بنگلورومیں تمباکو نوشی اور گانجے کے استعمال پر روک کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 28th August 2018, 11:11 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،28؍اگست(ایس او نیوز) بنگلور کی ہوٹلوں اور عوامی مقامات پر سگریٹ نوشی اور گانجے کا استعمال عام ہونے پر آج بی بی ایم پی کونسل میٹنگ میں گہری تشویش ظاہر کی گئی ۔

میٹنگ میں پارٹی امتیازات سے بالاتر ہوکر سبھی کارپوریٹروں نے مطالبہ کیا کہ اس پر روک لگانے کے لئے سب سے پہلے بی بی ایم پی ا فسروں کے ذریعے پہل کی جائے اور کونسل اجلاس میں قرار داد منظور کی جائے کہ شہر کی حدود میں سگریٹ نوشی اور گانجے کے استعمال کو بند کیا جائے۔ تقریباً دیڑھ گھنٹے کی تاخیر سے شروع ہوئی کونسل میٹنگ میں کانگریس ، بی جے پی اور جنتادل (ایس) اراکین نے اپنے سیاسی اختلافات سے اوپر اٹھ کر اس بات پر زور دیا کہ شہر میں سگریٹ اور تمبا کو اشیاء کی فروخت پر سختی سے پابندی لگادی جائے۔ حکمران پارٹی کے لیڈر ایم شیوراجو نے کہاکہ رواں سال کے بجٹ میں تمباکو اشیاء پر پابندی کے لئے رقم مختص کی گئی ہے۔

اپوزیشن لیڈر پدمانابھا ریڈی نے کہاکہ ہوٹلوں اور باروں میں سگریٹ نوشی پر پابندی سختی سے لاگو کی جانی چاہئے۔ حالانکہ اس سلسلے میں بی بی ایم پی نے پہلے ہی تمام ہوٹلوں اور باروں پر یہ پابندی لگائی ہے کہ سگریٹ نوشی کی اجازت نہ دیں اس کے باوجود بھی ان مقامات پر کھلے عام سگریٹ نوشی ہورہی ہے۔ یہاں تک کہ اس پابندی کے کھلے عام پامال ہونے کے باوجود بھی پولیس حکام کی طرف سے کوئی کارروائی نہیں کی جاتی۔انہوں نے کہاکہ تمبا کو نوشی پر پابندی سختی سے لاگو کرنے کی ایک قرار دادمنظور کرکے ریاستی اور مرکزی حکومتوں کو روانہ کیا جائے۔

جنتادل (ایس) کی لیڈر نیتراوتی نارائن نے تمباکو اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ سابق میئر شانتا کماری نے کہاکہ تعلیمی اداروں کے 100 میٹر کے دائرے میں تمباکو اشیاء اور سگریٹ کے فروخت پر پابندی کے باوجود یہ فروخت بے روک جاری ہے۔ اس مرحلے میں میئر سمپت راج نے کہاکہ جس طرح پلاسٹک کے استعمال پر روک لگانے بی بی ایم پی نے خصوصی مہم چلائی ہے آنے والے دنوں میں تمباکو اشیاء پر روک لگانے کے لئے بھی ایک خصوصی مہم چلائی جائے گی۔ شہر کے جھونپڑ پٹی علاقوں ، تعلیمی اداروں کے احاطوں ا ور دیگر تمام مقاموں پر کارپوریٹروں کی نگرانی میں اس طرح کی مہم کی شروعات کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

سیلاب زدہ کورگ کیلئے اضافی تعاون کا اعلان فی کنبہ 50ہزار روپئے رقم دینے کا فیصلہ

ورگ ضلع میں حال ہی میں ہوئی موسلا دھار بارش اور سیلاب کی وجہ سے کئی گھر تباہ وبرباد ہوگئے ۔ متاثرہ کنبوں کیلئے کپڑے اور روز مرہ کی ضروریات کی خریداری کے مقصد سے وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ کے تحت فی کنبہ 50ہزار روپئے اضافی رقم جاری کرنے کا ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے۔

سدارامیا کے دست راست ضمیر احمد خان حکومت کی حفاظت کی خاطر ناراض اراکین اسمبلی کو منانے میں سرگرداں

سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کی ترغیب پر جے ڈی ایس کو خیر باد کہتے ہوئے کانگریس میں شمولیت اختیار کرنے والے بی زیڈ ضمیر احمد خان مخلوط حکومت کی حفاظت پر مامور دکھائی دے رہے ہیں، سدارامیا کے ناراض اراکین اسمبلی کو منانے کی کوشش میں بی زیڈ ضمیر احمد خان سرگرم ہوگئے ہیں، ناراضی کی لہر ...

ریاستی مخلوط حکومت کو گرانے میں بی جے پی بری طرح ناکام لوک سبھا انتخابات پر توجہ مرکوز کرنے کی ہدایت ، آخری دم تک فرقہ پرستی کے خلاف لڑتا رہوں گا:سدارامیا

ریاستی مخلوط حکومت میں ساجھیدار کانگریس اور جے ڈی ایس کے اراکین اسمبلی کے درمیان جن اختلافات کا فائدہ اٹھا کر اپوزیشن بی جے پی نے پچھلے دو ہفتوں سے آپریشن کنول کے ذریعہ مخلوط حکومت کو گرانے کی جو کوشش کی تھی ،اب وہ ناکام ہوچکی ہے۔

ویمن انڈیا موؤمنٹ کی جانب سے 23 ستمبر کو بنگلور سے شروع ہورہی ہے خواتین کے تحفظ کو لے کر ملک گیر مہم

ویمن انڈیا موؤمنٹ (Women India Movement) نے 23ستمبر 2018تا 8 مارچ 2019 " خواتین پر تشدد بند کرو " اور "ّ آئیے ہمارے تحفظ کیلئے لڑائی لڑیں " کے نعروں کے تحت  ایک ملک گیر مہم  شروع  کرنے کا اعلان کیا ہے جس کے لئے  ملک کی خواتین سے اپیل کی گئی  ہے کہ وہ اس ملک گیر تحریک میں شامل ہوکر اپنے حالات ...

جنوبی ہند کے مشہور ومعروف عالم دین حضرت مولانا زکریا والا جاہی کا انتقال

نوبی ہند کے مشہور ومعروف،ممتاز جیدعالم دین زکریا صاحب والا جاہی طویل علالت کے بعد آج صبح 10؍بجے اپنے مالک حقیقی سے جاملے۔ مولانا کو شیواجی نگرکے براڈوے کی ان کی رہائش پر آخری دیدار کے لئے رکھا گیا تھا۔