ہوناور میں بھٹکل کے دو لوگوں پر حملہ کا معاملہ؛ دھرم رکشھنا ویدیکے کی پولس کو دھمکی؛ گرفتاریاں نہیں روکی گئیں تو ہوگا زبردست احتجاج

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 13th March 2018, 9:09 PM | ساحلی خبریں |

ہوناور 13؍مارچ (ایس او نیوز)کچھ روز قبل ہوناور کے کرکی ناکہ پر نام نہاد گؤ رکھشکوں کی بھیڑ نے بھٹکل کے دو نوجوانوں پر حملہ کیا تھا اور دونوں کو بری طرح زخمی کردیا تھا، جس پر کاروائی کرتے ہوئے پولس نے 150 لوگوں کے خلاف معاملات درج کئے تھے اور چار لوگوں کو گرفتار کیا تھا، اس ضمن میں پولیس کی کارروائیوں کے خلاف دھرم رکھشنا ویدیکے نے آواز اٹھائی ہے اور حملہ کے ملزمین کو گرفتار نہ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر گرفتاریوں کا سلسلہ نہیں رُکا تو  عوام کی طرف سے زبردست احتجاج کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ مذکورہ قاتلانہ حملے کے تعلق سے  پولیس مزید ملزمین کو تلاش کررہی ہے جو پولس کی گرفتاریوں سے بچنے کے لئے ہوناور سے فرار ہوگئے ہیں۔ مگر دھرم رکھشنا ویدیکے نامی تنظیم نے تحصیلدار کو میمورنڈم دیتے ہوئے  انتباہ دیا ہے کہ اگر اس حملے کے ملزمین کو گرفتار کرنے کا سلسلہ نہیں روکا گیا تو پھر زبردست عوامی احتجاج کیا جائے گا۔
میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ مادنگیری اور شیرالی میں چیک پوسٹ ہونے کے باوجودغیر قانونی طور پر یہاں سے گائیں اسمگل کی جارہی ہیں، جس سے شکوک و شبہات پیدا ہورہے ہیں۔ گائیں اسمگل کرنے والے شرپسندوں کے خلاف کارروائی کرنے کے بجائے اس واقعے سے تعلق نہ رکھنے والے بے قصور ہندو نوجوانوں پر سنگین الزامات کے ساتھ کیس داخل کرکے جیل میں بند کردیا گیا ہے۔اب اس کے خلاف عوام کے احتجاج کی طاقت کا مظاہرہ کرنا ضروری ہوگیا ہے۔

میمورنڈم میں یہ بھی درج ہے کہ گزشتہ کئی برسوں سے چلنے والا گائیں اسمگل کرنے کے   کاروبار  میں پچھلے کچھ عرصے سے ہندوؤں کی مخالفت کی وجہ سے  کچھ کمی آئی ہے۔ لیکن اب اس غیر قانونی سرگرمیوں  میں دوبارہ تیزی نظر آرہی ہے۔اس کے خلاف متعلقہ محکمہ جات کی طرف سے ان دیکھی کرنے پرکچھ نوجوان گائے کی رکھشا کے لئے آگے آتے ہیں۔ میمورنڈم میں ویدیکے کا کہنا ہے کہ عوام کی حفاظت پر مامور پولیس نے اپنا اعتبار کھو دیا ہے۔گزشتہ تین مہینوں سے معصوم لوگوں پر اس طرح کے مقدمات درج کرنا واقعی دہشت کا سبب بن گیا ہے۔جس کی پر زور مذمت کی جاتی ہے۔میمورنڈم میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ گرفتار معصوموں کو فوراً رہا کردینا چاہیے۔غیر قانونی  گایوں کی اسمگلنگ روکنے کے لئے پولیس کو سخت قدم اٹھانے چاہئیں۔

اس موقع پرہندوحامی تنظیموں کے قائدین جے ٹی پائی، ایم ایس ہیگڈے، رگھو پائی، وینکٹ رمن ہیگڈے، شری کلا شاستری(ضلع پنچایت رکن)، سبرامنیا شاستری، شیوراج میستا، ایس ٹی نائک، سنجیو شیٹھ، امیش سارنگ،لوکیش میستا، امیش میستا،گؤ پریوار کے کرشنا مورتی بھٹ شیوانی، وشویشورا بھٹ وغیرہ موجود تھے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں تحصیلدار کے حکم پر ہیلتھ انسپکٹر نے ضبط کئے سمندری سیپیں؛ جانچ کے لئے مینگلور روانہ؛ خرید وفروخت پر لگائی پابندی

تعلقہ بھر میں سمندری سیپیاں کھانے سے بیمار پڑنے کے معاملات میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے تعلقہ انتظامیہ نے حفاظتی اقدامات کے طور پر  ان سیپیوں کی خرید وفروخت پر بھٹکل میں پابندی عائد کردی ہے ۔ اس تعلق سے آج پیر کو جیسے ہی سمندری سیپیاں بھٹکل مچھلی مارکٹ میں پہنچی، میونسپل ہیلتھ ...

بھٹکل میں سمندری سیپی کھانے سے بیمار ہونے کا سلسلہ جاری : 100سے زائد لوگ بیمار ہونے پر تحصیلدار نے اسپتال پہنچ کر کیا معائنہ؛ عوام سے سیپیاں نہ کھانے میڈییکل آفسر کی ہدایت

تعلقہ میں سمندری سیپی کے کھانے سے بیمار ہونےکا سلسلہ جاری رہنے سے عوام خوف و ہراس  میں مبتلا ہیں۔ اتوار کو تعلقہ میں 100سے زائد لوگ سیپی کھانے سے بیمار ہو کر اسپتال میں داخل ہونے کا پھر واقعہ پیش آیا ہے۔

بھٹکل کارگیدے مسجد مزمل کے سامنے سڑک کی تعمیر کو لے کر علاقہ کے عوام کی رکن اسمبلی سنیل نائک سے ملاقات

  کارگیدے مسجد مزمل کے سامنے پکی سڑک کی  تعمیر کو لے کر علاقہ کے عوام نے بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک سے ملاقات کی اور سڑک کی خستہ حالی  سے اُنہیں واقف کراتے ہوئے  اوپری حصہ کی طرف زیرتعمیر سڑک کو آگے بڑھاتے ہوئے مسجد مزمل اور اس سے نیچے تک توسیع دینےکی اپیل کی۔