ایران کا مقامی سطح پر جنگی جہاز تیار کرنے کا دعویٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th August 2018, 1:15 PM | عالمی خبریں |

تہران19اگست (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) ایران کے وزیرِ دفاع بریگیڈیر جنرل امیر حاتمی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ نیا طیارہ آئندہ ہفتے دفاعی صنعت کے قومی دن کے موقع پر نمائش کے لیے پیش کیا جائے گا۔

ایران نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے مقامی سطح پر جدید جنگی طیارہ بنا لیا ہے جسے آئندہ ہفتے منظرِ عام پر لایا جائے گا۔

ایران کے وزیرِ دفاع بریگیڈیر جنرل امیر حاتمی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ نیا طیارہ آئندہ ہفتے دفاعی صنعت کے قومی دن کے موقع پر نمائش کے لیے پیش کیا جائے گا اور ان کے بقول لوگ اسے "اڑتا ہوا دیکھیں گے۔"

ایران میں 22 اگست ہر سال دفاعی صنعت کے قومی دن کے طور پر منایا جاتا ہے جس کے دوران ایران میں تیار کیے جانے والے اسلحے کی نمائشیں منعقد ہوتی ہیں۔

خبر رساں ایجنسی 'فارس' کے مطابق ایرانی وزیرِ دفاع نے مزید کہا ہے کہ میزائل پروگرام کی ترقی ان کے ملک کی ترجیحِ اول ہے اور اس شعبے میں ایران کی پوزیشن بہت بہتر ہے۔

تاہم جنرل حاتمی کے بقول ایران کو اپنے میزائل پروگرام کو ابھی مزید آگے لے کر جانا ہے جس کے لیے کوششیں جاری ہیں۔

امریکی اور بین الاقوامی پابندیوں کے باعث ایرانی فوج بین الاقوامی منڈی سے بیشتر بڑا اسلحہ نہیں خرید سکتی جس کے باعث ایران میں مقامی سطح پر اسلحہ سازی ایک بڑی صنعت کی حیثیت اختیار کرگئی ہے۔

لیکن ایران میں مقامی سطح پر تیار کیے جانے والے اسلحے اور جنگی آلات کی صلاحیت اور اثر اندازی پر مغربی ماہرین سوالات اٹھاتے رہے ہیں۔

ایک اندازے کے مطابق بین الاقوامی پابندیوں کے باعث ایرانی فضائیہ کے پاس محض چند درجن لڑاکا طیارے ہی بچے ہیں جن میں سے بیشتر روسی ساختہ مگ یا پرانے امریکی ماڈلز کے وہ طیارے ہیں جو ایران نے 1979ء کے اسلامی انقلاب سے قبل حاصل کیے تھے۔

ایران نے اس سے قبل 2013ء میں بھی مقامی سطح پر تیار کیا جانے والا جنگی طیارہ نمائش کے لیے پیش کیا تھا جسے 'قاہر 313' کا نام دیا گیا ہے۔

لیکن بعض ماہرین نے اس طیارے کی صلاحیت پر بھی شبہات کا اظہار کیا تھا۔

ایرانی وزیرِ دفاع کی جانب سے نئے طیارے کی تیاری کا اعلان ایسے وقت سامنے آیا ہے جب ایرانی بحریہ نے بھی مقامی سطح پر تیار کیا جانے والا جدید دفاعی نظام اپنے ایک جنگی جہاز پر نصب کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ایرانی بحریہ کے کمانڈر ریئر ایڈمرل حسین خانزادی نے ہفتے کو اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ کم فاصلے تک مار کرنے والے دفاعی نظام 'کمند' کی ساحلی علاقوں او رسمندر میں جانچ مکمل کرلی گئی ہے جس کے بعد اسے ایک جنگی جہاز پر نصب کردیا گیا ہے۔

ایرانی ایڈمرل نے کہا ہے کہ دفاعی نظام جلد ہی ایک اور جہاز پر بھی نصب کردیا جائے گا۔

ایرانی فوج 'پاسدارانِ انقلاب' نے رواں ماہ کے آغاز پر خلیجِ فارس میں جنگی مشقیں کرنے کا دعویٰ بھی کیا تھا جن کا مقصد دشمن کی جانب سے "ممکنہ خطرات کا مقابلہ کرنا تھا۔"

ایرانی فوج کی یہ تمام سرگرمیاں ایسے وقت ہو رہی ہیں جب صدر ڈو نلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ ختم کرنے کے بعد امریکہ ایران کشیدگی ایک بار پھر عروج پر پہنچی ہوئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایس بی آئی برطانیہ میں قانونی جنگ میں ٹیکس دہندگان کا پیسہ برباد کر رہا ہے : مالیا 

مسائل میں گھرے شراب کاروباری وجے مالیا نے ایک بار پھر سے قرض لوٹانے کی پیشکش اپنی بات دہرانے کے لئے سوشل میڈیا کا سہارا لیا ہے۔ انہوں نے SBI پر بھارتی ٹیکس دہندگان کا پیسہ برطانیہ میں مقدمے پر برباد کرنے کا الزام لگایا۔ برطانیہ کے ہائی کورٹ نے 63 سالہ مالیا کے لندن کے بینک اکاؤنٹ ...

تھائی لینڈ میں نوجوان جرمن خاتون سیاح کا ریپ کے بعد قتل

تھائی لینڈ میں جرمنی سے تعلق رکھنے والی ایک نوجوان خاتون سیاح کو ریپ کے بعد قتل کر دیا گیا۔ تھائی پولیس نے ایک مبینہ ملزم کو گرفتار کر لیا ہے، جس نے اس چھبیس سالہ سیاح کو ریپ کے بعد قتل کرنے کا اعتراف بھی کر لیا ہے۔تھائی لینڈ کے دارالحکومت بنکاک سے پیر آٹھ اپریل کو ملنے والی جرمن ...

جنگ مسلط کردہ یمن میں ہیضہ کی وبا، ویکسین رسائی کی منتظر

جنگ زدہ ملک یمن میں ہیضے کی ہلاکت خیز وبا کئی ملین افراد کو متاثر کر چکی ہے لیکن اقوام متحدہ کے اہلکاروں کو اب تک ادویات پہنچانے کی اجازت نہیں مل پائی۔یمن میں لاکھوں افراد ہیضے کے مرض میں مبتلا ہیں اور اب بھی ہر روز ہزاروں نئے کیسز سامنے آ رہے ہیں۔ سن 2017 کے موسم گرما میں اقوام ...