شمالی کرناٹک میں شدت کی گرم لہر،ایک لڑکی کی موت

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 1:48 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:20/اپریل(ایس او نیوز) شمالی کرناٹک خاص طور پر کلبرگی، رائچور اور آس پاس کے علاقوں میں گرمی کی شدت لوگوں کیلئے جان لیوا بنی ہوئی ہے۔ درجہئ حرارت میں بے تحاشہ اضافہ کے نتیجہ میں آج کلبرگی میں ایک نوجوان لڑکی کی موت ہوگئی، جبکہ رائچور میں 18 کمسن بچے ڈی ہائیڈریشن کی شکایت کے سبب اسپتالوں میں داخل ہیں۔ ریاست بھر میں درجہئ حرارت میں زبردست اضافہ ریکارڈ کیاگیا ہے۔ کلبرگی اور رائچور میں آج درجہئ حرارت 40 ڈگری سے متجاوز ہوگیا۔محکمہئ موسمیات کے ماہرین کا کہنا ہے کہ آنے والے دنوں میں شمالی کرناٹک کے ان علاقوں میں گرمی کی شدت اور بھی بڑھ سکتی ہے۔ کلبرگی کے چیتا پور تعلقہ کے چکونڈی دیہات میں 19/ سالہ لیلا بائی جادھو کی موت ہوگئی۔بتایاجاتا ہے کہ وہ دھوپ میں اچانک بے ہوش ہوگئی، فوری طور پر اسے پرائمری ہیلتھ سنٹر لے جایا گیا، لیکن وہاں اسے مردہ قرار دے دیا گیا۔ ڈاکٹروں نے بتایاکہ گرمی کی شدت کو وہ برداشت نہیں کرپائی۔ پانچ دن قبل گلبرگہ میں ہی ایک تیرہ سالہ لڑکی کی موت ہوگئی۔ آج کلبرگی میں 43.6، رائچور میں 42.5، بلگاوی میں 39.3 باگلکوٹ میں 38.8 دھارواڑ میں 39.4، گدگ میں 39.8، ہاویری میں 38، چترادرگہ میں 39.1، داونگیرے میں 39، ڈگری درجہئ حرارت ریکارڈ کیاگیا ہے، جبکہ شہر بنگلور میں لوگوں کو کچھ راحت ملی اور یہاں درجہئ حرارت 35 ڈگری کے آس پاس ریکارڈ کیاگیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر پتھرائو کا معاملہ؛ایم پی شوبھا کرندلاجے نے پولس سے کہا؛ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری بند کی جائے؛ لیڈران کو گرفتار کرنے کی صورت میں دی دھمکی

بی جے پی لیڈر شوبھا کرندلاجے نے آج منگل کو بھٹکل ٹائون پولس تھانہ پہنچ کر بھٹکل ڈی وائی ایس پی سے نہایت ترش لہجہ میں کہا کہ وہ بی جے پی کارکنان کی گرفتاری کا سلسلہ فوری طور پر بند کرے۔ شوبھا نے کہا کہ پولس نے اب تک 9 لوگوں کو گرفتار کیا ہے، اگر پولس مزید لوگوں کو گرفتار کرتی ہے تو ...

جی ایس ٹی کی وجہ سے ریاست کرناٹک کو900 کروڑ کانقصان

گوڈس اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) نے ریاست کے خزانہ پر بہت بری طرح سے اثر کیا ہے اور جدید مربوط محصول نظام کے جاری کئے جانے کے ایک ماہ بعد جولائی کے مہینہ میں ریاست کو محصول کی آمدنی میں سے نو سو کروڑ روپئے کا نقصان برداشت کرنا پڑا ہے۔