راجیہ سبھا چناؤ کیلئے جے ڈی ایس امیدوار فاروق میدان میں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th March 2018, 8:28 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍مارچ(ایس او نیوز) راجیہ سبھا انتخابات کیلئے جنتادل (ایس) کے امیدوار کے طور پر آج معروف صنعت کار اور جنتادل (ایس) کے قومی سکریٹری بی ایم فاروق نے اپنا پرچۂ نامزدگی داخل کیا۔ ریاستی اسمبلی کے سکریٹری اور الیکٹورل آفیسر مورتی کے سامنے حاضر ہوکر فاروق نے اپنی پارٹی کی طرف سے نامزدگی داخل کی۔ اس سے پہلے بھی راجیہ سبھا انتخابات میں جنتادل(ایس) قیادت نے فاروق کو امیدوار بنایا تھا ، لیکن جنتادل (ایس) کے آٹھ اراکین کی بغاوت اور کانگریس امیدوار کو حمایت کے سبب وہ کامیاب نہیں ہوپائے۔ اس بار جنتادل (ایس) نے کانگریس سے گزارش کی ہے کہ وہ راجیہ سبھا انتخابات میں اپنا تیسرا امیدوار نہ اتارے اوراپنے افزود ووٹوں سے بی ایم فاروق کی حمایت کرے، تاہم کانگریس نے جنتادل(ایس) کے مطالبے کو یکسر مسترد کرتے ہوئے اپنے تیسرے امیدوار کو میدان میں اتارنے کا فیصلہ کیا ہے۔ دوسری طرف بی جے پی کی طرف سے بھی راجیہ سبھا کی ایک نشست کیلئے امیدوار اتارا جارہاہے۔ آج فاروق کی طرف سے پرچۂ نامزدگی کے مرحلے میں ان کے ہمراہ جنتادل (ایس) لیجسلیچر پارٹی لیڈر ایچ ڈی ریونا اور پارٹی کے دیگر اراکین اسمبلی موجود رہے۔اس دوران ریاستی سکریٹریٹ کی طرف سے دئے گئے اعداد وشمار کے مطابق 224رکنی اسمبلی میں کانگریس کے 122 ، بی جے پی کے 43 ، جنتادل (ایس) کے 37، بی ایس آر کانگریس کے تین ، کے جے پی کے دو ،کے ایم پی سے ایک اورآٹھ آزاد اراکین سمیت 216اراکین ووٹنگ میں حصہ لے سکتے ہیں، ان کے علاوہ ایک نام اسپیکر کا بھی ہے جس سے ایوان کے اراکین کی مجموعی تعداد 217 ہوتی ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