ہوا چل پڑی ہے۔ جس میں ضلع اڈپی کے علاوہ شمالی کینرا ...

پاکستان پر فضائی حملے سے بی جے پی کے لئے پارلیمانی الیکشن کا راستہ ہوگیا آسان !  

پاکستان کے بہت ہی اندرونی علاقے میں موجود دہشت گردی کے اڈے پر ہندوستانی فضائی حملے سے بی جے پی کو راحت کی سانس لینے کا موقع ملا ہے اور آئندہ پارلیمانی انتخابات جیتنے کی راہ آسان ہوگئی۔اور اب وہ سال2017میں یو پی کے اسمبلی انتخابات جیتنے کی طرز پر درپیش لوک سبھا انتخابات جیتنے کے ...

ہندوستان میں اردو زبان کی موجودہ صورتحال، عدم دلچسپی کے اسباب اوران کا حل ۔۔۔۔ آز: ڈاکٹر سید ابوذر کمال الدین

یہ آفتاب کی طرح روشن حقیقت ہے کہ اردو بھی ہندی، بنگلہ، تلگو، گجراتی، مراٹھی اور دیگر ہندوستانی زبانوں کی طرح آزاد ہندوستان کی قومی اور دستوری زبان ہے جو دستورِ ہند کی آٹھویں شیڈول میں موجود ہے۔ لہٰذا یہ کوئی نہیں کہہ سکتا کہ اردو ہندوستان کی زبان نہیں ہے۔ جو ایسا کہتا ہے اور ...

آننت کمار ہیگڈے۔ جو صرف ہندووادی ہونے کی اداکاری کرتا ہے ’کراولی منجاؤ‘کے چیف ایڈیٹر گنگا دھر ہیرے گُتّی کے قلم سے

اُترکنڑا کے رکن پارلیمان آننت کمار ہیگڈے جو عین انتخابات کے موقعوں پر متنازعہ بیانات دے کر اخبارات کی سُرخیاں بٹورتے ہوئے انتخابات جیتنے میں کامیاب ہوتا ہے، اُس کے تعلق سے کاروار سے شائع ہونے والے معروف کنڑا روزنامہ کراولی منجاو کے ایڈیٹر نے  اپنے اتوار کے ایڈیشن میں اپنے ...

کیا جے ڈی نائک کی جلد ہوگی کانگریس میں واپسی؟!۔دیشپانڈے کی طرف سے ہری جھنڈی۔ کانگریس کر رہی ہے انتخابی تیاری

ایسا لگتا ہے کہ حالیہ اسمبلی انتخابات سے چند مہینے پہلے کانگریس سے روٹھ کر بی جے پی کا دامن تھامنے اور بی جے پی کے امیدوار کے طور پر فہرست میں شامل ہونے والے سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک کی جلد ہی دوبارہ کانگریس میں واپسی تقریباً یقینی ہوگئی ہے۔ اہم ذرائع کے مطابق اس کے لئے ضلع ...

ضلع شمالی کینرا میں پیش آ سکتا ہے پینے کے پانی کابحران۔بھٹکل سمیت 11تعلقہ جات کے 423 دیہات نشانے پر

امسال گرمی کے موسم میں ضلع شمالی کینرا میں پینے کے پانی کا شدید بحران پیدا ہونے کے آثار نظر آر ہے ہیں۔ کیونکہ ضلع انتظامیہ نے 11تعلقہ جات میں 428دیہاتوں کی نشاندہی کرلی ہے، جہاں پر پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