علی انور انصاری جدیو کے پارلیمانی بورڈ سے معطل، اپوزیشن جماعتوں کی میٹنگ میں شرکت کی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th August 2017, 12:57 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ / نئی دہلی11/اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)بہار میں جے ڈی یواوربی جے پی کی مخلوط حکومت کی سب سے پہلے مخالفت کرنے والے جے ڈی یو ایم پی علی انور پر پارٹی کی گاج گری ہے اورانہیں پارلیمانی بورڈسے معطل کر دیاگیاہے۔ جے ڈی یو کے سیکرٹری جنرل کے سی تیاگی نے جمعہ کو کہا کہ ایم پی علی انور کو پارٹی سے معطل کر دیاگیاہے۔ انہوں نے کہاکہ علی انورانصاری کانگریس صدرسونیاگاندھی کی طرف سے بلائی گئی اپوزیشن پارٹیوں کی میٹنگ میں شامل ہوئے تھے اوراسی وجہ سے پارٹی نے ان پرکارروائی کی ہے۔قابل ذکر ہے کہ علی انورانصاری نے بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار کی طرف مہاگٹھ بندھن چھوڑ بی جے پی کے ساتھ حکومت بنانے کی مخالفت کی تھی۔ انہوں نے کہاتھا کہ بہار کے عوام نے مہاگٹھ بندھن کی حکومت کے لیے ووٹ دیاتھا۔ انور نے کہا تھا کہ وہ پارٹی فورم میں اس بارے میں بات کریں گے۔ انور کے ساتھ ہی جے ڈی یو کے سابق صدر شرد یادو نے بھی نتیش کے اس قدم کی مخالفت کی تھی۔ کچھ دن پہلے جے ڈی یو سے ایسے اشارے مل رہے تھے کہ پارٹی باغی لیڈروں کے خلاف کارروائی کر سکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کی نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کا اثر گجرات انتخابات کے نتائج میں نظر آئے گا: اکھلیش یادو 

سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے کہا ہے کہ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے تاجروں پر کافی برا اثر پڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسان مخالف اور تاجر مخالف پالیسیوں کی وجہ سے بی جے پی کا گراف نیچے آتا جا رہا ہے۔

گجرات میں سات انتخابات میں دو بار ووٹنگ کے فیصدی میں کمی، دونوں بار بی جے پی کو نقصان تو کانگریس کا فائدہ 

گجرات میں ہفتہ کو پہلے مرحلہ میں19ضلعوں میں کی89نشستوں پرتقریباً 68فیصدی ووٹنگ ہوئی اس بار 2012کے اسمبلی انتخابات سے تقریباً 3فیصدی ووٹنگ ہوئی۔ 2012 میں پہلے مرحلے میں19 میں سے15 اضلاع میں ووٹنگ ہوئی تھی۔

خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ ہوئی چھیڑ خانی کو بتایا انتہائی شرمناک فعل 

قومی خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ شرمناک حادثہ قرار دیا ہے ۔زائرہ وسیم نے سوشل میڈیا کے ذریعے وستارا ایئر لائنزکی فلائٹ سے دہلی سے ممبئی جانے والی پرواز میں جس طرح ہراساں کیے جانے کی بات کہی ہے وہ بھارتی تہذیب و ثقافت کے شرم کی بات ہے ۔