کرناٹکا بجٹ: ملیناڈو وکے لئے امیداور آس تو ساحلی علاقے کے لئے مایوسی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th February 2019, 9:08 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

کاروار9؍فروری (ایس او نیوز) کرناٹکا ریاستی اسمبلی میں وزیراعلیٰ کماراسوامی نے جو بجٹ پیش کیا ہے، اس میں ایک طرف ملیناڈو کے علاقے میں محض امید اور آس جگائی گئی ہے، تودوسری طرف ساحلی علاقے کے عوام کو کافی مایوسی ہوئی ہے۔

ملیناڈواور ساحلی علاقے میں باغبانی، سیاحت کے فروغ، بنیادی سہولتوں کی ترقی، تعلیم اور ماہی گیری جیسے شعبوں پر کوئی توجہ نہیں دی گئی ہے۔ اس کے باوجود کہاجاسکتا ہے کہ سماج کے تمام طبقات کے مفادات کو پوراکرنے کی نیت سے تیار کیا گیا ہے۔منڈگوڈ کے تالابوں کو وردا ندی کے پانی سے بھرنے کے لئے 40کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں۔اس کے علاوہ کاروار کے میڈیکل سائنس انسٹی ٹیوٹ کے لئے 150کروڑ روپے رکھے گئے ہیں، جس میں کاروار کے ڈسٹرکٹ اسپتال کوترقی دے کر 450بستروں والے اسپتال میں تبدیل کرنا بھی شامل ہے۔اس سے ہٹ کر ضلع شمالی کینرا کے لئے کوئی بھی فنڈ مختص نہیں کیا گیا ہے۔ کمٹہ میں ایئر اسٹرپ (چھوٹا ہوائی اڈہ) کی تعمیر کے تعلق سے عوام کو امیدیں تھیں، مگر اس کے بارے میں کوئی اعلان نہیں ہے۔ساحلی علاقے میں سیاحت کو فروغ دینے کے سلسلے میں بھی کسی تازہ منصوبے کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔صرف ساحلی پٹی کی ترقی کے لئے 7کروڑ روپے فنڈ مختص کیا گیا ہے، جسے اونٹ کے منھ میں زیرہ کی مثال کہا جاسکتا ہے۔

ماہی گیروں کو تھوڑی خوشی اس بات سے ہوسکتی ہے کہ ان کی کشتیوں پر اِسرو کے تصدیق شدہ ڈی اے ٹی آلہ استعمال کرنے کے لئے 50فی صد سبسیڈی فراہم کرنے کی گنجائش رکھی گئی ہے اور اس کے لئے 3کروڑ روپوں کا فنڈ مخصوص کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات؛ بھٹکل میں سبھی پولنگ بوتھوں کے اطراف امتناعی احکامات نافذ؛ ہوٹلوں پر ہوگی نگاہ، انتخابی پرچار پر پابندی

اپریل 23 کو ہونے والے لوک سبھا انتخابات کے پیش نظر  بھٹکل ودھان سبھا حلقہ کے 248 پولنگ بوتھوں کے اطراف  پروٹوکول کے تحت انتخابات شروع ہونے کے 48 گھنٹے پہلے سے ہی امتناعی احکامات نافذ کردئے  گئے ہیں۔ جس کے تحت پولنگ بوتھ کے اطراف چار سے زائد لوگوں کے جمع ہونے پر پابندی رہے گی اس بات ...

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

ہلیال میں جے ڈی ایس لیڈر کے گھر پر انتخابی افسران کا چھاپہ ۔تلاشی کے بعد خالی ہاتھ واپس لوٹے افسران؛ کیا بی جےپی کو شکست کا خوف ہے؟

پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر چیک پوسٹس پر تلاشی مہم کے علاوہ ہلیال شہر کے گوداموں، شراب کی دکانوں، موٹر گاڑیوں کی بھی مسلسل تلاشیاں لے رہے ہیں۔

لوک سبھا انتخابات؛ اُترکنڑا میں کیا آنند، آننت کو پچھاڑ پائیں گے ؟ نامدھاری، اقلیت، مراٹھا اور پچھڑی ذات کے ووٹ نہایت فیصلہ کن

اُترکنڑا میں لوک سبھا انتخابات  کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں   نامدھاری، مراٹھا، پچھڑی ذات  اور اقلیت ایک دوسرے کے قریب تر آنے کے آثار نظر آرہے ہیں،  اگر ایسا ہوا تو  اس بار کے انتخابات  نہایت فیصلہ کن ثابت ہوسکتےہیں بشرطیکہ اقلیتی ووٹرس  پورے جوش و خروش کے ساتھ  ...

اپنے امیدوار کو بے وجہ بڑھا چڑھا کر پیش کر رہی ہے بی جے پی: ملکا ارجن کھڑگے

اپوزیشن لیڈر اور کانگریس کے موجودہ ایم پی ملکا ارجن کھڑگے نے اتوار کو یقین ظاہر کیا کہ وہ الیکشن جیت جائیں گے۔انہوں نے بی جے پی پر الزام لگایا کہ وہ محفوظ گلبرگہ پارلیمانی سیٹ سے اپنے امیدوار امیش جادھو کو بے وجہ بڑھا چڑھا کر پیش کر رہی ہے۔کھڑگے نے کہا کہ بی جے پی جادھو کے ...

سابق وزیراعظم دیوے گوڈا کا بھٹکل دورہ؛ کہا، جمہوریت خطرے میں ہے، اُسے بچانے کے لئے ہر شہری کو آگے آنا ہوگا

اس بار کے انتخابات سب سے زیادہ اہم اس لئے  ہے کہ مودی کے زیر اقتدار ملک کی جمہوریت کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔جب سے مودی ملک کے وزیراعظم  بنے ہیں ملک کے سرکاری جمہوری اداروں میں  دخل اندازی سے  عدالت تک محفوظ نہیں ہے، ریزروبینک آف انڈیا  ہو ، انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ ہو، سی بی آئی ...

بنگلور سے شموگہ اور بھدراوتی لے جانے کے دوران دوکروڑ کی رقم ضبط؛ گاڑی کے ایک ٹائر میں چھپا کر رکھی گئی تھی رقم

الیکشن کا ضابطہ اخلاق لاگو ہونے کے بعد انتخابی قوانین کی خلاف ورزیوں پر نظر رکھنے والے دستے نے کرناٹکا میں اب تک غیر محسوب رقم اور دیگر اشیاء جو ضبط کی ہے اس کی مالیت کا اندزاہ 83کروڑ روپے لگایا گیا ہے۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں سخت نگرانی میں اسٹرانگ رومس منتقل

جنوبی کرناٹک کے 14 پارلیمانی حلقوں میں کل پہلے مرحلے کی پولنگ کے دوران ڈالے گئے ووٹ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں قید ہیں ، اور ان الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو مرکزی دستوں کی سیکورٹی کے تحت اسٹارنگ رومس میں قید کردیا گیا ہے۔

ملک میں بی جے پی کی لہر اور جال بالکل نہیں ہے مودی انتظامیہ کارپورٹ کارڈ فیل ہوگیا : دنیش گنڈو راؤ

ملک کے کسی بھی علاقہ میں وزیر اعظم نریندر مودی کی کوئی لہر بالکل نہیں ہے ۔مودی لہر کا جھانسہ دے کر عوام کو جال میں پھانسنے کی کوشش بی جے پی کر رہی ہے ۔یہ باتیں کے پی سی سی کے صدر دنیش گنڈو راؤ نے کہی ہیں ۔آ