سابق ایرانی صدر ہاشمی رفسنجانی انتقال کر گئے،3 روزہ قومی سوگ کا اعلان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 12:08 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

تہران،9؍جنوری(ایس او نیوز ؍آئی این ایس انڈیا)ایران کے سابق صدر اور ملک کی نامور سیاسی شخصیت علی اکبر ہاشمی رفسنجانی 82برس کی عمر میں انتقال کر گئے ہیں۔ وہ دل کے عارضے میں مبتلا تھے۔اتوار کو تہران کے ہسپتال میں علی اکبر رفسنجانی کو لایا گیا، جہاں وہ انتقال کر گئے۔ایران کی حکومت نے اُن کے انتقال پر تین دن کے سوگ کا اعلان کیا ہے اور سابق صدر کی آخری رسومات تہران میں منگل کو ادا کی جائیں گی۔ اس موقع پر عام تعطیل ہو گی۔

سابق صدر ہاشم رفسنجانی سن 1934میں جنوب مشرقی ایران میں ایک کسان گھرانے میں پیدا ہوئے تھے۔وہ ایران میں سن 1989سے 1997تک صدارت کے عہدے پر فائز رہے تھے تاہم سن 2005میں انھیں محمود احمدی نژاد سے شکست ہوئی تھی۔ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای نے علی اکبر رفسنجانی سے اختلافات کے باوجود اُن کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے مشکل اور ناقابلِ برداشت قرار دیا۔آیت اللہ علی خامنہ ای نے علی اکبر رفسنجانی کو جد و جہد کا ساتھی قرار دیا۔ انھوں نے کہا کہ بعض اوقات اتنے طویل عرصے میں مختلف آرا اور اُن کے اظہار سے بھی دوستی ختم نہیں ہوئی۔

ہاشمی رفسنجانی مجمع تشخیص مصلحت نظام کے سربراہ تھے جس کا کام پالیمان اور شوریٰ نگہبان کے درمیان تنازعات کو حل کرنے کی کوشش کرنا ہے۔اصلاح پسند بن جانے والے انقلابی رہنما رفسنجانی ایرانی انقلاب کے بانیوں میں سے ایک ایسے رہنما ہیں، جنھوں نے مسلسل آٹھ برس تک عراق کی جانب شروع کی جانے والی جنگ کو ختم کروانے کے بعد ملک میں از سر نو تعمیری پروگرام شروع کیا۔انھیں سال 2013میں ملک کے 12ارکان پر مشتمل آئینی ادارے شورء نگہبان نے صدارتی انتخاب میں حصہ لینے کی اجازت نہ دیتے ہوئے نااہل قرار دے دیا تھا۔جس کے بعد انھوں نے انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے والے اصلاح پسند امیدوار حسن روحانی کی حمایت کا اعلان کیا۔سن 2005کی انتخابی شکست کے بعد ہاشمی رفسنجانی صدر کے سخت ترین ناقد بن گئے تھے۔

سن 2009کے انتخابات میں انھوں نے اصلاح پسندوں کا ساتھ دیا تھا تاہم ان انتخابات میں بھی سخت گیر احمدی نژاد دوسری بار صدر بنے میں کامیاب ہو گئے تھے۔حسن روحانی اور ہاشمی رفسنجانی کا کہنا تھا کہ اُن دونوں کے درمیان گہرے تعلقات ہیں۔سابق ایرانی صدر کے انتقال کے بعد ایران کے صدر حسن روحانی نے تہران کے ہسپتال میں کا دورہ بھی کیا۔سابق صدر رفسنجانی کا شمار ان رہنماؤں میں ہوتا تھا جو سیاسی قیدیوں کی آزادی اور آئین کے اندر رہ کر کام کرنے والی سیاسی جماعتوں کو مزید آزادی فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے تھے۔ہاشمی رفسنجانی کے بچے میں خبروں میں کافی نمایاں رہے۔ اُن کی بیٹی فیضی ہاشمی نے گذشتہ برس بہائی مذہبی اقلیت کے رہنما سے ملاقات کی۔ جنھیں گذشتہ سال ایران کی قیادت نے ملحد قرار دیا ہے۔اُن کے بیٹے مہدی حسن رفسنجانی کو سن 2015میں مالیاتی جرائم کی وجہ سے قید کی سزا سنائی گئی۔

ایک نظر اس پر بھی

محمود عباس غزہ میں بجلی کے بحران کو ہوا دینے کے ذمہ دار ہیں:حماس

اسلامی تحریک مزاحمت حماس نے صدر محمود عباس کے ایک بیان جس میں انہوں نے غزہ کی پٹی میں بجلی کے بحران پر تبصرہ کیا ہے کی شدید مذمت کی ہے۔ حماس کا ترجمان کا کہنا ہے کہ محمود عباس کا غزہ میں بجلی کے بحران سے متعلق بیان اس بات کا ثبوت ہے کہ فلسطینی اتھارٹی غزہ میں بجلی کے بحران کا ذمہ ...

