ضمیراحمد خان نے اپنے حلقہ میں اندراکینٹین کا افتتاح کیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th March 2018, 11:39 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12؍مارچ(ایس او نیوز) حلقہ چامراج پیٹ کے رکن اسمبلی وسابق ریاستی وزیر بی زیڈ ضمیر احمد خان نے اپنے حلقہ کے ایس کے آر مارکیٹ کی حدود میں آنے والے منٹو اسپتال میں غریب مریضوں اور ان کے رشتہ داروں کی سہولت کے لئے قائم کردہ اندرا کینٹین کا آج افتتاح کیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہاکہ ریاستی وزیراعلیٰ سدارامیا نے غریب افراد کے بھوکے پیٹ نہ سونے کے مقصد سے اندرا کینٹین اسکیم شروع کی ہے اور یہ پوری کامیابی کے ساتھ چل رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ غریب مزدور بہت ہی کم قیمت میں اندرا کینٹین میں دستیاب کھانے کا استعمال کرتے ہوئے بغیر بھوکے چین کی نیند سورہے ہیں۔ ضمیراحمد خان نے کہاکہ ان کے حلقہ میں غریب اور مزدور طبقات کے افراد کی تعداد کافی زیادہ ہے۔ ان افراد کی فلاح وبہبودی اور انہیں درکار سہولتیں فراہم کرنے کو انہوں نے اولین ترجیح دی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ ضرورت مندافراد کی ضرورتوں کو بروقت پورا کیا جائے تو وہ اپنی ضرورتوں کو پوراکرسکتے ہیں اور ایسے افراد دل سے دعائیں دیتے ہیں۔ اسی کو وہ اپنی زندگی کا مقصد بناکر آگے بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ خدمت خلق کو صرف رضائے الٰہی کے مقصد سے کرتے آرہے ہیں اور آخری سانس تک اس کو جاری رکھیں گے۔ انہوں نے بتایاکہ اپنے مفاد کے لئے کبھی بھی انہوں نے غریب افراد کی خدمت کا سہارا نہیں لیا۔ اقتدار آتے ہیں اور چلے جاتے ہیں۔ لیکن اگر کوئی چیز برقرار رہتی ہے تو وہ صرف غریب افراد کی دعائیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ وہ اپنے حلقہ میں اندرا موبائل کینٹین کی سہولت کے لئے کوشش کررہے ہیں اور بہت جلد موبائل کینٹین کی سہولت بھی دستیاب ہوگی۔ اس موقع پر ایس کے آر مارکیٹ وارڈ کارپوریٹر ناظمہ خانم کے شوہر وسماجی کارکن ایوب خان، سابق کارپوریٹر اشوت نارائن، گووندراج، اسپتال کے سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر وچک پیٹ ٹریفک پولیس تھانہ کے انسپکٹر کے علاوہ سیف اﷲ خان، باشاہ خان، عادل پاشاہ، آنند پورہ کے اشوک، بسورامنا، وینکٹیش کے علاوہ دیگر لیڈران موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس لیجسلیچر پارٹی میٹنگ میں سدرامیا پھر غالب، ہنگامہ خیزی کے اندیشوں کے برعکس میٹنگ میں کسی نے بھی زبان نہیں کھولی

حسب اعلان 22دسمبر کو ریاستی کابینہ میں توسیع کی تصدیق کرتے ہوئے آج سابق وزیراعلیٰ اور کانگریس لیجسلیچر پارٹی لیڈر سدرامیا نے تمام کانگریسی اراکین کو خاموش کردیا۔

مندروں کو دئے جانے والے فنڈز کو فرقہ وارنہ رنگ دینے بی جے پی کی مذموم کوشش، اسمبلی میں اسپیکر نے فرقہ پرست جماعت کی ایک نہ چلنے دی

وقفۂ سوالات میں بی جے پی رکن اسمبلی سی ٹی روی کی طرف سے سوالات تک خود کو محدود رکھنے کی بجائے ایک معاملے پر بحث شروع کرنے کی کوشش کو جب اسپیکر رمیش کمار نے روک دیا تو اس بات پر بی جے پی اراکین اور اسپیکر کے درمیان نوک جھونک شروع ہوگئی۔

ریاست کرناٹک میں 800 نئے سرویرس کا تقرر

وزیر مالگزاری آر وی دیش پانڈے نے آج ریاستی اسمبلی کو بتایاکہ ریاست بھر میں اراضی سروے کی ذمہ داری ادا کرنے کے لئے محکمے کی طرف سے 800نئے سرویرس کا تقرر کیا گیا ہے۔

پسماندہ طبقات کے سروے کی رپورٹ تیاری کے مراحل میں: پٹ رنگا شٹی

ریاستی وزیر برائے پسماندہ طبقات پٹ رنگا شٹی نے کہا ہے کہ سابقہ سدرامیا حکومت کی طرف سے درج فہرست طبقات کی ہمہ جہت ترقی کو یقینی بنانے کے مقصد سے جو سماجی ومعاشی سروے کروایا گیا تھا اس کے اعداد وشمار کو کمپیوٹرائز کرنے کا عمل جاری ہے۔