سویڈن میں انتخابات: مہاجرت مخالفین کی نشستوں میں اضافہ متوقع

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 1:50 PM | عالمی خبریں |

دبئی،10؍ ستمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) یورپی ملک سویڈن میں آج اتوار کے روز پارلیمانی انتخابات کے لیے ووٹنگ کا عمل شروع ہو گیا ہے۔ ان انتخابات میں دائیں بازو کی مہاجرت مخالف جماعت ’سویڈن ڈیموکریٹس‘ کی نشستوں میں اضافے کا امکان ہے۔ سویڈن کی پارلیمان کی کْل 349 نشستیں ہیں۔ سویڈن اْن چند یورپی ممالک میں شامل ہے جہاں حالیہ کچھ برسوں کے دوران قوم پرستی میں اضافہ ہوا ہے۔ انتخابی جائزوں کے مطابق دائیں بازو کی قوم پسند جماعت ’سویڈن ڈیموکریٹس‘ ماضی کے مقابلے میں کافی زیادہ نشستیں حاصل کر سکتی ہے۔انتخابات سے قبل مرتب کیے جانے والے عوامی جائزوں کے مطابق بائیں بازو کی طرف جھکاؤ رکھنے والے سیاسی اتحاد کو، جس کی قیادت موجودہ وزیر اعظم اسٹیفان لووین کر رہے ہیں، اپنے مخالف دائیں بازو کے اعتدال پسند چار جماعتی اتحاد ’الائنس‘ پر معمولی سبقت حاصل ہے۔جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق تاہم نئی حکومت کی تشکیل ایک پیچیدہ معاملہ ہو گا کیونکہ انتخابات میں شریک کسی بھی بلاک کو بھرپور اکثریت ملنے کا امکان کم ہی ہے۔ چار جماعتوں پر مشتمل اتحاد ’الائنس‘ کی کوشش ہے کہ کامیابی حاصل کر کے ماڈریٹ پارٹی کے سربراہ اْلف کرسٹرسن کو ملک کا وزیر اعظم بنایا جائے۔جائزوں کے مطابق سوشل ڈیموکریٹک پارٹی اور اس کی اتحادی جماعت گرین پارٹی کو جسے حکومت میں بائیں بازو کی ’لیفٹ پارٹی‘ کی حمایت بھی حاصل ہے، کی عوامی حمایت میں نسبتاً کمی واقع ہوئی ہے۔ دوسری طرف چار جماعتوں قدامت پسند ماڈریٹ پارٹی، لبرل پارٹی، سنٹر پارٹی اور کرسچن ڈیموکریٹک پارٹی پر مشتمل اتحاد ’الائنس‘ کی کوشش ہے کہ کامیابی حاصل کر کے ماڈریٹ پارٹی کے سربراہ اْلف کرسٹرسن کو ملک کا وزیر اعظم بنایا جائے۔تاہم اس تمام صورتحال کے حاشیے میں قوم پرست اور مہاجرت مخالف سویڈن ڈیموکریٹک پارٹی بھی موجود ہے جس کے بارے میں اندازے لگائے جا رہے ہیں کہ اس کی پارلیمان میں نشستوں میں اضافہ ہو گا۔ 2014ء4 میں منعقد ہونے والے انتخابات میں اس جماعت کو 13 فیصد ووٹ ملے تھے۔ تاہم مہاجرت اور ملک میں بڑھتے ہوئے جرائم کو بنیاد بنا کر اس جماعت نے اپنی عوامی مقبولیت میں کافی اضافہ کیا ہے۔ پارلیمانی انتخابات کے لیے اہل ووٹرز کی مجموعی تعداد 7.4 ملین ہے۔ پولنگ اسٹیشن مقامی وقت کے مطابق صبح آٹھ بجے سے کھلے ہیں اور پولنگ کا سلسلہ رات آٹھ بجے تک جاری رہے گا۔آج اتوار نو ستمبر کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لیے اہل ووٹرز کی مجموعی تعداد 7.4 ملین ہے۔ پولنگ اسٹیشن مقامی وقت کے مطابق صبح آٹھ بجے سے کھلے ہیں اور پولنگ کا سلسلہ رات آٹھ بجے تک جاری رہے گا۔ وفاقی پارلیمان کے نمائندوں کے علاوہ ووٹرز 20 کاؤنٹی کونسلوں اور 290 میونسپل اسمبلیوں کے لیے نمائندگان بھی چنیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

سی آئی اے کا دعویٰ ، سعودی عرب کے شہزادے نے دیا تھا جمال خشوگی کے قتل کاحکم

امریکی اخبار وشنگتن پوسٹ کے صحافی جمال خشوگی کی موت کو لیکر امریکی کی خفیہ ایجنسی نے بڑا دعوی کیا ہے۔ امریکہ کی سینٹرل انٹیلیجنس ایجنسی ( سی آئی اے ) نے کہا ہے کہ نے صحافی جمال خشوگی کے قتل کے احکام دئے تھے۔

بھارت۔ تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم تائیپی میں شروع 

vایم ایس ایم ای کے سکریٹری ڈاکٹر ارون کمار پانڈا 13 سے 17 نومبر 2018 تک چلنے والے بھارت 150 تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم کے اجلاس میں بھارتی وفد کی قیادت کررہے ہیں۔ فورم میں کل اپنے افتتاحی کلمات میں ڈاکٹر پانڈا نے کہا کہ بھارت میں ایم ایس ایم ای کی پوزیشن کلیدی اہمیت کی حامل ہے

شمالی کوریا کا میزائل پروگرام جاری ہے، رپورٹ

ایک امریکی ریسرچ آرگنائزیشن نے کہا ہے کہ اس نے شمالی کوریا کے میزائلوں سے متعلق ایسے 13 مقامات کا پتا لگایا ہے جن کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ یہ اس بات کی تازہ ترین علامت ہے کہ شمالی کوریا کو اس کے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار کرانے کی امریکی کوشش تعطل کا شکار ہو گئی ہے۔

غیر ملکی طلبہ کی امریکہ میں دلچسپی کیوں گھٹ رہی ہے؟

غیر ملکی طالب علموں کی آمد سے امریکی معیشت کو ہر سال42 ارب ڈالر کا فائدہ ہوتا ہے اور روزگار کی منڈی میں ساڑھے چار لاکھ ملازمتیں پیدا ہوتی ہیں۔ غیر ملکی طالب علم امریکی معیشت کے لئے بے بڑی اہمیت رکھتے ہیں۔

ہندوستان ڈیجیٹل فروغ اورترقی کے دورسے گذررہاہے ، سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں وزیراعظم کاخطاب

وزیراعظم نے سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ ہندوستان پر چھاجانے والے مالیاتی انقلاب اور ہندوستان کے 1.3 ارب عوام کی زندگی میں بہتر تبدیلیوں کا اعتراف ہے۔ہندوستان اور سنگاپور ہندوستانی اور آسیان ملکوں کے چھوٹے اور اوسط درجے کے کاروباری اداروں کوایک ...