آئی اے ایس افسر سے بدکلامی اور دھمکی کا معاملہ؛ وزیراعلی سدارامیا کا رکن اسمبلی کو انتباہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th October 2017, 5:11 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 11اکتوبر (یو این آئی/ایس او نیوز ) کرناٹک کے وزیراعلی سدارامیا نے پارٹی کے رکن اسمبلی کی جانب سے آئی اے ایس افسر سے مبینہ بدکلامی اور انہیں دھمکی دینے پر شدید اعتراض کیا۔ اس تعلق سے جب میڈیا کے نمائندوں نے ان سے ردعمل جاننا چاہا تو انہوں نے کہا '' اس واقعہ کا علم ہونے کے بعد میں نے رکن اسمبلی شیوامورتی کو سنجیدگی کے ساتھ مشورہ دیا کہ وہ ایسی سرگرمیوں میں ملوث نہ ہوں ۔مجھے ہنوز اس تعلق سے تفصیلات نہیں ملی ہیں۔ رپورٹ ملنے کے بعد میں کارروائی کروں گا۔

'' بتایا جاتا ہے کہ رکن اسمبلی سکریٹری کامرس ' معدنیات و زوالوجیکل ڈپارٹمنٹ راجندر کمار کٹاریہ سے بار بار ملاقات کررہے تھے اور ان کے بیٹے کی کانکنی کے لائسنس کی درخواست کو منطوری دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے ان سے مبینہ طور پر بدکلامی کی گئی۔تاہم رکن اسمبلی نے بدکلامی یا دھمکی دینے کے الزامات کی تردید کی۔ اسی دوران کٹاریہ نے آئی اے ایس آفیسرس ایسوسی ایشن کے صدر پی روی کمار ' چیف سکریٹری سبھاش چندرا کنتیا ' پرنسپال سکریٹری ایل کے عتیق سے اس تعلق سے شکایت کرتے ہوئے اس مسئلہ کو سدارامیا کے علم میں لایا۔کٹاریہ نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گذشتہ روز پیش آئے اس واقعہ کے بعد میں نے سدارامیا سے ملاقات کی اور ان سے کہا کہ ان حالات میں فرائض انجام دینا میرے لئے مشکل ہوگا۔ میں نے پولیس سے شکایت کرنے کے امکان پر غور کیا تھا تاہم اس سے میں نے گریز کیا۔یہ کہتے ہوئے کہ کانکنی کے لئے لائسنس دینے سپریم کورٹ کی ہدایت کی خلاف ورزی کرتے ہوئے وہ کسی مخصوص شخص کی حمایت نہیں کرسکتے ' کٹاریہ نے کہا کہ جب عدالت عظمیٰ کرناٹک میں کانکنی کی تجارت پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہے ' کسی کی بھی حمایت ممکن نہیں ہے ۔چیف سکریٹری کو لکھے گئے خط میں کٹاریہ نے کہا کہ رکن اسمبلی کے فرزند سورج نے سدیشور ا درگا گاوں کے سروے نمبر 78کی 6ایکر اراضی کو کانکنی کے لئے لیز پر دینے کی منظوری کی خواہش کی تھی۔ قواعد کے مطابق نائک کی جانب سے داخل کردہ درخواست نامناسب ہے ۔ کٹاریہ نے الزام لگایا کہ رکن ا سمبلی نے کانکنی و معدنیات کے ڈائرکٹر سے اس فائل کی منظوری حاصل کرنے کے لئے ان پر دباو ڈالنے کی کوشش کی ہے ۔ کٹاریہ نے کہا کہ رکن اسمبلی نے کہا کہ وہ حکومت ہیں اور ان کے احکام پر عمل کیا جانا چاہئے ۔ اگر ان کے احکام پر عمل نہیں کیا گیا تو مستقبل میں سنگین عواقب کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔ کٹاریہ نے اپنے خط میں الزام لگایا کہ رکن اسمبلی نے عوام کے سامنے نہ صرف مجھ سے بدکلامی کی بلکہ کہا کہ میں نے محکمہ کی رقم کو لوٹ لیا ہے ۔نائک نے ان الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایس سی /ایس ٹی ویلفیر لیجسلیچر کمیٹی کے صدر ہیں اور مراعات سے محروم طبقہ کی بہبود کے لئے ہی آئی اے ایس افسر سے ملاقات کی گئی ہے ۔
 

