کیا حقیقتًا اسلام عورتوں کا دشمن ہے ؟؟؟مدہوبنی  سے محمد ولی اللہ ابن محمد زبیر قاسمی کی خصوصی رپورٹ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 26th October 2016, 5:42 AM | اسپیشل رپورٹس |

عصر حاضر کے ہر کس و ناکس خواہ وہ پانچ دس سال کا معصوم بچہ کیوں نہ ہو یہ بات انکو بخوبی معلوم ہے کہ زمانہ جاہلیت میں عورتوں پر ظلم کے پہاڑ توڑے جاتے تھے اور عورت ذات کو ایک حقیر سی شئی تصور کی جاتی تھی تاریخ کے اوراق ،زمین کی پستی و آسمان کی بلندی پر  کی ہر شئی عینی شاہد ہیکہ قبل اسلام یہودیوں کے یہاں کافی عرصہ تک اس بارے میں اختلاف رہا ہے کہ عورت انسان ہے یا نہیں ؟ بہت سے یہودیوں کا یہی خیال تھا کہ وہ انسان نہیں ؛بلکہ مردوں کی خدمت کے لئے انسان نما حیوان ہے لہذا اسے ہنسنے ،بولنے کا کوئی حق نہیں، بعض یہودیوں کا یہ خیال تھا کہ عورت شیطان کی سواری اور بچھو ہے جو ہر انسان کو ہروقت ڈنک مارنے کی فکر میں رہتی ہے 

عیسائیوں کا ابتدائی نطریہ یہ تھا کہ عورت ہونا گناہ کی اماں اور بدی کی جڑ ہے ، 582 ھ میں کلیسا کی ایک مجلس میں یہ فتوی صادر کیا گیا کہ عورتیں روح نہیں رکھتیں۔ ہندؤوں کے یہاں سب مکرم اور قابل فخر عورت وہی سمجھی جاتی تھی جو شوہر کہ چتا پر جل کر مر جائے   لیکن اسلام نے آتے ہی ان ساری برائیوں کا خاتمہ کر دیا عورت کو عزت کے مقام پر فائز کیا اور بیٹی باپ کے لئے رحمت بھائی کے لئے نعمت  شوہر کے لئے سکون اولاد کیلئے جنت قرار دیا۔

ذات باری نے عورتوں کے حقوق کے متعلق باضابطہ طور پر "سورہ نساء" نازل فرما دیا اس میں عورتوں کے میراث کے متعلق کھل کر بتا دیا اسی طرح عورت کو ایک عزت کا مقام دیا لیکن فرعون وقت بدنام زمانہ ظالم ہند نریندر مودی نے اپنی سیاسی روٹی سیکنے کے لئے بھولی بھالی "مسلم عورتوں "کا سہارا لیکر "تین طلاق کا بہانہ بنا کراسلامی قوانین میں دخل اندازی کی کوشش کی ہے جو مسلمانوں کے دین  میں دست درازی ہے ۔

جس ظالم نے گجرات کی مسلم عورتوں کی عزت نیلام کروائی اور مسلم عورتوں کو زندہ جلا دیا  ننھے ننھے معصوم لڑکیوں کو مادر رحم سے نکال کر خون کی ہولیاں کھیلی آج وہ ظالم یہ کہہ رہا ہے کہ "مسلم بہنوں کے ساتھ ظلم نہیں ہونے دیا جائے گا " آج اس ظالم کو انصاف اور  حقوق نظر آ رہے ہیں تو "ذکیہ جعفری "جیسی کئی مظلومہ انصاف کا  انتظار کر رہی ہے اسے انصاف دے ،مظفر نگر کے مظلومین کو انصاف دے۔ لیکن ایسا نہیں ہوگا کیونکہ "ظالم ہند "خود جیل کی سلاخوں میں چلا جائے گا۔ اگر انصاف دینا ہے تو گجرات کی "جسودا بین "کو انصاف دو اسکی جوانی جو کسی کے انتظار میں گزری ہے وہ لوٹا دو اور اسکو سہاگن کا حق لوٹا دو ۔

لیکن غور کیا جائے تو اس میں کچھ خامیاں ہماری بھی ہے کہ ہم نے اپنی اولاد کو عصری تعلیم مغربی تہذیب میں دینا گوارہ کیا اور اسلامی تہذیب کو حقیر سمجھا بروز ہفتہ ۲۳ اکتوبر کو ایک عصری تعلیم یافتہ مجھ سے کہہ رہا ہیکہ میں مودی کی اس مہم میں ساتھ ہوں عورتوں کو حق ملنی چاہئے۔ جب اس ناچیز نے اسے سمجھایا تو وہ پھر دستخطی مہم میں ساتھ دیا۔ ایسے ہزاروں افراد ہوں گے لیکن انہیں سمجھائے گا کون ؟

