اسلام مخالف اے ایف ڈی دوسری سب سے بڑی جماعت، جائزہ رپورٹ

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 22nd September 2018, 9:10 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نیویارک22ستمبر ( آئی این ایس انڈیا ؍ ایس او نیوز)   ایک تازہ عوامی جائزے کے مطابق اسلام اور مہاجرین مخالف دائیں بازوں کی سیاسی جماعت آلٹرنیٹیو فار ڈوئچ لینڈ یا اے ایف ڈی، جرمنی کی دوسری سب سے بڑی جماعت بن گئی ہے۔ اس جائزے کے مطابق حکومتی اتحاد اپنی حمایت کھو رہا ہے۔

جرمن براڈ کاسٹر ARD کی طرف سے کرائے جانے والے عوامی جائزے کے مطابق اے ایف ڈی جرمنی کی دوسری بڑی سیاسی جماعت بن گئی ہے۔ اس سروے کے مطابق انتہائی دائیں بازو کی یہ سیاسی جماعت اتحادی حکومت میں شامل جماعت سوشل ڈیموکریٹک پارٹی یا SPD کو عوامی مقبولیت میں اب پیچھے چھوڑ گئی ہے۔ اب یہ جماعت چانسلر انگیلا میرکل کی سیاسی جماعت کے بعد دوسرے نمبر پر آ گئی ہے۔

جرمن ووٹرز سے کیے گئے اس سروے کے مطابق اے ایف ڈی نو ستمبر کو ہونے والے سروے کے مقابلے میں دو فیصد مزید مقبول ہو گئی ہے اور اب اس کی مقبولیت کی شرح 18 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ جبکہ SPD کی عوامی مقبولیت میں ایک فیصد کمی ہوئی اور اب اس کی شرح 17 فیصد ہے۔جرمن چانسلر انگیلا میرکل کی جماعتوں CDU اور CSU کے بلاک کی مقبولیت کم ہو کر 28 فیصد پر آ گئی ہے۔ خیال رہے کہ یہ بلاک 2005سے حکومت میں ہے اور حالیہ مقبولیت کی شرح اس سروے کے آغاز سے اب تک کی کم ترین ہے۔ اس سروے کا آغاز 1997 میں کیا گیا تھا۔ اے ایف ڈی قریب ایک برس قبل ملکی پارلیمان میں پہنچنے میں کامیاب ہوئی تھی۔ تب اس کو پارلیمانی انتخابات میں 12.6 فیصد ووٹ ملے تھے اور یہ ملک کی تیسری سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری تھی۔اے ایف ڈی کا قیام بطور یورپ مخالف جماعت 2013 میں عمل میں آیا تھا۔ اس کے بعد سے اب تک یہ جماعت مکمل طور پر انتہائی دائیں بازو کی جماعت میں بدل چکی ہے جو اسلام مخالف بھی ہے اور مہاجرین اور تارکین وطن مخالف بھی۔ یہ جماعت نازی دور سے تعلق رکھنے والے بعض خیالات کے اظہار کے سبب شدید تنقید کی زد میں بھی آتی رہتی ہے۔تازہ ترین سروے کے مطابق حکومتی اتحاد کی کم ہوتی ہوئی مقبولیت کا فائدہ دیگر چھوٹی سیاسی جماعتوں کو بھی پہنچا ہے۔ مثلا ماحول دوست گرین پارٹی اور تجارت دوست فری ڈیموکریٹک پارٹی کی مقبولیت بھی بڑھ کر بالترتیب 15 اور نو فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ جبکہ لیفٹ پارٹی کی مقبولیت کسی تبدیلی کے بغیر 10 فیصد پر قائم ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

امریکی رپورٹ کا خلاصہ؛ ہندوستان کی حکومت مسلم مخالف ! مسلم اداروں کے خلاف اقدامات؛ بی جے پی قائدین کی اشتعال انگیز تقاریر کا سلسلہ جاری؛ شہروں کے مسلم نام بدلنے کا بھی حوالہ

مذہبی آزادی سے متعلق  امریکہ کے اسٹیٹ  ڈپارٹمنٹ کی تازہ رپورٹ میں ہندوستان میں ہجومی تشدد، تبدیلی مذہب کی صورتحال، اقلیتوں کے قانونی موقف اور سرکاری پالیسیوں کا احاطہ کیا گیا  ہے۔ رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ  ہندوستان میں سال 2018 کے دوران ہندو انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے ...

امریکہ اور ایران کے درمیان حالات انتہائی دھماکہ خیز ،خطے میں جنگ کا خطرہ،ہندوستان سمیت مختلف ممالک نے کیاہرمز سے پروازوں کا ر استہ تبدیل، سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس

گزشتہ چنددنوں سے ایران اور امریکہ کے درمیان جاری کشیدگی میں اس وقت مزید شدت آگئی جب ایران نے امریکہ کے ڈرون کو مارگرایا۔

امریکہ کی طرف سے ہندوستان کو دھمکی روس سے ڈیل کی صورت میں دفاعی امداد محدود ہوجائے گی

امریکہ کی وزارت خارجہ کی افسر ایلس جی ویلس نے جمعہ کو کہا کہ ان کا ملک ہندوستان کی دفاعی ضروریات پورا کرنے کے لئے تیار ہے، لیکن روسی ایس-400 نظام اس میں رکاوٹ بن رہا ہے- ہندوستان-روس ڈیل سے امریکہ کا تعاون محدود کردیا جائے گا -

دُبئی میں 18 برس سے کم عمر بچوں کی ویزہ مفت؛ 15 جولائی سے 15 ستمبر تک رہے گی سہولیت

 متحدہ عرب امارات میں سیاحتی سیزن کے دوران غیر مُلکی سیاحوں کے 18 برس سے کم عمر بچوں کے لیے مفت ویزے کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ یہ اعلان فیڈرل اتھارٹی فار آئیڈینٹٹی اینڈ سٹیزن شپ کی جانب سے کیا گیا ہے۔ دُبئی میں ہر سال سیاحتی سیزن کا آغاز 15 جولائی سے ہوتا ہے جو 15 ستمبر تک جاری ...

اسپتال قائم کرنا میری ذمہ داری نہیں ہے: کاروار میں ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا تکبرانہ بیان

ضلع شمالی کینرا میں ایک ٹراما سینٹر اور سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل تعمیر کرنے کے لئے سوشیل میڈیا جو مہم چلائی جارہی ہے اور متعلقہ محکمہ جات کے افسران کو میمورنڈم دئے جارہے ہیں اس سلسلے میں ضلع کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے اب تک کسی قسم کاردعمل ظاہر نہیں کیاتھا۔ الٹے سوشیل ...