غزہ میں اسرائیلی دہشت گردی جاری، 60 شہید، 3 ہزار زخمی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2018, 1:07 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

غزہ،15 مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں حق واپسی کے لیے پرامن احتجاج کرنے والے فلسطینیوں پر اسرائیلی فوج کا وحشیانہ تشدد جارہی ہے جس کے نتیجے میں مزید متعدد فلسطینی شہید ہوگئے ہیں جس کے بعد گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران شہداء4 کی تعداد 60 ہوگئی ہے اور قریبا تین ہزار کے قریب زخمی ہیں۔مظاہروں کے دوران فلسطینیوں نے ٹائر جلائے اور اسرائیلی فوجیوں پر پتھراؤ کیا اور پیٹرول بم پھینکے جبکہ فوجی نشانے بازوں نے مظاہرین پر فائرنگ کی۔اطلاعات کے مطابق سوموار کو لاکھوں فلسطینی غزہ کی مشرقی سرحد پر جمع ہوئے اور حق واپسی مارچ شروع کیا۔ اسرائیلی فوج نے فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ان پر آتشیں گولیاں چلائیں۔ کم سے کم 58 فلسطینیوں کی شہادتوں کی تصدیق کی جا چکی ہے جبکہ 2800 زخمی ہیں۔زخمیوں میں 225 بچے، 80 خواتین،12 صحافی، 17 طبی امدادی کارکن شامل ہیں۔54 کی حالت انتہائی خطرناک،76 کی خطرناک اور 1300 کو درمیانے درجے کے زخم آئے ہیں۔90 فلسطینیوں کو سر اور گردن میں گولیاں ماری گئیں جب کہ 192 فلسطینی مظاہرین کے جسم کے بالائی حصے کو نشانہ بنایا گیا۔دوسری جانب فلسطین میں اسرائیلی فوج کے وحشیانہ حملوں کی پوری دنیا میں شدید مذمت جاری ہے۔ آج منگل کو سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس بھی طلب کیا گیا ہے جس میں غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کے وحشیانہ تشدد پرغور کیا جائیگا۔ادھر فلسطینی صدر محمود عباس نے غزہ کی پٹی میں فلسطینیوں کے قتل عام کو اسرائیل کی بربریت قرار دیتے ہوئے عالمی برادری سے قتل عام کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔فلسطینی صدر محمود عباس نے صدر ٹرمپ کے سفارتخانے کو منتقل کرنے کے فیصلے کو 'صدی کا تھپڑ' قرار دیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سری لنکا: مسلم مخالف فسادات میں ایک شخص ہلاک، مساجد کو نقصان

حکومتی وزیر رؤف حکیم کے مطابق مسلم مخالف فسادات میں ایک مسلمان ہلاک ہو گیا ہے جبکہ مسلمانوں کی املاک کو بھی نذر آتش کرنے کے واقعات سامنے آئے ہیں۔ رؤف حکیم کا تعلق مسلم کانگریس نامی سیاسی جماعت سے ہے۔ یہ سیاسی پارٹی حکومتی اتحاد میں شامل ہے۔ حکیم کے مطابق مشتعل افراد نے پیر تیرہ ...

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