پاکستان کی مخالفت میں سلطان جوہر کپ ہاکی میں پھر نہیں کھیلے گا ہندوستان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th April 2017, 10:49 AM | اسپورٹس |

نئی دہلی،15اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) ہندوستانی مرد ہاکی ٹیم ملائیشیا میں اکتوبر میں ہونے والے سلطان جوہر کپ میں حصہ نہیں لے گی۔ اس کی وجہ اس ٹورنامنٹ میں پاکستان کا بھی حصہ لینا ہے۔ وہیں اس بارے میں ہاکی انڈیا نے کہا ہے کہ سلطان جوہر کپ ٹورنامنٹ ہے اور ہندوستانی ٹیم اس میں اس وقت تک حصہ نہیں لے گی جب تک پاک 2014 چیمپئنز ٹرافی تنازع کے لئے غیر مشروط معافی نہیں مانگتا۔یہ دوسری بار ہے جب ہندوستانی ٹیم اس ٹورنامنٹ میں نہیں کھیلے گی۔سلطان جوہر کپ انڈر 21 ٹورنامنٹ ہے اور ہندوستان نے سال 2015 میں اس میں خطاب جیتا تھا۔ یہ عالمی آپریشنز ادارے ایف آئی ایچ یا کسی برصغیرادارے کے تحت کرایا جانے والا عالمی ٹورنامنٹ نہیں ہے۔جنوری میں ہاکی انڈیا نے پاکستان کے خلاف کسی بھی ٹورنامنٹ میں نہیں کھیلنے کے فیصلے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ اس وقت تک ایسا جاری رہے گا جب تک پاکستان 2014 میں ہندوستان میں ہوئی ایف آئی ایچ چیمپئنز ٹرافی کے دوران اپنی ٹیم کے غیر پیشہ ورانہ رویے اور نازیباسلوک کے لئے غیر مشروط تحریری معافی نہیں مانگ لیتا۔لکھنؤ میں 2016 جونیئر ورلڈ کپ سے پہلے پاکستانی ہاکی فیڈریشن نے الزام لگایا کہ ہندوستان نہیں چاہتا کہ ٹورنامنٹ میں پاکستانی ٹیم حصہ لے۔ ہندوستان نے اس دعوے کو ایک سرے سے خارج کر دیا تھا۔ آخر میں پاکستان نے جونیئر ورلڈ کپ میں حصہ نہیں لیا تھا۔ہاکی انڈیا کے ترجمان آر پی سنگھ نے کہاکہ تاہم ہاکی انڈیا اور اس کھلاڑیوں نے 2014 میں ہوئے واقعہ کو پیچھے چھوڑ دیا، لیکن حال میں پی ایچ ایف کی طرف سے عائد الزامات سے ہندوستان نے اس ٹورنامنٹ سے ہٹنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایڈن گارڈن کے 4ا سٹینڈس شہیدوں کے نام

فوج کے کمانڈنگ ان چیف جنرل لیفٹیننٹ جنرل پروین بخشی کی موجود میں بنگال کرکٹ ایسوسی ایشن نے ایڈن گارڈنز کرکٹ اسٹیڈیم کے چارا سٹینڈوں کو شہیدوں کے نام کیا۔

چمپئنز ٹرافی میں کھیلنے پر7 مئی کے اجلاس میں کریں گے فیصلہ: ونود رائے

چمپئنز ٹرافی کے لئے ہندوستانی ٹیم کے ممکنہ اعلان کے بارے میں سات مئی کو ہونے والے بی سی سی آئی کی جنرل میٹنگ میں فیصلہ لیا جائے گا۔ بی سی سی آئی ایڈمنسٹریٹر کمیٹی (سی اواے) کے سربراہ ونود رائے نے کہا ہے کہ ہم تمام ممکنہ اختیارات کے لئے تیار ہیں،