برباد گلستاں کرنے کو ایک ہی الو کافی تھا 
ہر شاخ پہ الو بیٹھا ہے انجام گلستاں کیا ہوگا

از :محمد ولی اللہ ابن محمد زبیر قاسمی تیسی مدہوبنی 
شریک دورۂ حدیث دارالعلوم وقف دیوبند
انچارج مجوزہ روزنامہ فاران دہلی 

ایک نظر اس پر بھی

جیل میں بندہیرا گروپ کی ڈائریکٹر نوہیرانے فوٹو شاپ جعلسازی سے عوام کو دیا دھوکہ۔ گلف نیوز کا انکشاف

دبئی سے شائع ہونے والے کثیر الاشاعت انگریزی اخبار گلف نیوز نے ہیرا گولڈ کی ڈائرکٹر نوہیرا شیخ کی جعلسازی کا بھانڈہ پھوڑتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ    کس طرح اس نے فوٹو شاپ کا استعمال کرتے ہوئے بڑے بڑے ایوارڈ حاصل کرنے اور مشہور ومعروف شخصیات کے ساتھ اسٹیج پر جلوہ افروز ...

کہ اکبر نام لیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔!ایم ودود ساجد

میری ایم جے اکبر سے کبھی ملاقات نہیں ہوئی۔میں جس وقت ویوز ٹائمز کا چیف ایڈیٹر تھا تو ان کے روزنامہ Asian Age کا دفتر جنوبی دہلی میں‘ہمارے دفتر کے قریب تھا۔ مجھے یاد ہے کہ جب وہ 2003/04 میں شاہی مہمان کے طورپرحج بیت اللہ سے واپس آئے تو انہوں نے مکہ کانفرنس کے تعلق سے ایک طویل مضمون تحریر ...

ملک کے موجودہ حالات اور دینی سرحدوں کی حفاظت ....... بقلم : محمد حارث اکرمی ندوی

   ملک کے موجودہ حالات ملت اسلامیہ ھندیہ کےلیے کچھ نئے حالات نہیں ہیں بلکہ اس سے بھی زیادہ صبر آزما حالات اس ملک اور خاص کر ملت اسلامیہ ھندیہ پر آچکے ہیں . افسوس اس بات پر ہے اتنے سنگین حالات کے باوجود ہم کچھ سبق حاصل نہیں کر رہے ہیں یہ سوچنے کی بات ہے. آج ہمارے سامنے اسلام کی بقا ...

پارلیمانی انتخابات سے قبل مسلم سیاسی جماعتوں کا وجود؛ کیا ان جماعتوں سے مسلمانوں کا بھلا ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابات یا اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی مسلم سیاسی پارٹیاں منظرعام  پرآجاتی ہیں، لیکن انتخابات کےعین وقت پروہ منظرعام سےغائب ہوجاتی ہیں یا پھران کا اپنا سیاسی مطلب حل ہوجاتا ہے۔ اورجو پارٹیاں الیکشن میں حصہ لیتی ہیں ایک دو پارٹیوں کو چھوڑکرکوئی بھی اپنے وجود کو ...

بھٹکل میں سواریوں کی  من چاہی پارکنگ پرمحکمہ پولس نے لگایا روک؛ سواریوں کو کیا جائے گا لاک؛ قانون کی خلاف ورزی پر جرمانہ لازمی

اترکنڑا ضلع میں بھٹکل جتنی تیز رفتاری سے ترقی کی طرف گامزن ہے اس کے ساتھ ساتھ کئی مسائل بھی جنم لے رہے ہیں، ان میں ایک طرف گنجان  ٹرافک  کا مسئلہ بڑھتا ہی جارہا ہے تو  دوسری طرف پارکنگ کی کہانی الگ ہے۔ اس دوران محکمہ پولس نے ٹرافک نظام میں بہتری لانے کے لئے  بیک وقت کئی محاذوں ...

غیر اعلان شدہ ایمرجنسی کا کالا سایہ .... ایڈیٹوریل :وارتا بھارتی ........... ترجمہ: ڈاکٹر محمد حنیف شباب

ہٹلرکے زمانے میں جرمنی کے جو دن تھے وہ بھارت میں لوٹ آئے ہیں۔ انسانی حقوق کے لئے جد وجہد کرنے والے، صحافیوں، شاعروں ادیبوں اور وکیلوں پر فاشسٹ حکومت کی ترچھی نظر پڑ گئی ہے۔ان لوگوں نے کسی کو بھی قتل نہیں کیا ہے۔کسی کی بھی جائداد نہیں لوٹی ہے۔ گائے کاگوشت کھانے کا الزام لگاکر بے ...