سعودی عرب یمن میں مداخلت اور جارحیت بند کرے: ایرانی صدر

ایرانی صدر حسن روحانی نے سعودی عرب سے مطالبہ کیا کہ وہ یمن میں اپنی جارحیت اور مداخلت بند کرے۔ منگل کے روز تہران میں ایک نیوز کانفرنس میں ان کا کہنا ہے تھا کہ ایران کے سعودی عرب کے ساتھ اس سے زیادہ کوئی جھگڑا نہیں کہ وہ یمن اور بحرین میں اپنی مداخلت بند کرے۔ روحانی کے بقول دس ...

گیمبیا کے صدر نے ایمرجنسی نافذ کر دی

گیمبیا کے صدر یحییٰ جامع نے اپنا عہدہ چھوڑنے کے لیے مقرر کردہ دن سے صرف دو روز قبل ملک میں ہنگامی حالت نافذ کر دی ہے۔ جامع نے گزشتہ مہینے ہونے والے انتخابات کے نتائج کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

اوباما نے جاسوس میننگ کی سزا میں کمی کر دی

امریکی صدر باراک اوباما نے رحم دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سابقہ فوجی اہلکار چیلسی میننگ کی سزا کم کر دی ہے۔ وکی لیکس کو خفیہ راز مہیا کرنے کے جرم میں میننگ کو 35سال کی سزا ئے قید سنائی گئی تھی۔وائٹ ہاؤس کے مطابق باراک اوباما کی جانب سے اس اعلان کے بعد میننگ کی سزا 35سال سے کم کر کے سات ...

برلسکونی کے حلیف انتونیو تاجانی یورپی پارلیمان کے نئے اسپیکر

اٹلی کے سابق وزیر اعظم سلویو برلسکونی کے اتحادی اطالوی سیاستدان انتونیو تاجانی کو یورپی پارلیمان کا نیا اسپیکر منتخب کر لیا گیا ہے۔ 63 سالہ سابق صحافی تاجانی کا تعلق یورپی پارلیمان میں قدامت پسندوں کی پارٹی سے ہے۔فرانس کے شہر اسٹراسبرگ سے ملی رپورٹوں کے مطابق انتونیو تاجانی ...

نہتے فلسطینی بچے کا وحشیانہ قتل، فلسطین بھر میں مذمت اور احتجاج

فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر بیت لحم میں ایک سترہ سالہ فلسطینی بچے کے وحشیانہ قتل کے واقعے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد فلسطین بھرمیں اسرائیلی ریاست کے خلاف شدید غم وغصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔ فلسطینی عوام، سیاسی اور سرکاری حلقوں میں شدید رد عمل اس وقت سامنے آیا جب ایک ...

مودی کی آمریت برداشت نہیں کرے گی کانگریس:پرمود تیواری

اترپردیش کانگریس رابطہ کمیٹی کے چیئرمین اور راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ پرمود تیواری نے وزیر اعظم پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی نریندر مودی کی آمریت کو برداشت نہیں کرے گی۔انہوں نے کہا کہ کس قانون کے تحت عوام کا پیسہ روکاگیاہے

اتر پردیش اسمبلی انتخابات:پہلے مرحلے کے لیے نوٹیفکیشن جاری

اتر پردیش اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے کا نوٹیفکیشن آج جاری کر دیاگیاہے۔ اس کے ساتھ ہی صبح11بجے سے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کا عمل بھی شروع ہو گیا ہے، اس دور میں ریاست کے مسلم اکثریتی مغربی علاقے کے15اضلاع کی کل73سیٹوں کے لیے آئندہ 11؍فروری کو پولنگ ہوگی۔

کانگریس کے ساتھ اتحاد پر فیصلہ ایک دو دن میں متوقع :اکھلیش

اتر پردیش کے وزیر اعلی اور سماج وادی پارٹی کے صدر اکھلیش یادو نے آج کہا کہ وہ ہمیشہ اپنے والد اور ایس پی کے بانی ملائم سنگھ یادو کے ساتھ مل کر چلیں گے اور کانگریس کے ساتھ اتحاد پر ایک دو دن میں فیصلہ لے لیا جائے گا۔