جے ڈی ایس باغی رکن اسمبلی بالکرشنا کی یڈیورپا سے ملاقات، بی جے پی میں شمولیت کے متعلق قیاس آرائیاں مسترد

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 20th April 2017, 1:25 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:19/اپریل(ایس او نیوز)گزشتہ راجیہ سبھا انتخابات میں جنتادل (ایس) قیادت کے خلاف بغاوت کرکے کراس ووٹنگ کرنے والے ماگڑی کے رکن اسمبلی ایچ سی بال کرشنا نے بی جے پی میں شمولیت کیلئے پرتولنے شروع کردئے ہیں۔آج انہوں نے اس سلسلے میں سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا سے ڈالرس کالونی میں واقع ان کی رہائش گاہ پہنچ کر ملاقات کی اور دونوں رہنما ؤں کے درمیان کافی طویل بات چیت ہوئی۔سیاسی حلقوں میں اس ملاقات کو لے کر یہی کہاجارہا ہے کہ بالکرشنا نے اپنے ماگڑی حلقہ میں سیاسی پہچان بنائے رکھنے کے مقصد سے بی جے پی کا رخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یاد رہے کہ ایچ سی بال کرشنا اس سے پہلے بھی بی جے پی ٹکٹ پر ماگڑی سے ایک مرتبہ منتخب ہوچکے ہیں بعد میں انہوں نے جنتادل (ایس) میں شمولیت اختیار کرلی، ایک مرتبہ بی جے پی سے نمائندگی کے بعد تین مرتبہ وہ اسی حلقہ سے جے ڈی ایس سے منتخب ہوئے ہیں۔ یڈیورپا سے ملاقات کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے بالکرشنا نے کہاکہ اس ملاقات کے دوران انہوں نے کسی بھی سیاسی امر پر کوئی بات چیت نہیں کی بلکہ ٹمکور کے سدگنگا مٹھ کے سربراہ ڈاکٹر شیوکمار سوامی کے اعزاز میں منعقدہ گرو وندنا پروگرام میں مدعو کرنے کیلئے انہوں نے یڈیورپا سے ملاقات کی۔ انہوں نے کہاکہ جنتادل (ایس) قیادت کے خلاف آواز اٹھانے والے تمام سات اراکین اسمبلی متحد ہیں، ان میں پھوٹ پڑنے کے متعلق کسی طرح کا شک نہ کیا جائے۔ بہت جلد تمام سات اراکین کانگریس میں شمولیت کے متعلق فیصلہ لیں گے۔ انہوں نے کہاکہ کل ہی تمام اراکین نے اے آئی سی سی جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ سے بات چیت کی ہے۔ اس موقع پر یڈیورپا نے اپنے خیالات ظاہر کرتے ہوئے تصدیق کی کہ بالکرشنا کی ان سے سیاسی موضوع پر کوئی بات چیت نہیں ہوئی۔ اے آئی سی سی جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ کے اس تبصرہ پر کہ یڈیورپا کی اب ان کے طبقہ لنگایت میں مقبولیت نہیں رہی، جس کی وجہ سے بی جے پی کو گنڈل پیٹ اور ننجنگڈھ حلقوں میں ہارکا منہ دیکھنا پڑا ہے، سابق وزیراعلیٰ نے تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔

ایک نظر اس پر بھی

میسورو:سرکاری ہال میں سیمینارکے دوران بیف کھانے پر تنازعہ 

چارواک سوشیل اینڈ کلچرل ٹرسٹ کے زیر اہتمام کلامندر میسورو کے مانیانگلا ہال میں 145Food Habits and Freedom of Expression146 کے عنوان سے جو سیمینار منعقد کیا گیا تھااس کے دوران اسٹیج پر بیف کھانے اور کھلانے کی وجہ سے ہندتووادی تنظیموں کی طرف سے اعتراضات اور مذمت کے ساتھ ایک نیا تنازعہ کھڑا ہوگیا ...

ایس ڈی پی آئی کے علاقائی صدر اشرف کے قتل میں ملوث 5ملزمین گرفتار۔۔قاتلوں اور سنگھی لیڈرپربھاکربھٹ کے رابط !۔۔قتل کا مقصدفرقہ وارانہ فساد بھڑکانہ تھا!!

انسپکٹر جنرل آف پولیس پی ہری شیکھرن کے بیان کے مطابق بنٹوال کے بینجن پدوی میں گزشتہ حال ہی میں ہوئے ایس ڈی پی آئی کے علاقائی صدر محمداشرف کلائی کے قتل میں ملوث 5ملزمین گرفتارکیا گیا ہے۔

109؍ کروڑ کا دھوکہ، کلرک اور آڈٹ افسر ملزم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے(بی بی یم پی) کو جعلی بل ا ور دستاویزات منسلک کرکے 109؍ کروڑ روپیوں کا دھوکہ دینے پر انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ محکمہ کے فرسٹ ڈویژن کلرک ماینا اور محکمہ آڈٹ کے افسر ناگراج کارنت کے خلاف السور گیٹ پولیس تھانہ میں ایف آئی آر درج کی گئی ۔

کرناٹک کا دیرینہ خواب شرمندۂ تعبیر بنگلور شہر اسمارٹ سٹی کی فہرست میں شامل

بشمول راجدھانی بنگلور ملک کے 30؍شہروں کو مرکزی حکومت نے اسمارٹ سٹی کے طورپر ترقی دینے کے لئے منتخب کرلیاہے۔ مرکزی وزیر برائے شہری ترقیات وینکیا نائیڈونے آج اس کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ مرکزی اسمارٹ سٹی اسکیم کے تحت ان 30؍شہروں کو ترقی دی جائے گی۔