بنگلورومیں تمباکو نوشی اور گانجے کے استعمال پر روک کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th August 2018, 11:11 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،28؍اگست(ایس او نیوز) بنگلور کی ہوٹلوں اور عوامی مقامات پر سگریٹ نوشی اور گانجے کا استعمال عام ہونے پر آج بی بی ایم پی کونسل میٹنگ میں گہری تشویش ظاہر کی گئی ۔

میٹنگ میں پارٹی امتیازات سے بالاتر ہوکر سبھی کارپوریٹروں نے مطالبہ کیا کہ اس پر روک لگانے کے لئے سب سے پہلے بی بی ایم پی ا فسروں کے ذریعے پہل کی جائے اور کونسل اجلاس میں قرار داد منظور کی جائے کہ شہر کی حدود میں سگریٹ نوشی اور گانجے کے استعمال کو بند کیا جائے۔ تقریباً دیڑھ گھنٹے کی تاخیر سے شروع ہوئی کونسل میٹنگ میں کانگریس ، بی جے پی اور جنتادل (ایس) اراکین نے اپنے سیاسی اختلافات سے اوپر اٹھ کر اس بات پر زور دیا کہ شہر میں سگریٹ اور تمبا کو اشیاء کی فروخت پر سختی سے پابندی لگادی جائے۔ حکمران پارٹی کے لیڈر ایم شیوراجو نے کہاکہ رواں سال کے بجٹ میں تمباکو اشیاء پر پابندی کے لئے رقم مختص کی گئی ہے۔

اپوزیشن لیڈر پدمانابھا ریڈی نے کہاکہ ہوٹلوں اور باروں میں سگریٹ نوشی پر پابندی سختی سے لاگو کی جانی چاہئے۔ حالانکہ اس سلسلے میں بی بی ایم پی نے پہلے ہی تمام ہوٹلوں اور باروں پر یہ پابندی لگائی ہے کہ سگریٹ نوشی کی اجازت نہ دیں اس کے باوجود بھی ان مقامات پر کھلے عام سگریٹ نوشی ہورہی ہے۔ یہاں تک کہ اس پابندی کے کھلے عام پامال ہونے کے باوجود بھی پولیس حکام کی طرف سے کوئی کارروائی نہیں کی جاتی۔انہوں نے کہاکہ تمبا کو نوشی پر پابندی سختی سے لاگو کرنے کی ایک قرار دادمنظور کرکے ریاستی اور مرکزی حکومتوں کو روانہ کیا جائے۔

جنتادل (ایس) کی لیڈر نیتراوتی نارائن نے تمباکو اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ سابق میئر شانتا کماری نے کہاکہ تعلیمی اداروں کے 100 میٹر کے دائرے میں تمباکو اشیاء اور سگریٹ کے فروخت پر پابندی کے باوجود یہ فروخت بے روک جاری ہے۔ اس مرحلے میں میئر سمپت راج نے کہاکہ جس طرح پلاسٹک کے استعمال پر روک لگانے بی بی ایم پی نے خصوصی مہم چلائی ہے آنے والے دنوں میں تمباکو اشیاء پر روک لگانے کے لئے بھی ایک خصوصی مہم چلائی جائے گی۔ شہر کے جھونپڑ پٹی علاقوں ، تعلیمی اداروں کے احاطوں ا ور دیگر تمام مقاموں پر کارپوریٹروں کی نگرانی میں اس طرح کی مہم کی شروعات کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

ملپے سے گم شدہ ماہی گیر کشتی معاملہ میں نیا موڑ: نیوی کے افسران نے مانا کہ جنگی جہاز سے ہواتھا کشتی کا تصادم

مہاراشٹرا میں سندھو درگ کے قریب سمندر میں ماہی گیری کے دوران مچھیروں سمیت لاپتہ ہونے والی کشتی ’سوورنا تریبھوجا‘ کے تعلق سے اب ایک نیا موڑ سامنے آیا ہے اور تحقیقاتی افسران کو یقین ہوگیا ہے کہ اس ماہی گیر کشتی کی ٹکر بحریہ کے ایک جنگی جہاز’آئی این ایس کوچی‘ سے ہوئی اور ماہی ...

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

گرفتاری کے خوف سے رکن اسمبلی جے این گنیش روپوش

بڈدی کے ایگل ٹن ریسارٹ میں ہوسپیٹ کے رکن اسمبلی آنند سنگھ پر حملہ کرنے والے رکن اسمبلی جے این ۔ گنیش کے خلاف بڑدی پولیس تھانہ میں ایف آئی آر داخل کرنے کی خبر کے بعد سے گنیش لاپتہ ہیں ۔

وسویشوریا یونیورسٹی رجسٹرار پر200کروڑ کے گھپلے کا الزام گورنر نے چھان بین کے لئے وظیفہ یاب جج کو مقرر کیا ۔ تعاون کرنے ملزم کو ہدایت

وسویشوریا ٹکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے رجسٹرار اب مشکل میں پڑگئے ہیں۔ گورنر واجو بھائی روڈا بھائی والا نے جو یونیورسٹی کے چانسلر بھی ہیں،200کروڑ روپئے تک کے گھوٹالے کی چھان بین کا حکم دیا ہے۔

لنگایت طبقہ کے مذہبی رہنما شیوکمارسوامی کی آخری رسومات ادا، اسلامی تعلیمات اوراردو زبان سے بھی تھی واقفیت

یاست کرناٹک کی ایک عظیم شخصیت، لنگا یت طبقہ کے مذہبی رہنما، شیوکمارسوامی جی کی آج آخری رسومات انجام دی گئیں۔ بنگلورو کے قریب واقع ٹمکورشہرمیں شیوکمارسوامی جی کولنگایت رسومات کے مطابق دفنایا گیا۔ سدگنگا مٹھ میں آج اورکل لاکھوں کی تعداد میں لوگوں نے سوامی جی کا آخری ...