یوپی:”سنکلپ“ریلی کرکے جاٹوں نے کھولابی جے پی کے خلاف مورچہ،سواسوسیٹوں پرجاٹ موثر

Source: S.O. News Service | Published on 10th January 2017, 11:40 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،10/جنوری (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)یوپی میں سیاست ہر پل کروٹ بدل رہی ہے۔اتر پردیش میں سب سے پہلے 11فروری کو مغربی یوپی میں ووٹ ڈالے جانے ہیں۔مغربی یوپی میں تقریباََ 50ایسی اسمبلی سیٹیں ہیں جہاں جاٹ جیت اور ہار کے لحاظ سے بے حد معنیٰ رکھتے ہیں۔لیکن مغربی یوپی کے جاٹوں نے بغاوتی رخ اختیار کر لیاہے۔سب کے بعد کس کے خلاف ہے یہ بغاوت اور کیا ہے اس بغاوت کی وجہ سے، آئیے آپ کو بتاتے ہیں۔مظفرنگر کے کھرڑ گاؤں میں سنکلپ ریلی کرکے جاٹ برادری کے لوگوں نے بی جے پی کے خلاف مورچہ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔بی جے پی کی مخالفت کا براہ راست کنکشن گزشتہ سال کے ہریانہ سانحہ سے ہے۔تب جاٹ برادری کے لوگ ریزرویشن کی مانگ کو لے کر تحریک چلا رہے تھے۔جوبعدمیں پرتشددہوگیاتھا۔اس معاملے میں پولیس نے کمیونٹی کے لوگوں کے خلاف کیس درج کیا تھا جو یوپی میں احتجاج کی بڑی وجہ ہے۔اعداد و شمار گواہ ہیں کہ یوپی کے اسمبلی انتخابات میں جاٹ ووٹ کتنا معنی رکھتا ہے۔یوپی میں تقریباََ 125نشستیں ایسی ہیں جہاں جاٹ ووٹرزموجودہیں۔اس کے علاوہ تقریباََ 50اسمبلی نشستیں ایسی ہیں جہاں پر جاٹ ووٹ 20فیصد یا اس سے زیادہ ہیں۔فی الحال جاٹ برادری کی یہ مخالفت کتنا اثردکھاتی ہے دیکھنے والی بات ہوگی۔
 

ایک نظر اس پر بھی

اگرپاکستانی الیکشن میں مداخلت کررہاہے تواین آئی اے کیاکررہی ہے، اسدالدین اویسی کاسوال ،بنکاک میں پاکستان کے ساتھ مجوزہ میٹنگ کی تفصیلات بتائیں مودی

حیدرآبادکے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

خبطی ’ وکاس‘ کا تازہ ترین سروے ، مہنگائی آسمان پر ،اشیاء خوردنی کی قیمتوں میں اضافہ ، نومبر میں شرح 15 ماہ بلند سطح پر

سبزیاں، پھل او ر انڈوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کی بری خبر ہے ۔ دن رات ٹی وی ڈیبیٹ نے عوام کو اس قدر غافل اور نکما کر دیا ہے کہ آج ہونے والے ہندو۔ مسلم موضوع پر پارٹی کے بکواس ترجمان کی ہنگامہ آرائی کو تو یاد رکھتے ہیں ؛

منی شنکر ایر کا بیان غلط:لیکن مودی جی نے جو منموہن سنگھ کے بارے میں کہا وہ بھی ٹھیک نہیں:راہل گاندھی

گجرات اسمبلی انتخابی مہم کے آخری دن پریس کانفرنس کرکے کانگریس صدر راہل گاندھی نے ایک بار پھر پی ایم مودی کو نشانے پر لیا ہے۔انہوں نے صاف کہا کہ مودی جی پر منی شنکر ایر کا تبصرہ بالکل غلط تھا آخر وہ ہمارے وزیر اعظم ہیں۔