شام: دمشق کے نواح میں اسرائیلی بم باری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th February 2018, 12:19 PM | عالمی خبریں |

دمشق/ دبئی7فروری ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) شام میں بشار حکومت کی خبر رساں ایجنسی SANA نے بتایا ہے کہ شامی فوج نے دمشق کے نواح میں اسرائیلی بم باری کی نئی کارروائی کا راستہ روک دیا۔ادھر شامی کارکنان کا کہنا ہے کہ دمشق کے نواحی علاقے جمرایا میں واقع سائنس ریسرچ سینٹر اسرائیلی میزائل حملے کا نشانہ بنا۔ شامی حکومت کا دعوی ہے کہ اس کے دفاعی نظام نے مذکورہ ٹھکانے پر اسرائیلی حملے کو پسپا کر دیا۔گزشتہ ماہ 9 جنوری کو اسرائیلی فوج نے شامی اراضی پر فضائی حملوں میں میزائل داغے تھے۔ شامی فوج کے بیان کے مطابق اس کے نتیجے میں ایک عسکری مقام کے نزدیک مادی نقصان ہوا۔بیان کے مطابق "لبنان کی اراضی کے اوپر سے متعدد میزائل دمشق کے نواحی علاقے قطیفہ کی سمت داغے گئے۔ شامی فوج نے ان میزائلوں کا راستہ روکا اور ایک طیارے کو نقصان بھی پہنچایا ۔بیان میں بتایا گیا کہ اسرائیل نے مقبوضہ گولان سے بھی زمین سے زمین مار کرنے والے دو میزائل داغے جن کو شامی فوج نے مار گرایا۔اس سے قبل اسرائلی طیاروں نے طبریا سے چار میزائل داغے تھے جن کو شامی حکومت کی فوج نے ناکام بنا دیا۔سال 2011 سے شام میں تنازع کے آغاز سے اب تک اسرائیل کئی بار شام میں بشار کی فوج اور حزب اللہ کے عسکری اہداف کو نشانہ بنا چکا ہے۔ اس کے علاوہ دمشق کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے نزدیک بھی کئی ٹھکانوں پر بم باری کی گئی۔

ایک نظر اس پر بھی

داعش کے ہاتھوں اغوا130 شامی خاندانوں کا انجام بدستور نامعلوم

چند ہفتے قبل شام میں شدت پسند تنظیم "داعش" کے جنگجوؤں نے دیر الزور میں آندھی اور طوفان سے فائدہ اٹھا کر "البحرہ" پناہ گزین کیمپ پر حملہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے جب کی داعش نے 130 خاندانوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔

ٹرمپ کا وزیر دفاع جم میٹس کو ہٹانے کا اشارہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عندیہ دیا ہے کہ وزیر دفاع جم میٹس کو بھی اْن کے عہدے سے برطرف کیا جا سکتا ہے۔صدر ٹرمپ نے اتوار کے روز امریکی ٹیلی وژ ن چینل سی بی ایس کے پروگرام 60 Minutes میں انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اْنہیں اس بات کی کوئی خبر نہیں کہ جم میٹس عہدہ چھوڑنے والے ہیں۔