ہوناور کے پریش میستاہلاکت معاملے کی تیز رفتار تحقیقات کا مطالبہ۔کانگریسی لیڈروں کی بھوک ہڑتال

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 11th July 2018, 7:59 PM | ساحلی خبریں |

ہوناور 11؍جولائی (ایس او نیوز)گزشتہ سال دسمبر میں ہوناور میں فرقہ وارانہ کشیدگی کے دوران پراسرار انداز میں ہلاک ہونے والے پریش میستا کی موت کے سلسلے میں تحقیقات تیزی سے آگے بڑھانے اورسی بی آئی رپورٹ کو حکومت کے حوالے کرنے کامطالبہ کرتے ہوئے کانگریسی لیڈروں نے ۲۴ گھنٹے کی بھوک ہڑتال کے ساتھ احتجاجی مظاہرہ کیا۔

ہوناور پٹن پنچایت دفتر کے سامنے شراوتی سرکل کے پاس بلاک کانگریس کے لیڈران نے بھوک ہڑتال کا اہتمام کیا۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ پریش میستا کی پراسرار موت کے معاملے کو اسمبلی الیکشن کے دوران سیاسی مفاد کے لئے استعمال کیا گیا۔ اس ہلاکت کی صاف و شفاف تفتیش کرنے کے لئے اپوزیشن کے لیڈران اور عوام نے اس معاملے کو سی بی آئی کے حوالے کرنے کاپرزور مطالبہ کیا۔ اپوزیشن کا کہناتھا کہ اگر یہ معاملہ مرکزی تفتیشی ایجنسی کو سونپا گیا تو اسے صرف سات دنوں میں حل کردیا جائے گا۔ اُس وقت کی سدارامیا حکومت نے مطالبے کو منظور کرتے ہوئے معاملہ سی بی آئی کے حوالے کردیا مگر اب سات دن نہیں بلکہ  سات مہینے گزرنے کے بعد بھی اس کیس میں کوئی پیش رفت نہیں ہورہی ہے۔اس سے یہاں کے عوام او رپریش میستا کے خاندان کوبڑی مایوسی ہوئی ہے۔ مظاہرین نے پوچھا کہ اس وقت پرتشدد احتجاج کرنے، پولیس گاڑیوں کو اور عوام کو نقصان پہنچانے والے اب انصاف طلب کرنے کے لئے کیوں آواز نہیں اٹھا رہے ہیں؟ احتجاج پر اکسانے والے اننت کمار ہیگڈے مرکزی وزیر بننے کے بعد ا س مسئلے پر خاموش کیوں ہیں۔اصل میں حالیہ اسمبلی الیکشن میں اس موت کا سیاسی فائدہ اٹھانے والی بی جے پی آئندہ لوک سبھا الیکشن میں بھی اس کابھر پور فائدہ اٹھانے کا منصوبہ رکھتی ہے۔

کانگریسی لیڈروں نے کہا کہ ماضی میں ہوئے ڈاکٹر چترنجن اور تمپّا نائک قتل کے معاملات کی فائل  جس طرح دھول چاٹ رہی ہے  بالکل اسی طرح پریش میستا کا معاملہ بھی سرد خانے میں ڈال دئے جانے کی سازش محسوس ہورہی ہے۔ لیکن کانگریس پارٹی ہوناور میں پریش میستا اوراس کے اہل خانہ کو انصاف ملنے تک احتجاج جاری رکھے گی۔اگر اس بھوک ہڑتال کے پندرہ دنوں کے اندر سی بی آئی اپنی رپورٹ نہیں دیتی ہے تو پھر’ ہوناور بند‘منایاجائے گا۔ اس کے بعد بھی بات نہیں بنی تو ’کاروارچلو‘ احتجاج کیا جائے گا۔

ہوناور بلاک کانگریس کی طرف سے بھوک ہڑتال احتجاج کے لئے عوام کی طرف سے تعاون دیا گیا۔ کنڑا ابھیمانی سنگھا کے اودئے راج میستا، جنا پرا ہوراٹا ویدیکے سے مارشل، جے ڈی ایس سے راجو نائک منکی ، سماج وادی پارٹی سے منگل داس نائک منکی،آنجہانی دیوراج ارس ویدیکے سے اننت نائک ہیگّار وغیرہ نے بھوک ہڑتال کی حمایت کی۔

اس بھوک ہڑتال میں ہوناور بلاک کانگریس صدر جگدیپ تنگیری، سابق وزیر آر این نائک، کانگریس مہیلا مورچہ کی صدر تارا گوڈا، کانگریسی لیڈر روی کمار شیٹی، گنیش نائک موگوا، حسین قادری، وامن ایس نائک وغیرہ نے حصہ لیا۔

ایک نظر اس پر بھی

ملپے سے گم شدہ ماہی گیر کشتی معاملہ میں نیا موڑ: نیوی کے افسران نے مانا کہ جنگی جہاز سے ہواتھا کشتی کا تصادم

مہاراشٹرا میں سندھو درگ کے قریب سمندر میں ماہی گیری کے دوران مچھیروں سمیت لاپتہ ہونے والی کشتی ’سوورنا تریبھوجا‘ کے تعلق سے اب ایک نیا موڑ سامنے آیا ہے اور تحقیقاتی افسران کو یقین ہوگیا ہے کہ اس ماہی گیر کشتی کی ٹکر بحریہ کے ایک جنگی جہاز’آئی این ایس کوچی‘ سے ہوئی اور ماہی ...

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ میں علمائے شوافع کی جانب سے فقہی سمینار کا انعقاد ؛ علماء فقہائے شوافع نے حقیقتاً حدیث اور فقہ میں بہت نمایاں کام کیاہے: خالد سیف اللہ رحمانی 

بروز سنیچر 19؍ جنوری مجمع الامام الشافعی العالمی کی جانب سے دو روزہ پہلے فقہی سمینار کا آغاز کیا گیا اس سمینار کا افتتاحی جلسہ صبح 10؍ بجے جامعہ دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ ممبئی میں منعقد کیا گیا

بھٹکل: ریاست کے مشہور سد گنگامٹھ کے شری کمار سوامی جی کی وفات پر رابطہ ملت اترکنڑا کا اظہار تعزیت

ریاست کے قدآور ، معروف سد گنگا مٹھ کے شری کمار سوامی جی کے دارِ فانی سے کوچ کر جانے پر رابطہ ملت اترکنڑا ضلع کے عہدیداران نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سوامی جی ملک کی ایک قوت کی مانند تھے۔

گنگولی کے آراٹے ندی میں غرق ہوکر لاپتہ ہونے والے ماہی گیر کی نعش آج برآمد

یہاں آراٹے ندی میں غرق ہوکر کل رات ایک ماہی گیر لاپتہ ہوگیا تھا، جس کی نعش آج متعلقہ ندی سے برآمد کرلی گئی ہے۔ ماہی گیر کی شناخت آراٹے کڑین باگل کے رہنے والے  کرشنا موگویرا (50) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

کنداپور میں ہوئی چوری کی واردات کے بعد پولس نے گھر میں نوکری کرنے والے میاں بیوی کوکیا گرفتار

کنداور دیہات کے سٹپاڑی کے ایک گھرمیں ہوئی  چوری کے معاملے میں کنداپور دیہی پولس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے اسی گھر میں کام کرنےو الے میاں بیوی کو صرف دو دنوں میں ہی گرفتار کر کے معاملے کو حل کرنے میں کامیابی حاصل کرلی  ہے۔