مجھے واضح، دوٹوک اور درست سیاست پسند ہے، صدر رجب طیب ایردوان

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 9th October 2018, 5:29 PM | عالمی خبریں |

انقرہ 9اکتوبر (آئی این ایس انڈیا ) صدر رجب طیب ایردوان کا کہنا ہے کہ سلسلہ رکنیت یورپی یونین میں ہنگری ہمیشہ ترکی کا ساتھ دیتا چلا آیا ہے۔ صدرِ ترکی نے ہنگری کے سرکاری دورے کے دوران وزیر اعظم وکٹر اوربان اور قومی اسمبلی میں مذاکرات کے ایک مشترکہ پریس کانفرس کا اہتمام کیا۔اس دوران ایک اخباری نمائندے نے دریافت کیا کہ ترکی کے سلسلۂ رکنیت یورپی یونین کے تحت مزید تیزگامی کے لیے آپ کی یورپی یونین کے رکن ممالک سے توقعات کیا ہیں؟ کیا آپ سمجھتے ہیں آئندہ کے سلسلے میں یہ معاملہ زیادہ وسیع پیمانے پر ایجنڈے میں لایا جائیگا؟ ان سوالات کے جواب میں صدر ایردوان نے اولین طور پر اس معاملے کا جائزہ پیش کرنے پر وزیر اعظم وکٹر اوربان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہنگری نے اس معاملے میں ہمیشہ ترکی کا ساتھ دیا ہے اور ہمارے مؤقف کی تائید کی ہے۔اس سلسلے میں امیدواری کی درخواست دیے جانے والے برس 1963 سے2018 تک ایک طویل عرصہ گزرنے کی وضاحت کرتے ہوئے اردوغان نے واضح کیا کہ 1963 سے اب تک ترکی سے آنکھ مچولی کی جا رہی ہے۔ کسی بھی رکن ملک سے ایسا ظلم نہیں کیا گیا۔ نہ 'ہاں' اور نہ ہی 'نہیں'۔ ان کو دوغلی پالیسیوں کو ایک طرف چھوڑتے ہوئے ہمیں مخلصانہ جواب دینا ہو گا۔ کیونکہ اس طرح نہ ہمارا وقت ضائع ہو گیا اور نہ ان کا۔ ہمیں اس معاملے میں جواب واضح اور عیاں چاہیے۔ میں سیاست میں ہر چیز کے دو ٹوک ، واضح اور درست ہونے کو پسند کرتا ہوں۔ اس قدم کو بھی اسی چیز کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اٹھانا چاہیے۔ ہم اس معاملے میں اب اپنے صبر کی آخری لڑی تک پہنچ چکے ہیں، دیکھیں آگے کیا ہوتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

انیس عامری ایک ’دہشت گرد سیل‘ کا حصہ تھا: جرمن میڈیا

برلن میں دو برس قبل ایک کرسمس مارکیٹ پر ٹرک کے ذریعے حملہ کرنے والا انیس عامری’تنہا بھیڑیا‘ نہیں تھا بلکہ ممکنہ طور پر اس کا تعلق ایک سلفی سیل سے تھا، جس نے اسے اس حملے میں مدد دی تھی۔جرمن میڈیا پر ہفتے کے روز سامنے آنے والی رپورٹوں کے مطابق برلن کرسمس مارکیٹ حملے کے فقط دو ...

فرانسیسی شہروں میں زرد جیکٹوں والے مظاہرین کا احتجاج

فرانس کے مختلف شہروں میں زرد جیکٹوں والے حکومت مخالف مظاہرین مسلسل پانچویں ویک اینڈ پر احتجاج کے لیے جمع ہیں۔ صدر ایمانوئل ماکروں کی حکومت کے خلاف مظاہروں کا یہ سلسلہ ایندھن کی قیمتوں میں اضافے پر شروع ہوا تھا۔ فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں مظاہرین کی پرتشدد کارروائیوں کو ...

سری لنکا کے برخاست وزیراعظم پر پارلیمان کا اعتماد

رواں برس اکتوبر میں برخاست کیے جانے والے سری لنکن وزیراعظم رانیل وکرمے سنگھے نے پارلیمنٹ میں اعتماد کا ووٹ حاصل کر لیا ہے۔ آج بدھ کو ہونے والی رائے شماری میں 225 رکنی ایوان میں وکرمے سنگھے کی حمایت میں 117 اراکین نے ووٹ ڈالا

امریکی فوج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں

امریکی وزارت دفاع نے اعلان کیا ہے کہ اْس کی افواج نے شمالی شام میں مبصر چوکیاں قائم کر دیں ہیں۔ اس اعلان میں ان چوکیوں کی تعداد اور مقامات کی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔ اسی علاقے میں شامی کردوں کی ملیشیا وائی پی جی ایک بڑے علاقے پر قابض ہے

برطانوی وزیر اعظم کو درپیش قیادت کا چیلنج: کیوں اور کیسے؟

برطانوی پارلیمان کے ارکان نے قدامت پسند وزیر اعظم ٹریزا مے کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کر دی ہے، جس پر رائے شماری آج بدھ بارہ دسمبر کو ہو رہی ہے۔ سوال یہ ہے کہ یہ تحریک پیش کیے جانے کے بعد اب ہو گا کیا ۔برطانوی وزیر اعظم ٹریزا مے نے اسی ہفتے پیر کا دن یورپ کے مختلف ممالک کے ...