غرب اردن: اسرائیلی فائرنگ سے فلسطینی نوجوان شہید

Source: S.O. News Service | Published on 20th April 2017, 7:25 PM | عالمی خبریں |

مقبوضہ فلسطین،20اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)اسرائیلی فوج نے فلسطین کے دریائے اردن کے مغربی کنارے میں ایک فلسطینی کو گولیاں مار کر شہید کردیا۔ قابض فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ فلسطینی نوجوان کو گولیاں اس وقت ماری گئیں جب اس نے اپنی کار سے ایک یہودی آباد کار کو کچل کر زخمی کردیا۔
فلسطینی وزارت صحت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بدھ کی شام کو قابض صہیونی فوج نے غرب اردن کے جنوبی شہر بیت لحم میں السواحر کے مقام پر ایک 21 سالہ فلسطینی نوجوان کو گولیاں مار کر شہید کردیا۔ شہید نوجوان کی شناخت صہیب موسیٰ مشہور مشاہرہ کے نام سے کی گئی ہے۔
 فلسطینی محکمہ صحت کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ قابض فوج نے فلسطینی نوجوان کو یہودی آباد کاروں کو اپنی گاڑی تلے کچلنے کے شبے میں گولیاں ماریں۔عینی شاہدین کے مطابق جنوبی بیت لحم میں عتصیون چوک میں اسرائیلی فوج نے ایک فلسطینی نوجوان کی کار پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں اس میں سوار نوجوان شدید زخمی ہوگیا۔اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ فلسطینی نوجوان نے پانی گاڑی ایک یہودی آباد کار پر چڑھا دی تھی جس پر فلسطینی کو فدائی حملہ آور ہونے کے شبے میں گولیاں مری گئیں۔ادھر اسرائیلی ذرائع ابلاغ میں یہ اطلاعات بھی آئی ہیں کہ فلسطینی شہری کی کار کی ٹکر سے ایک 60 سالہ یہودی معمولی زخمی ہوا ہے جسے اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وینزویلا کا امریکی ریاستوں کی تنظیم کیواے ایس کو چھوڑنے کا فیصلہ

لاطینی امریکی ملک وینزویلا نے اعلان کیا ہے کہ وہ امریکی ریاستوں کی تنظیم OAS کو چھوڑ رہا ہے۔ وینزویلا کے وزیر خارجہ ڈیلسی روڈریگز کے مطابق ان کی حکومت واشنگٹن میں قائم اس علاقائی اتحاد سے نکلنے کے لیے دو سالہ عمل کا آغاز کر دے گی۔ وینزویلا

سالانہ 7000 اسرائیلی اہلکار سروس سے فرار ہونے لگے

اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری کردہ اعدادو شمار میں بتایا گیا ہے کہ فوج میں مدت ملازمت سے قبل فوجیوں کے فرار کی شرح میں اضافہ ہوا ہے اور سالانہ قریبا 7000 اسرائیلی فوجی افسر اور سپاہی فوجی خدمت ترک کررہے ہیں