میں شیو کا بھکت ہوں، سچائی میں ہے یقین:راہل گاندھی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th November 2017, 11:59 PM | ملکی خبریں |

احمدآباد،13؍نومبر(ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )کانگریس نائب صدر راہل گاندھی پیر کو گجرات کے پاٹن پہنچے اورمندر جا رہے راہل نے بی جے پی کی جانب سے اٹھ رہے سوالوں پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ میں شیو کا بھکت ہوں اور مجھے فرق نہیں پڑتا، بی جے پی جو بھی کہے۔اس سے پہلے راہل نے مہسانا کے پاس بہوچرا جی مندر میں پوجا کی۔پاٹن پہنچ کر راہل میڈیا سے مخاطب ہوئے۔یہاں مندروں میں مظاہرے سے جڑے سوالوں پر انہوں نے کہاکہ میں شیو کا بھکت ہوں،سچائی میں یقین کرتا ہوں۔بی جے پی جو بھی بولے، میں نے اپنی سچائی میں یقین کرتا ہوں۔راہل نے یہ بیان اپنے مندر جانے پر اٹھ رہے سوالات کے تناظر میں دیا۔راہل اس سے پہلے گجرات میں کئی مندروں میں جاکر پوجا کر چکے ہیں۔اس سے پہلے بی جے پی کے قومی ترجمان بھوپندر یادو نے کہاکہ کانگریس کے اسٹار تشہیرکار راہل گاندھی مندروں میں جا رہے ہیں اور پوجا کر رہے ہیں، یہ ثقافت کا حصہ ہے اوراچھابھی ہے۔حالانکہ یہ رجحان اپنے آپ آتا ہے اور یہ صرف انتخابات تک محدود نہیں رہنا چاہئے۔11نومبرکوراہل گاندھی نے گجرات کا اپنا تین روزہ دورہ شروع کیا تھا۔اس بار کانگریس لیڈر کی نظر شمالی گجرات پر ہے۔یہ علاقہ وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی صدر امت شاہ کا گڑھ سمجھا جاتا ہے۔حالانکہ شمالی گجرات میں کانگریس نے گزشتہ اسمبلی انتخابات (2012) میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔یہاں کانگریس نے 32میں سے 18سیٹوں پر جیت درج کی تھی۔شمالی گجرات میں ہی پاٹیدار تحریک کا سب سے زیادہ اثر دیکھا گیا تھا۔ 2015 میں ہوئے بلدیاتی انتخابات میں بی جے پی کی یہاں شدید شکست ہوئی تھی۔ایسے میں کانگریس کو امید ہے کہ ٹھاکور سینا اور اوایم ایس سی، ایس سی اینڈ ایس ٹی)ایکتا منچ کے بانی الپیش ٹھاکور کے ساتھ ہاتھ ملانے سے اسے ضرور فائدہ ہوگا۔ٹھاکور کمیونٹی کا شمالی گجرات میں گہرا اثر ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گجرات:بی جے پی میں بڑی بغاوت کے آثار،ٹکٹ کٹنے پراستعفوں کی دھمکی،اعلیٰ قیادت پرامیدوارتبدیل کرنے کادباؤ

بی جے پی کے ٹکٹ کی تقسیم کے بعد شروع ہونے والی بغاوت تھمنے کانام نہیں لے رہی ہے۔ پارٹی کے اعلیٰ کمان دفترتک پہنچنے کے بعد بی جے پی کے کارکنان نے اپنا احتجاج کرناشروع کردیا۔