اسلام مخالف اے ایف ڈی دوسری سب سے بڑی جماعت، جائزہ رپورٹ

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 22nd September 2018, 9:10 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نیویارک22ستمبر ( آئی این ایس انڈیا ؍ ایس او نیوز)   ایک تازہ عوامی جائزے کے مطابق اسلام اور مہاجرین مخالف دائیں بازوں کی سیاسی جماعت آلٹرنیٹیو فار ڈوئچ لینڈ یا اے ایف ڈی، جرمنی کی دوسری سب سے بڑی جماعت بن گئی ہے۔ اس جائزے کے مطابق حکومتی اتحاد اپنی حمایت کھو رہا ہے۔

جرمن براڈ کاسٹر ARD کی طرف سے کرائے جانے والے عوامی جائزے کے مطابق اے ایف ڈی جرمنی کی دوسری بڑی سیاسی جماعت بن گئی ہے۔ اس سروے کے مطابق انتہائی دائیں بازو کی یہ سیاسی جماعت اتحادی حکومت میں شامل جماعت سوشل ڈیموکریٹک پارٹی یا SPD کو عوامی مقبولیت میں اب پیچھے چھوڑ گئی ہے۔ اب یہ جماعت چانسلر انگیلا میرکل کی سیاسی جماعت کے بعد دوسرے نمبر پر آ گئی ہے۔

جرمن ووٹرز سے کیے گئے اس سروے کے مطابق اے ایف ڈی نو ستمبر کو ہونے والے سروے کے مقابلے میں دو فیصد مزید مقبول ہو گئی ہے اور اب اس کی مقبولیت کی شرح 18 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ جبکہ SPD کی عوامی مقبولیت میں ایک فیصد کمی ہوئی اور اب اس کی شرح 17 فیصد ہے۔جرمن چانسلر انگیلا میرکل کی جماعتوں CDU اور CSU کے بلاک کی مقبولیت کم ہو کر 28 فیصد پر آ گئی ہے۔ خیال رہے کہ یہ بلاک 2005سے حکومت میں ہے اور حالیہ مقبولیت کی شرح اس سروے کے آغاز سے اب تک کی کم ترین ہے۔ اس سروے کا آغاز 1997 میں کیا گیا تھا۔ اے ایف ڈی قریب ایک برس قبل ملکی پارلیمان میں پہنچنے میں کامیاب ہوئی تھی۔ تب اس کو پارلیمانی انتخابات میں 12.6 فیصد ووٹ ملے تھے اور یہ ملک کی تیسری سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری تھی۔اے ایف ڈی کا قیام بطور یورپ مخالف جماعت 2013 میں عمل میں آیا تھا۔ اس کے بعد سے اب تک یہ جماعت مکمل طور پر انتہائی دائیں بازو کی جماعت میں بدل چکی ہے جو اسلام مخالف بھی ہے اور مہاجرین اور تارکین وطن مخالف بھی۔ یہ جماعت نازی دور سے تعلق رکھنے والے بعض خیالات کے اظہار کے سبب شدید تنقید کی زد میں بھی آتی رہتی ہے۔تازہ ترین سروے کے مطابق حکومتی اتحاد کی کم ہوتی ہوئی مقبولیت کا فائدہ دیگر چھوٹی سیاسی جماعتوں کو بھی پہنچا ہے۔ مثلا ماحول دوست گرین پارٹی اور تجارت دوست فری ڈیموکریٹک پارٹی کی مقبولیت بھی بڑھ کر بالترتیب 15 اور نو فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ جبکہ لیفٹ پارٹی کی مقبولیت کسی تبدیلی کے بغیر 10 فیصد پر قائم ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

داعش کے ہاتھوں اغوا130 شامی خاندانوں کا انجام بدستور نامعلوم

چند ہفتے قبل شام میں شدت پسند تنظیم "داعش" کے جنگجوؤں نے دیر الزور میں آندھی اور طوفان سے فائدہ اٹھا کر "البحرہ" پناہ گزین کیمپ پر حملہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے جب کی داعش نے 130 خاندانوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔

ٹرمپ کا وزیر دفاع جم میٹس کو ہٹانے کا اشارہ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عندیہ دیا ہے کہ وزیر دفاع جم میٹس کو بھی اْن کے عہدے سے برطرف کیا جا سکتا ہے۔صدر ٹرمپ نے اتوار کے روز امریکی ٹیلی وژ ن چینل سی بی ایس کے پروگرام 60 Minutes میں انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اْنہیں اس بات کی کوئی خبر نہیں کہ جم میٹس عہدہ چھوڑنے والے ہیں۔

ریاستی وزارت سے مہیش کا استعفیٰ منظور

پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس اور بی ایس پی کے درمیان مفاہمت کی کوشش ناکام ہوجانے کے نتیجے میں ریاستی کابینہ سے استعفیٰ دینے والے بی ایس پی کے وزیر این مہیش کو استعفیٰ واپس لینے کے لئے منانے میں جے ڈی ایس قیادت کی کوشش ناکام ہوجانے کے بعد آج وزیراعلیٰ نے مہیش کا ...

ای اسٹامپ پیپر اب آن لائن دستیاب ہوگا

کسی طرح کے دستاویزات تیار کرنے کے لئے درکار ای اسٹامپ کاغذ کی دستیابی اب تک ایک بہت بڑا مسئلہ ہوا کرتی تھی، 100 روپے کے اسٹامپ پیپر کے لئے بھی بھاری رقم ادا کرکے اسے حاصل کرنا پڑتا تھا،

ساحلی علاقے میں موسلادھار بارش۔ آسمانی بجلیوں سے نقصانات

ساحلی علاقے میں اور خاص کر جنوبی کینرا ضلع میں اتوار کی شام سے رات دیر گئے تک زبردست بارش ہوئی ہے۔ بادلوں کی گھن گرج کے ساتھ بجلیوں کے کڑکنے کا سلسلہ بھی جاری رہا اور بعض مقامات پر بجلی گرنے سے گھروں کونقصان پہنچنے کی اطلاعات بھی ملی ہیں۔

بھٹکل میں زائد منافع کالالچ دے کر 100کروڑ سے زائد رقم کی دھوکہ دہی کا الزام : کمپنی مالکان کے گھروں کا گھیراؤ اور احتجاج

شہر کے آزاد نگر میں واقع فلالیس نامی کمپنی کے مالکان  پر سو کروڑ سے زائد رقم لے کر فرار ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے  سینکڑوں لوگوں نے آج اُن  کے مکانوں  کا گھیراو کیا اور اپنی رقم واپس دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا۔  احتجاجیوں کا کہنا تھا کہ   فلالیس نامی جعلی کمپنی ...