جموں و کشمیر کے اسکول منائیں گے سرجیکل اسٹرائیک ڈے ، بی جے پی پر فوج کا استعمال کرنے کا اپوزیشن لیڈرنے لگایا الزام

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 28th September 2018, 7:44 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

جموں۲۸ ستمبر(ایس او نیوز) مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر میں محکمہ تعلیم سے اس بات کو یقینی بنانے کے لئے کہا ہے کہ سبھی اسکولوں میں سرجیکل اسٹرائیک کی دوسری سالگرہ کا جشن منایا جائے۔ سابق وزیر اعلی عمرعبداللہ  نے محکمہ تعلیم کے ذریعہ جاری سرکولر میں ایک تصویر شیئر کی ہے۔ اس سرکولر میں ریاست کے تمام اسکولوں میں اس تقریب کے منعقد ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں افسران کو ہدایت دی گئی ہے کہ ثبوت کے طور پر پروگرام کی تصاویر اور ویڈیو کے ساتھ رپورٹ بھیجیں۔

اسکولوں کو 28 سے 30  ستمبر تک فوج کی بہادری کا جشن منانے کا حکم دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ سرکولر میں اس دوران منعقد کی جانے والی سرگرمیوں کی فہرست بھی دی گئی ہے۔ سرکولر کے مطابق، اسکول طلبہ فوج کی حمایت میں خط لکھیں اور کارڈس بنائیں۔

قابل غور ہے کہ جموں و کشمیر محکمہ تعلیم سے قبل یونیورسٹی گرانٹس کمیشن بھی یونیورسٹی اور ملک بھر کے ایجوکیشن انسٹیٹیوٹ کو ’یوم سرجیکل اسٹرائیک‘ منانے کے لئے کہہ چکا ہے۔ تاہم بعد میں یو جی سی نے کہا کہ ان کا سرکولر صرف مشورہ ہے نہ کہ حکم۔ واضح ہو کہ  کئی حزب مخالف نے تعلیمی اداروں میں ’سرجیکل اسٹرئیک ڈے‘ منائے جانے کی ہدایت پر اعتراض ظاہر کیا ہے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

تلنگانہ میں 19فروری کو کابینہ کی توسیع

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ دوبارہ اقتدار میں آنے کے دو ماہ کے بعد اپنی کابینہ میں توسیع کرنے کی تیاری میں ہے اور ساری بحث اب اس بات پر ٹک گئی ہے کہ اس میں کن لوگوں کو شامل کیا جائے گا۔

بھٹکل میں مجلس اصلاح وتنظیم کی جانب سے پلوامہ دہشت گردانہ حملہ کی کڑی مذمت: تحصیلدار کی معرفت وزیراعظم کو میمورنڈم ؛کڑی کارروائی کا مطالبہ

کشمیر کے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملے کی کڑی مذمت کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل نے تحصیلدار کی معرفت وزیر اعظم نریندر مودی کو اپیل سونپتے ہوئے دہشت گردی کا کرار ا جواب دینے کا مطالبہ کیا۔

بھٹکل: شرالی میں ہائی وے کی توسیع کے دوران ہنگامہ؛ پولس کی لی گئی مدد؛ عوامی مخالفت نظرانداز؛ 30میٹرکی ہی توسیع کے ساتھ کام شروع

شرالی میں قومی شاہراہ کی تعمیر 45میٹر کی توسیع کے ساتھ ہی کی جائے ، کسی حال میں بھی توسیع کو 30میٹر تک کم کرنے نہیں دیں گے۔  مقامی  عوام کی سخت مخالفت کے باوجود ضلع انتطامیہ بدھ کو 30 میٹر کی توسیع کے ساتھ شاہراہ تعمیری کام کی شروعات کی۔