کاروار میں معذور طالبہ کو امتحان میں مراعات دینے کا معاملہ۔ ایڈیشنل ڈی سی نے جاری کیا ڈی ڈی پی یو کو نوٹس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th March 2019, 7:18 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 8؍مارچ (ایس او نیوز) کاروار کے باڈ میں واقع شیواجی کالج میں پی یو سی سال دوم کے امتحانات کے دوران ایک معذور طالبہ کو جوابی پرچہ لکھنے کے لئے غیر قانونی طور پر مددگار دئے جانے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرنے ڈپٹی ڈائریکٹرپری یونیورسٹی کو وجہ بتاؤ نوٹس جاری کردیا ہے۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق یکم مارچ کو شیواجی کالج میں ایک نیم اندھی طالبہ کو قانونی طور پر گنجائش نہ ہونے کے باوجود جوابی پرچہ لکھنے کے لئے مدد گار فراہم کیے جانے کی شکایت موصول ہوئی تھی۔ اس کا جائزہ لینے کے لئے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ایس یوگیش راؤ اور اسسٹنٹ کمشنر ابھیجین مذکورہ کالج میں پہنچے۔ وہاں پر اس وقت کم بینائی کا شکار ایک طالبہ کا پرچہ بی کام فائنل ایئر کی طالبہ مددگار کے طور پر لکھتی ہوئی پائی گئی۔قانونی طور پر کسی طالب علم کو اسی وقت مددگار فراہم کیا جاسکتا ہے جبکہ وہ صد فی صد معذور ہو۔ یعنی دونوں ہاتھ یا دونوں آنکھوں سے معذور ہو۔ اس کے علاوہ جس مضمون کے لئے معذور طالب علم امتحان دے رہا ہے پرچہ لکھنے والا مددگار بھی اسی مضمون کا طالب علم ہو۔

موجودہ معاملے میں افسران کے معائنے سے پتہ چلا کہ طالبہ کے پاس 45فی صد معذور ہونے کی طبی سرٹفکیٹ تھی۔ اس کے علاوہ جوابی پرچہ لکھنے والی مددگار بی کام فائنل ایئر کی طالبہ تھی۔ اس طرح دو نوں پہلوؤں سے قانون شکنی کرتے ہوئے طالبہ کو مددگار فراہم کیے جانے کی بات ثابت ہوگئی تو ایڈیشنل ڈی سی نے اس کے لئے ڈی ڈی پی یو کو نوٹس دے کر پوچھا ہے کہ آخر یہ قانون شکنی کیوں کی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لاک ڈاون سے بہت جلد بھٹکل کے عوام کو مل سکتی ہے راحت؛ تعلقہ انتظامیہ نے ذمہ داران کے ساتھ رکھی میٹنگ؛ ضلعی انتظامیہ کرے گی حتمی فیصلہ

کویڈ.19 وباء کے خلاف لڑی گئی جنگ کے بعد اب چونکہ  بھٹکل میں ایک حد تک اس وباء پر قابو پالیا گیا ہے اور خوش آئند بات یہ ہے کہ  کورونا سے متاثرہ تمام لوگ بھی صحت یاب ہوکر اسپتال سے ڈسچارج ہورہے ہیں، بھٹکل میں اب گذشتہ دو ماہ سے چل رہے لاک ڈاون میں  راحت دئے جانے کے آثار صاف ہوگئے ...

اترکنڑا میں بھی بڑھ رہے ہیں کورونا کے معاملات؛ آج ہوناور کے ایک شخص کی رپورٹ آئی پوزیٹو؛ اس کے ساتھی بھٹکل میں ہیں کورنٹائن

  مہاراشٹرا سے کرناٹک میں داخل ہونے والوں میں جس طرح ریاست میں کورونا کے معاملات میں تیز رفتاری کے ساتھ  اضافہ ہورہا ہے اُسی طرح ممبئی سے ضلع اُترکنڑا میں داخل ہونے والوں میں بھی ہرروز کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ کل اتوار کو ضلع کے یلاپور میں  میاں اور ...

کورونا اَپ ڈیٹ:اڈپی ضلع کے تین پولیس اسٹیشنوں کو کیا گیا سیل ڈاؤن۔کارکلا،ہلیال اور برہماور میں پولیس افسران اور اہلکارآئے کووِڈ 19کی زد میں 

اڈپی ضلع میں کووِڈ وباء کا قہر کا کچھ زیادہ ہی بڑھتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ اب تک ممبئی اور خلیج سے واپس لوٹنے والوں میں مرض پائے جانے کی وجہ سے یہاں مریضوں کا گراف بڑھتا جارہا تھا۔ لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ پولیس افسران اور اہلکار بھی اس کی زد میں آ گئے ہیں۔

بھٹکل اور ساحلی کرناٹکا میں پہلی مرتبہ گھروں میں ہی منائی جائی جارہی ہے عید ؛ کورونا بحران کے سبب دنیا بھر میں پائی جارہی ہے مایوسی

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا بالخصوص اُڈپی، مینگلور اور پڑوسی ریاست کیرالہ میں سنیچر کو  30 روزے مکمل کرنے کے بعد آج اتوار کو عید الفطر منائی جارہی ہے، مگر انسانی تاریخ میں پہلی مرتبہ مسلمان عید گھروں میں ہی  منانے پر مجبور ہیں۔ عیدالفطر کے موقع پر اخوت، بھائی چارگی، غم گساری، ...

بھٹکل کی فکروخبر میڈیا کی طرف سے فقہ شافعی آن لائن کوئیز مقابلہ؛ کوئیز جیتنے والوں کے لئے پچاس ہزار روپئے کے انعامات

بھٹکل کی فکروخبر میڈیا کی طرف سے فقہ شافعی کا آن لائن کوئیز مقابلہ منعقد کیا گیا ہے جس میں کوئیز جیتنے والوں کے لئے پچاس ہزار روپئے کے انعامات تقسیم کئے جائیں گے۔ اس  بات کی اطلاع  مدیر فقہ شافعی فکروخبر بھٹکل مولوی  سید اظہر برماور ندوی  نے دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ملک بھر ...

اُڈپی میں پھر پائے گئے پانچ کورونا پوزیٹو معاملات؛ بیندور میں بھی نکلے تین کووِ ڈ پوزیٹیو معاملات۔ اڈپی میں متاثرہ افراد کی تعداد ہوگئی 55

اڈپی ضلع کے بیندور میں مہاراشٹرا سے واپس لوٹے ہوئے تین افراد کی کووِڈجانچ رپورٹ پوزیٹیونکلی ہے۔ جس کے بعد ضلع میں متاثرین کی تعداد 50ہوگئی ہے۔ان میں ایکٹیو معاملات کی تعداد 46ہے۔