پارلیمانی انتخابات سے قبل مسلم سیاسی جماعتوں کا وجود؛ کیا ان جماعتوں سے مسلمانوں کا بھلا ہوگا ؟

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 19th September 2018, 9:22 PM | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

19ستمبر(ایس او نیوز ایجنسی)  لوک سبھا انتخابات یا اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی مسلم سیاسی پارٹیاں منظرعام  پرآجاتی ہیں، لیکن انتخابات کےعین وقت پروہ منظرعام سےغائب ہوجاتی ہیں یا پھران کا اپنا سیاسی مطلب حل ہوجاتا ہے۔ اورجو پارٹیاں الیکشن میں حصہ لیتی ہیں ایک دو پارٹیوں کو چھوڑکرکوئی بھی اپنے وجود کو ثابت کرنے میں ناکام ثابت ہوتی ہیں۔

لوک سبھا انتخابات 2019 سے قبل ایک بار پھرسیاسی پارٹیاں منظرعام پرآنے لگی ہیں اور اپنے وجود کا احساس دلانے کے کاموں میں مصروف ہوگئی ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اس وقت اترپردیش میں تقریباً ایک درجن سیاسی پارٹیاں سیاسی اتحاد پرزوردینے لگی ہیں۔

دوسری جانب مسلم سیاسی پارٹیوں کا کہنا ہے کہ ملک میں جس طرح کے حالات پیدا ہورہے ہیں اس کو دیکھتے ہوئے مسلمانوں کا سیاسی طورپرمتحد ہونا نہایت ضروری ہے۔ ایک عجیب بات یہ ہے کہ اگر کسی  سیاسی جماعت کی قیادت  کوئی  عالم دین کرتا ہے، تو مسلمانوں کے کسی مسئلے سے متعلق بات ہونے پر یہ مسلک اورفرقے میں تقسیم ہوجاتے ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ مسلم جماعتوں کے رہنما خود ایک پلیٹ فارم پرجمع نہیں ہو سکتے ہیں، جس کی وجہ سے مسلمانوں میں ان کو لے کراضطراب کی کیفیت دیکھنے  کوملتی ہے۔

کیرالہ کی انڈین یونین مسلم لیگ نے  لوک سبھا اوراسمبلی میں اپنی طاقت دکھا دی ہے، لیکن وہ بھی کیرالہ تک محدود ہے۔ اسدالدین اویسی کی قیادت والی آل انڈیا مسلم مجلس اتحاد المسلمین اورمشرقی اترپردیش کے میں پیس پارٹی کو اگرچھوڑ دیں تو پھرکوئی بھی مسلم سیاسی پارٹی مسلمانوں کے درمیان اپنا وجود قائم رکھنے میں ناکام ثابت ہوئی ہے۔

مولانا بدرالدین اجمل کی پارٹی آل انڈیا یونائیٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ بھی آسام میں مضبوط ہے۔ مولانا بدرالدین اجمل خود ممبرپارلیمنٹ ہیں اورآسام اسمبلی میں ان کے 13 ممبران اسمبلی ہیں۔ اگر راشٹریہ علما کونسل کی بات کریں تو دارالحکومت دہلی کے بٹلہ ہاوس انکاونٹر کے بعد وجود میں آنے والی یہ سیاسی جماعت کسی بھی محاذ پرمقبول نہیں ہوسکی ہے۔ اب ایسے حالات میں نئی نئی سیاسی جماعتیں منظرپرآنے لگی ہیں اور وہ الیکشن میں "مسلمانوں کا سودا" کرنے کےلئے پلیٹ فارم تیارکررہی ہیں۔

 

ایک نظر اس پر بھی

ریاستیں کشمیری شہریوں کو تحفظ فراہم کرائیں،مرکز نے مشاورت جاری کی

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے پیش نظر ملک کے مختلف حصوں میں جموں کشمیر سے متعلق لوگوں پر حملے کی خبروں کے درمیان مرکزنے جمعہ کی رات تمام ریاستوں کو جموں کشمیر سے متعلق لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔

پی چدمبرم کا طنز، مودی کے رہتے بی جے پی کو کسی کی صلاح کی کیا ضرورت

لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ڈی ایس ہڈا کو کانگریس کی جانب سے قومی سلامتی پرمشاورت تیار کرنے کی ذمہ داری دئے جانے کو لے کر وزیر خزانہ ارون جیٹلی کے حملے پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم نے ہفتہ کو طنز کیا

رابرٹ واڈرا نے عدالت میں عرضی داخل کر معاملے سے منسلک دستاویزات کی کاپیاں مانگی

منی لانڈرنگ کے معاملات میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی جانچ کا سامنا کر رہے رابرٹ واڈرا نے ہفتہ کو دہلی کی ایک عدالت میں عرضی داخل کر جانچ ایجنسی سے کیس سے منسلک دستاویزات کی کاپیاں مانگی۔

ہماری حکومت بنی تو نیم فوجی دستوں کے جوانوں کو ملے گا شہید کا درجہ: راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے سنیچر کو کہا کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات کے بعد ان کی پارٹی کی حکومت بننے پرملک کے لیے جان نچھاور کرنے والے نیم فوجی دستوں کے جوانوں کو بھی ’شہید‘ کا درجہ دینے کا بندوبست کیا جائے گا۔

آننت کمار ہیگڈے۔ جو صرف ہندووادی ہونے کی اداکاری کرتا ہے ’کراولی منجاؤ‘کے چیف ایڈیٹر گنگا دھر ہیرے گُتّی کے قلم سے

اُترکنڑا کے رکن پارلیمان آننت کمار ہیگڈے جو عین انتخابات کے موقعوں پر متنازعہ بیانات دے کر اخبارات کی سُرخیاں بٹورتے ہوئے انتخابات جیتنے میں کامیاب ہوتا ہے، اُس کے تعلق سے کاروار سے شائع ہونے والے معروف کنڑا روزنامہ کراولی منجاو کے ایڈیٹر نے  اپنے اتوار کے ایڈیشن میں اپنے ...

