ہندوستان کو مسلم آبادی کی قدر کرنی چاہئے اور ان کا پورا خیال رکھنا چاہئے :اوباما

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 1st December 2017, 11:55 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

نئی دہلی ،یکم ؍دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)امریکہ کے سابق صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ ہندوستان کو اپنی مسلم آبادی کی قدر کرنی چاہئے اور ان کا پورا خیال رکھنا چاہئے جو خود کو ملک سے وابستہ ہندوستانی مانتی ہے۔ اوباما نے یہ باتیں ایچ ٹی لیڈر شپ سمٹ میں کہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سال 2015 میں بطور صدر ہندوستان کے آخری دورے پر بھی انہوں نے وزیر اعظم مودی کے ساتھ بند کمرے میں ہوئی میٹنگ میں مذہبی رواداری کی ضرورت اور کسی بھی مذہب کو ماننے کے حق پر زور دیا تھا۔سال 2009 سے 2017 تک امریکہ کے صدر رہے اوباما نے اپنے دورہ کے آخری دن بھی اسی طرح کا تبصرہ کیا تھا ۔ ہندوستان سے جڑے ایک سوال کے جواب میں اوباما نے ملک کی بڑی مسلم آبادی کا ذکر کیا ، جو کامیاب ، جڑا ہوا اور خود کو ہندوستانی مانتی ہے۔سابق امریکی صدر نے کہا کہ بدقسمی سے کچھ دیگر ممالک کے ساتھ ایسا نہیں ہے ۔ پاکستان سے دہشت گردی کے فروغ سے وابستہ ایک سوال کے جواب میں اوباما نے کہا کہ ہمیں اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ملا کہ پاکستان کو اوسامہ بن لادن کی موجودگی کے بارے میں کچھ بھی معلوم تھا ، لیکن ہم نے اس معاملہ پر یقینی طو رپر غور کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

دیوبند میں منایا جارہا ہے’’شریعت ہمارا اعزاز ہے‘‘ ہفتہ؛ اسلامک اکیڈمی کے ڈائرکٹر نے کی سراہنا؛ کہا ، پوری امت کی طرف سے فرض کفایہ

دفاع شریعت کے لئے معہد عائشہ صدیقہ قاسم العلوم للبنات دیوبند کی انتظامیہ اور فاضلات کی جانب سے ہفتہ ’’شریعت ہمارا اعزاز ہے ‘‘ پوری امت کی جانب سے فرض کفایہ ہے ،اور ملت کی خواتین میں شریعت کے حوالے سے بیداری لانے کی ایک عظیم کوشش ہے کیونکہ پچھلے کئی سالوں سے تحفظ حقوق نسواں کے ...

کرد ملیشیا کی عفرین میں ترکی کے خلاف اسدی فوج سے معاہدے کی تردید

شام کے علاقے عفرین میں ترک فوج کا مقابلہ کرنے والی کردملیشیا ’کرد پروٹیکشن یونٹ‘ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ کرد ملیشیا نے ترکی کا مقابلہ کرنے کے لیے اسدی فوج کے ساتھ ساز باز کرلیا ہے۔