ایک نظر اس پر بھی

نتن گڈکری 500کلومیٹر شاہراہ سے متعلق پروجیکٹوں کا سنگ بنیادرکھیں گے

سڑک ٹرانسپورٹ اور شاہراہوں، جہاز رانی، آبی وسائل، ندیوں کی ترقی اور گنگا کی صفائی کے وزیرنتن گڈکری آج کرناک کے شموگہ ضلع میں 873.5 کروڑ روپے مالیت کے 138.5 کلومیٹر شاہراہوں کے پروجیکٹوں سے متعلق سنگِ بنیادرکھا۔

کسان لیڈر پٹنیا چل بسے۔21؍فروری کو آخری رسومات بشمول وزیراعلیٰ کئی قائدین نے آخری دیدار کیا۔ کسان برادری کا ناقابل تلافی نقصان

کبڈی کا کھیل دیکھنے کے دوران دل پر شدید دورہ پڑنے سے کل فوت ہوجانے والے کسان لیڈر و رکن اسمبلی کے ایس پٹنیا کی آخری رسومات چہارشنبہ 21فروری کو ان کے آبائی گاؤں کیتناہلی میں ادا کی جائیں گی۔

22فروری ووٹر لسٹ میں نام داخل کرنے کی آخری تاریخ؛ کرناٹکا کے عوام توجہ دیں

اگلے دوایک مہینوں میں منعقد ہونے والے اسمبلی انتخابات میں حق رائے دہی استعمال کرنے کے لئے فہرست رائے دہندگان (ووٹرلسٹ) میں نام شامل کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس سلسلے میں الیکشن کمشنر  کی طرف سے جاری بیان کے مطابق 22فروری نام درج کروانے کی آخری تاریخ ہوگی۔

بنگلور میں 12 مارچ سے ہوگی ،کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات کیلئے مفت کوچنگ؛ مسلمانوں کے لئے سنہرا موقع

اگلے ماہ 12 مارچ سے طہ ایجوکیشنل ٹرسٹ بنگلور کی جانب سے کے اے ایس اور آئی اے ایس امتحانات میں حصہ لینے والوں کے  لئے  مفت کوچنگ کا انتظام کیا گیا ہے، جس میں شریک ہوکر امتحانات میں حصہ لینے والے خواہش مند طلبہ و طالبات  فائدہ اُٹھاسکتے ہیں۔

بنگلور میں جے ڈی ایس کا شاندار اجلاس؛ مایاوتی کی شرکت؛ کہا مودی حکومت اب آخری سانس لے رہی ہے؛ کمارسوامی نے جاری کی 126 اُمیدواروں کی پہلی فہرست

شہر کے یلہنکا میں جنتادل (ایس) کا  شاندار جلسہ کمارا پرو یاترا کنونشن کے نام پر سنیچر شام کو منعقد ہوا ، جس میں ریاست کے مختلف گائوں اور دیہاتوں سے کثیر تعداد میں لوگوں نے   شرکت کی۔ اس موقع پر سابق وزیراعلیٰ  کماراسوامی نے  ریاست کرناٹک میں آئندہ دو  تین ماہ بعد ہونے والے ...

سدارامیا اور دیش پانڈے کے ہاتھوں ای وہیکلس کاآغاز فضائی و صوتی آلودگی پر قابو پانے بجلی سے چلنے والی سواریاں ناگزیر

ایوان سیاست ودھان سودھا کے اطراف ہمیشہ سیاسی ہماہمی اور قائدین کی گہما گہمی رہتی ہے۔ لیکن ہفتہ کے دن یہاں کا منظر کچھ بدلا ہوا تھا۔ ودھان سودھا کے سامنے آج نیلی رنگ کی کاروں، دوپہیہ گاڑیوں اور آٹو رکشاؤں کی قطاریں دیکھی گئیں ۔