کیا جے ڈی نائک کی جلد ہوگی کانگریس میں واپسی؟!۔دیشپانڈے کی طرف سے ہری جھنڈی۔ کانگریس کر رہی ہے انتخابی تیاری

ایسا لگتا ہے کہ حالیہ اسمبلی انتخابات سے چند مہینے پہلے کانگریس سے روٹھ کر بی جے پی کا دامن تھامنے اور بی جے پی کے امیدوار کے طور پر فہرست میں شامل ہونے والے سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک کی جلد ہی دوبارہ کانگریس میں واپسی تقریباً یقینی ہوگئی ہے۔ اہم ذرائع کے مطابق اس کے لئے ضلع ...

ضلع شمالی کینرا میں پیش آ سکتا ہے پینے کے پانی کابحران۔بھٹکل سمیت 11تعلقہ جات کے 423 دیہات نشانے پر

امسال گرمی کے موسم میں ضلع شمالی کینرا میں پینے کے پانی کا شدید بحران پیدا ہونے کے آثار نظر آر ہے ہیں۔ کیونکہ ضلع انتظامیہ نے 11تعلقہ جات میں 428دیہاتوں کی نشاندہی کرلی ہے، جہاں پر پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔

ہوناور قومی شاہراہ پرگزرنےو الی بھاری وزنی لاریوں سے سڑک خستہ؛ میگنیز کی دھول اور ٹکڑوں سے ڈرائیوروں اور مسافروں کو خطرہ

حکومت عوام کو کئی ساری سہولیات مہیا کرتی رہتی ہے، مگر ان سہولیات سے استفادہ کرنےو الوں سے زیادہ اس کاغلط استعمال کرنے والے ہی زیادہ ہوتے ہیں، اس کی زندہ مثال  فورلین میں منتقل ہونے والی  قومی شاہراہ 66پر گزرنے والی بھاری وزنی لاریاں  ہیں۔

لوک سبھا انتخابات 2019؛ کرناٹک میں نئے مسلم انتخابی حلقہ جات کی تلاش ۔۔۔۔۔۔ آز: قاضی ارشد علی

جاریہ 16ویں لوک سبھا کی میعاد3؍جون2019ء کو ختم ہونے جارہی ہے ۔ا س طرح جون سے قبل نئی لوک سبھا کا تشکیل ہونا ضروری ہے۔ انداز ہ ہے کہ مارچ کے اوائل میں لوک سبھا انتخابات کا عمل جاری ہوجائے گا‘ اور مئی کے تیسرے ہفتے تک نتائج کا اعلان بھی ہوجائے گا۔ یعنی دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت 17ویں ...

2002گجرات فسادات: جج پی بی دیسائی نے ثبوتوں کو نظر انداز کردیا: سابق IAS افسر و سماجی کارکن ہرش مندرکا انکشاف

 خصوصی تفتیشی ٹیم عدالت کے جج پی ۔بی۔ دیسائی نے ان موجود ثبوتوں کو نظر انداز کیاکہ کانگریس ممبر اسمبلی احسان جعفری جنہیں ہجوم نے احمدآباد کی گلمرگ سوسائٹی میں فساد کے دوران قتل کردیا تھا انہوں نے مسلمانوں کو ہجوم سے بچانے اور اس وقت کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی سے فساد پر قابو ...

بھٹکل میونسپالٹی کی عام میٹنگ میں نئی مچھلی مارکیٹ کے لئے دوبارہ نیلامی کا فیصلہ : کئی دیگر مسائل پر بھی بحث

بھٹکل میونسپالٹی میں منعقدہ عام میٹنگ میں پرانی اور نئی مچھلی مارکیٹ  کے مچھلی بیوپاریوں کو لےکر کافی بحث ہوئی ، بعد میں  اس بات کا فیصلہ لیا  گیا کہ اگلے دو دن کے اندرنئی مچھلی مارکٹ   کی نیلامی کا اعلامیہ شائع کرتے ہوئے  ایک ہفتہ کے اندر  بولی کی  کارروائی انجام دی جائے۔

اکرم پاشاہ ہاسن ضلع کے نئے ڈپٹی کمشنر

ہاسن ضلع کے نئے ڈپٹی کمشنر اکرم پاشاہ آئی اے ایس نے آج عہدہ کا جائزہ لے لیا ۔ 2012ء میں آئی اے ایس افسر کی حیثیت سے ترقی پانے والے اکرم پاشاہ اس سے پہلے ساڑھے پانچ سال مائنارٹی ڈائرکٹوریٹ میں ڈائرکٹرکی حیثیت سے بہترین خدمات انجام دے چکے ہیں ۔

24جولائی سے پہلے فاریسٹ اتی کرم داروں کو نکال باہر کرنے سپریم کورٹ کا آرڈر : ریاستی حکومت پر ضلع اتی کرم داروں کی امید بھری نگاہ

فاریسٹ حق قانون کے تحت فاریسٹ مکینوں کے طورپر اپنا حق جتانے کے بعد انکار کئے گئے فاریسٹ مکینوں کو  ایک ساتھ تمام کو نکال باہرکرنے سپریم کورٹ تین رکنی بنچ نے 13فروری کو فیصلہ صادر کیا ہے۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ فاریسٹ مکینوں  (اتی کرم دار )پر بجلی بن کر گراہے ، فاریسٹ افسران کو اتی ...