امت شاہ نے فرقہ وارانہ ماحول خراب کرنے کی کوشش کی، نوٹس جاری کرے الیکشن کمیشن: کانگریس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 5th December 2018, 1:37 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،04؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) کانگریس نے تلنگانہ اسمبلی انتخابات سے منسلک اپنے منشور کے بارے میں بی جے پی صدر امت شاہ کے بیان کو لے کر منگل کو الیکشن کمیشن کا رخ کیا اور کہا کہ فرقہ وارانہ ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کرنے کے لئے شاہ کو نوٹس جاری کیا جانا چاہئے۔

پارٹی کے ایک وفد نے الیکشن کمیشن سے ملاقات کر کے شاہ کو نوٹس جاری کئے جانے کے علاوہ مدھیہ پردیش میں وی ایم سے منسلک شکایات، تلنگانہ کانگریس کمیٹی کے ایگزیکٹو صدر ریوت ریڈی کی گرفتاری اور تلنگانہ کے نگراں وزیر اعلی کے چندرشیکھر راؤ کی کابینہ اجلاس کو لے کر بھی الیکشن کمیشن کو آگاہ کیا۔ الیکشن کمیشن سے ملاقات کے بعد کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے کہاکہ امت شاہ نے تلنگانہ میں کانگریس کے منشور کے بارے میں غلط بیانی ہے۔انہوں نے فرقہ وارانہ ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کی ہے۔ہم نے الیکشن کمیشن پر زور دیا کہ اس کے لئے شاہ کو نوٹس جاری کیا جائے۔

انہوں نے تلنگانہ کی ایک عوامی جلسے میں شاہ کے اس بیان کا حوالہ دیا جس میں بی جے پی صدر نے ریاست میں مساجد اور گرجا گھروں کو مفت بجلی دینے کے مبینہ انتخابی وعدے کو لے کر کانگریس پر حملہ بولا تھا۔چندر شیکھر راؤ کو مبینہ طور پر دھمکی دینے کے معاملے میں ریوت ریڈی کی گرفتاری کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے سبل نے کہا کہ انتخابات کے وقت یہ سب کیا گیا ہے اور اس پر کمیشن کو نوٹس لینا چاہئے۔مدھیہ پردیش کانگریس کمیٹی کے صدر کمل ناتھ نے کہا کہ ریاست سے ای وی ایم کو لے کر بہت شکایتیں آ رہی ہیں کہ افسر گڑبڑی کر رہے ہیں۔کمیشن کو متعلقہ حکام کے خلاف کارروائی کرنی چاہئے۔الیکشن کمیشن پہنچے کانگریس وفد میں پارٹی کے خزانچی احمد پٹیل، کمل ناتھ اور کپل سبل شامل تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